تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیراعلیٰ پنجاب کا گجرات میں طالبات پر تیزاب پھینکنے کے واقعہ کا نوٹس،ملزمان کی گرفتاری کا حکم-وزیراعلیٰ پنجاب سے دانش سکولز سے فارغ التحصیل ہوکراعلی تعلیمی اداروں میںتعلیم حاصل کرنے والے طلباء و طالبات کی ملاقات دانش سکول پر تنقید کرنے والے سیاسی لیڈروںنے اپنے ... مزید-سپریم کورٹ کی سفارش پر قائم کمیٹی نے سندھ اور بلوچستان کے اکیس غیر معیاری نجی اور سرکاری لاء کالجز بند کرنے کی سفارش کر دی-چیف جسٹس نے پنجاب میں 600 سے زائد بچوں کے اغوا کی میڈیا رپورٹس کا نوٹس لے لیا-وزیراعلیٰ پنجاب کا پیپلز پارٹی کے رہنما جہانگیر بدر مرحوم کے بھائی کے انتقال پر اظہار تعزیت-وزیراعلیٰ پنجاب سے سندھ کے شیرازی برادران کی ملاقات شیرازی برادران کا عوام کی فلاح و بہبود اور ترقی کیلئے بے مثال اقدامات پر شہبازشریف کو خراج تحسین عوام کی خدمت کا ... مزید-فیس بک کے لوگو کا رنگ نیلا کیوں ہے،ایسا انکشاف جو آپ کے وہم و گمان میں بھی نہ ہو گا-لاہور، ملک کے وزیر اعظم عمران خان ہونگے،اعجازاحمد چوہدری نواز شریف اور زرداری ٹولہ نے اقتدار میں آ کر صرف عوام کا خون چونسا ہے اور اپنی جیبیں بھری ہے ملک کے تباہی کے ... مزید-پشاور، بس ریپڈٹرانزٹ منصوبے پر صوبائی کابینہ کو بریفننگ واحد منصوبہ ہے جو قلیل عرصے اور کم لاگت سے مکمل ہوگا،پرویز خٹک مجموعی لاگت میں بسوں کی خریداری، اراضی، کمرشل ... مزید-عوام کی عدم دلچسپی کے باعث سندھ گیمز کی افتتاحی تقریب نا کامی کا شکار ہوئی ہے ، سید صفدر حسین شاہ

GB News

کنٹیجنٹ پیڈ ملازمین کو ان کے سروسز کے تحت حق دیا جائے ،قاضی نثار احمد

Share Button

گلگت(نمائندہ خصوصی)امیر تنظیم اہلسنت والجماعت گلگت بلتستان و کوہستان و امام جمعہ والجماعت مولانا قاضی نثار احمد نے کہا ہے کہ کنٹیجنٹ پیڈ ملازمین کو ان کے سروسز کے تحت حق دیا جائے حکومت غریب پروری کا مظاہرہ کرتے ہوئے غریب ملازمین کی دادرسی کرے ان کے چولہے ٹھنڈے ہونے سے بچائے ۔ انہوں نے کے پی این سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ گلگت بلتستان میں روزگار کے مواقع زیادہ نہیں ہیں پرائیویٹ سیکٹر  بھی نہیں  جہاں سے غریب عوام کو روزگار کے مواقع میسر ہو سکیں غریب ملازمین کو اس طرح احتجاج پر لاکر ان کے مسائل حل کر نے سے قبل ہی حکومت فوری اقداما ت اٹھائے تا کہ اس شدید سردی میں ملازمین کو مزید مسائل کا سا منا کرنا نہ پڑے اور حکومت کو بھی مسائل کا سامنا نہ ہو ۔ انہوں نے کہا کہ کنٹیجنٹ ملازمین پچیس اور پندرہ سالوں سے خدمات سرانجام دے رہے ہیں ایسے میں غریب ملازمین کو مسائل میں ڈالنا حکومت کے لئے ٹھیک نہیں ہے کیونکہ ان غریب ملازمین کے بھی گھر ہیں ان ملازمین کے بھی اہل وعیال ہیں اور گلگت بلتستان میں سرکاری ملازمتوں کے علاوہ اور کوئی وسائل نہیں ہیں جہاں سے غریب ملازمین کو فائدہ حاصل ہو سکے ایسے میں حکومت غریب ملازمین کے زخموں پہ مرہم رکھے اور ان ملازمین کو ان کا حق دے تا کہ حکومت کے لئے مزید مشکلات کا سامنا کرنا نہ پڑے اور ملازمین کے مسائل حل کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے اور حکومت اپنی ذمہ داری پوری کرے اور عرصہ دراز سے جو ملازمین نوکری کر رہے ہیں ان کو مستقل کیا جائے ۔

Facebook Comments
Share Button