تازہ ترین

Marquee xml rss feed

گوجرانوالہ میں پاک فوج اور عدلیہ کے حق میں ریلی ، نعرے بھی لگائے گئے-حکمران عوام کی حالت زار بدلنے کے معاملے پر ڈنگ ٹپائو پالیسیوں پر عمل پیرا ہیں ‘ مسرت چیمہ عوام نے موقع دیا تو صحت اور تعلیم سمیت بنیادی ضروریات کی فراہمی اولین ترجیح ہو ... مزید-عروج کے دنوں میں شوبز کو چھوڑنا میرے لیے باعث فخر ہے ‘ اداکارہ زاریہ بٹ-کسی بھی فلم کی کامیابی کیلئے سکرپٹ کا اچھا اور معیاری ہونا لازمی ہے‘ صائمہ نور-گلوکارہ حمیرا چنا سیرو تفریح کے لئے دبئی روانہ-عالمی شہرت یافتہ اداکار وکمپیئر معین اختر کی ساتویں برسی (آج )منائی جائے گی-اداکارہ شیزہ بٹ پر فیصل آباد میں قاتلانہ حملے کے ملزمان تاحال گرفتار نہ ہوسکے پولیس کی پراسرار خاموشی /پاکستان میں فن اور فنکاروں کی جان و مال کی کوئی قدر نہیں‘ شیزہ ... مزید-انعامی بانڈ زپر ٹیکس کی شرح کم کی جائے ‘ پی ٹی آئی کی پنجاب اسمبلی میں قرارداد-حکومتی پالیسیوں سے آئی سی یو میں پڑی معیشت کی سانسیں بحال ہو ئی ہیں‘ (ن) لیگ ٹریڈرز ونگ تاجروں نے نا مساعد حالات کے باوجود ٹیکسز کی ادائیگی کر کے معیشت میں کلیدی کردار کو ... مزید-ملک کو مثبت سمت میں آگے لیجانے کیلئے تمام اسٹیک ہولڈرز کا ایک پیج پر ہونا نا گزیر ہے ‘آل پاکستان انجمن تاجران معیشت کو درپیش مسائل کے حل ،قومی معاملات میں اتفاق رائے کیلئے ... مزید

GB News

گریڈ 1 سے 5 تک کے کنٹیجنٹ ملازمین کو بغیر ٹیسٹ انٹرویو مستقل کرنے کی پیشکش

Share Button

گلگت (نمائندہ خصوصی) حکومت نے گریڈ 1 سے 5 تک کے کنٹیجنٹ ملازمین کو بغیر ٹیسٹ انٹرویو مستقل کرنے کی پیشکش کردی جبکہ گریڈ 6 اور اس سے اوپر کے ملازمین ٹیسٹ انٹرویو کے ذریعے مستقل کئے جائیں گے، جمعرات کے روز اسسٹنٹ کمشنر گلگت اتحاد چوک پر دھرنا دینے والے ملازمین کے پاس آئے اور ایک تحریری معاہدہ دکھایا جس میں کہا گیا تھا کہ گریڈ ایک سے پانچ تک کے ملازمین کا سکریننگ ٹیسٹ نہیں ہوگا بلکہ معمولی نوعیت کا انٹرویو ہوگا۔ گریڈ پانچ سے نیچے کے ملازمین کو آسامیاں خالی ہونے پر بھرتی کیا جائیگا۔ اسسٹنٹ کمشنر نے کہاکہ اس مقصد کیلئے ایک کمیٹی بھی بنائی گئی ہے جس میں ڈی سی گلگت، ایس ایس پی اور کنٹیجنٹ ملازمین کی تنظیم کے صدر شامل ہونگے۔ اس موقع پر عابد فراز نے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ہمیں ڈی سی نے عزت دی ہے اور جو مطالبات ہم نے پیش کئے ہیں اس کے مطابق کام کیا گیا ہے۔ سروسز ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے نوٹیفکیشن جاری کیا گیا ہے۔ انہوں نے دھرنے کے شرکاء سے رائے لی تو اکثر نے اس نوٹیفکیشن کو مسترد کردیا اور نامنظور نامنظور کے نعرے لگائے۔اس کے بعد دھرنا جاری رکھنے کا اعلان کیا گیا مطالبہ کیا کہ کمیٹی میں کابینہ کا کوئی وزیر ہونا چاہیے جبکہ نوٹیفکیشن چیف سیکرٹری کی جانب سے ہی جاری کیا جائے۔ دھرنے کے شرکاء نے 6 نکاتی چارٹر آف ڈیمانڈ پر عمل نہ ہونے کی صورت میں کفن پوش لانگ مارچ کی دھمکی بھی دیدی۔

Facebook Comments
Share Button