تازہ ترین

Marquee xml rss feed

خیبرکالج آف ڈینسٹری کی کوآرڈینیشن کونسل کااجلاس-جامعہ پشاور میں الیکٹرانک میڈیا تربیتی کورس اختتام پذیر-عوام 2018ء کے الیکشن میں مسلم لیگ (ن) کو ووٹ دے کر کامیاب بنائیں گے ،سیدعمران-صوابی،سپورٹس گالا میں جاری بیڈ منٹن اوروالی بال مقابلے اختتام پذیر-جے ٹی آئی شیخ الہند پابینی یونٹ صوابی کی کابینہ تشکیل-اداکارہ کاجول پہلی بار ایک گلوکارہ کے روپ میں نظر آئیں گی اداکارہ بہت جلد اپنے شوہر اجے دیوگن کی پروڈکشن میں بننے والی فلم ’’ایلا‘‘ کی شوٹنگ کاآغاز کریں گی-سنجے لیلا کی درخواست پر اکشے نے فلم کی نمائش موخر کر دی اب فلم پیڈمین 25 جنوری کے بجائے 9 فروری کو پیش کی جائیگی-جدید سنیما گھروں کے قیام سے فلم انڈسٹری میں نئی جان پڑی ہے، قرة العین عینی انڈسٹری کی طرف ویلکم کہنے اور پہلی فلم پر لوگوں کی طرف سے ملنے والے رسپانس کا سوچا بھی نہیں تھا‘انٹرویو-عامر خان چین میں اپنی ایک اور فلم کیساتھ بڑی کامیابی حاصل کرنے کیلئے تیار عامر خان کی فلمز ’دھوم 3‘، ’پی کے‘ اور ’دنگل‘ بھی چین میں نمائش کے لیے پیش کی جاچکی ہیں-کرن جوہر نے مس ورلڈ مانوشی کو اپنی فلم میں کام دینے کی تردید کردی کرن نے مانوشی کو اپنی فلم ’’اسٹوڈنٹ آف دی ایئر2‘‘میں کام کرنے کی پیشکش کی ہے، بھارتی میڈیا کا دعویٰ

GB News

کنٹیجنٹ پیڈ ملازمین کو ان کے سروسز کے تحت حق دیا جائے ،قاضی نثار احمد

Share Button

گلگت(نمائندہ خصوصی)امیر تنظیم اہلسنت والجماعت گلگت بلتستان و کوہستان و امام جمعہ والجماعت مولانا قاضی نثار احمد نے کہا ہے کہ کنٹیجنٹ پیڈ ملازمین کو ان کے سروسز کے تحت حق دیا جائے حکومت غریب پروری کا مظاہرہ کرتے ہوئے غریب ملازمین کی دادرسی کرے ان کے چولہے ٹھنڈے ہونے سے بچائے ۔ انہوں نے کے پی این سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ گلگت بلتستان میں روزگار کے مواقع زیادہ نہیں ہیں پرائیویٹ سیکٹر  بھی نہیں  جہاں سے غریب عوام کو روزگار کے مواقع میسر ہو سکیں غریب ملازمین کو اس طرح احتجاج پر لاکر ان کے مسائل حل کر نے سے قبل ہی حکومت فوری اقداما ت اٹھائے تا کہ اس شدید سردی میں ملازمین کو مزید مسائل کا سا منا کرنا نہ پڑے اور حکومت کو بھی مسائل کا سامنا نہ ہو ۔ انہوں نے کہا کہ کنٹیجنٹ ملازمین پچیس اور پندرہ سالوں سے خدمات سرانجام دے رہے ہیں ایسے میں غریب ملازمین کو مسائل میں ڈالنا حکومت کے لئے ٹھیک نہیں ہے کیونکہ ان غریب ملازمین کے بھی گھر ہیں ان ملازمین کے بھی اہل وعیال ہیں اور گلگت بلتستان میں سرکاری ملازمتوں کے علاوہ اور کوئی وسائل نہیں ہیں جہاں سے غریب ملازمین کو فائدہ حاصل ہو سکے ایسے میں حکومت غریب ملازمین کے زخموں پہ مرہم رکھے اور ان ملازمین کو ان کا حق دے تا کہ حکومت کے لئے مزید مشکلات کا سامنا کرنا نہ پڑے اور ملازمین کے مسائل حل کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے اور حکومت اپنی ذمہ داری پوری کرے اور عرصہ دراز سے جو ملازمین نوکری کر رہے ہیں ان کو مستقل کیا جائے ۔

Facebook Comments
Share Button