تازہ ترین

Marquee xml rss feed

خیبرکالج آف ڈینسٹری کی کوآرڈینیشن کونسل کااجلاس-جامعہ پشاور میں الیکٹرانک میڈیا تربیتی کورس اختتام پذیر-عوام 2018ء کے الیکشن میں مسلم لیگ (ن) کو ووٹ دے کر کامیاب بنائیں گے ،سیدعمران-صوابی،سپورٹس گالا میں جاری بیڈ منٹن اوروالی بال مقابلے اختتام پذیر-جے ٹی آئی شیخ الہند پابینی یونٹ صوابی کی کابینہ تشکیل-اداکارہ کاجول پہلی بار ایک گلوکارہ کے روپ میں نظر آئیں گی اداکارہ بہت جلد اپنے شوہر اجے دیوگن کی پروڈکشن میں بننے والی فلم ’’ایلا‘‘ کی شوٹنگ کاآغاز کریں گی-سنجے لیلا کی درخواست پر اکشے نے فلم کی نمائش موخر کر دی اب فلم پیڈمین 25 جنوری کے بجائے 9 فروری کو پیش کی جائیگی-جدید سنیما گھروں کے قیام سے فلم انڈسٹری میں نئی جان پڑی ہے، قرة العین عینی انڈسٹری کی طرف ویلکم کہنے اور پہلی فلم پر لوگوں کی طرف سے ملنے والے رسپانس کا سوچا بھی نہیں تھا‘انٹرویو-عامر خان چین میں اپنی ایک اور فلم کیساتھ بڑی کامیابی حاصل کرنے کیلئے تیار عامر خان کی فلمز ’دھوم 3‘، ’پی کے‘ اور ’دنگل‘ بھی چین میں نمائش کے لیے پیش کی جاچکی ہیں-کرن جوہر نے مس ورلڈ مانوشی کو اپنی فلم میں کام دینے کی تردید کردی کرن نے مانوشی کو اپنی فلم ’’اسٹوڈنٹ آف دی ایئر2‘‘میں کام کرنے کی پیشکش کی ہے، بھارتی میڈیا کا دعویٰ

GB News

ٹیکس قانون بنانے کیلئے انجمن تاجران کی منظوری ضروری ہے،امجد ایڈووکیٹ

Share Button

سکردو (محمد اسحاق جلال)پیپلزپارٹی کے صوبائی صدر امجد حسین ایڈووکیٹ نے کہاہے کہ ٹیکسز کی معطلی کا نوٹیفکیشن جعلی نہیں ہے بلکہ اس میں بڑا وزن ہے حکومت نے پہلے عوام کو بہت دفعہ ماموں بنایا ہے اب یہ عوام کو ماموں نہیں بنا سکتی حکومت اور انجمن تاجران وایکشن کمیٹی کے مابین طے پانیوالے معاہدے کی روشنی میں جاری ہونے والے ٹیکسز کی معطلی کا نوٹیفکیشن قانونی ہے کے پی این سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ حکومت آئندہ ٹیکس سے متعلق جو بھی قانون بنائے گی اس کیلئے ضروری ہے کہ انجمن تاجران رضامندی ظاہر کرے معاہدے کی روشنی میں حکومت انجمن تاجران کی مرضی ومنشاء کے خلاف کوئی فیصلہ نہیں کر سکے گی معاہدے میں یہ بات طے ہوگئی ہے کہ جو بھی قانون بنایا جائے گا اس میں حکومت اور انجمن تاجران دونوں کی رضامندی ضروری ہے تاجر خطے کا سب سے بڑا طاقتور طبقہ ہے اس کو اندھیرے میں رکھ کر آئندہ حکومت ٹیکس کے بارے میں کوئی قانون نہیں بنا سکتی انہوں نے کہاکہ ہم انجمن تاجران کا شکریہ ادا کرتے ہیں کہ اس نے ٹیکس کا طوق ہمارے گلے سے نکال دیا اب گیند حکومت کی کورٹ میں ہے دیکھتے ہیں کہ وہ معاملے کو کس طرح نمٹاتی ہے آئینی حیثیت کے تعین کے بغیر کوئی شخص ٹیکس دینے کیلئے تیار نہیں ہے موجودہ سیٹ اپ کو آئینی تحفظ دے کر صوبے کے برابر اختیارات دینے کی باتیں بھی فضول ہیں یہ ساری باتیں وقت ٹالنے اور عوام کو مصروف رکھنے کیلئے کی جارہی ہیں ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ یہ بات درست ہے کہ سینئر وزیر حاجی اکبر تابان اور وزیر قانون اورنگزیب ایڈووکیٹ نے کونسل کی ذیلی کمیٹی میں گلگت بلتستان کا بھرپور دفاع کیا ہے ۔

Facebook Comments
Share Button