تازہ ترین

Marquee xml rss feed

عمران خان اور بشریٰ مانیکا کی شادی، ایک روز بعد ہی علیحدگی ہو جانے کی پیشن گوئی بھی کر دی گئی-چیئرمین چکوال پریس کلب خواجہ بابر سلیم کی سی آر شمسی کوقومی روز نامہ سماء اسلام آباد کا ریزیڈنٹ ایڈیٹر مقرر ہونے پر مبارکباد-سعداحسن قاضی اسلامی جمعیت طلبہ حیدرآباد کے ناظم منتخب-تحصیل ہیڈ کوارٹر حضرو میں ہفتہ صحت میلہ کے حوالے سے کیمپ لگایا گیا،افتتاح انجینئر اعظم خان اور احسن خان نے کیا-ایم فل ڈگری پروگرامز 2018ء کے تحت داخلے کے لیے ٹیسٹ میں کامیاب امیدواروں کے انٹرویوز 26 فروری کو ہوں گے-ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر عمر جہانگیر کا ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال چکوال کا اچانک معائنہ،مریضوں کے مسائل دریافت کیے-اپنا چکوال اور شان پروڈکشن کی مشترکہ پیش کش مزاحیہ ڈارمہ عقل وڈی کے مج مکمل فروری کی شب اپنا چکوال چینل پر پیش کیا جائیگا-مقدمات کی تفتیش کے مد میں 55 لاکھ روپے جاری کردیئے گئے-پٹرولنگ پولیس دلیل پور نے کار میں غیر قانونی اور غیر معیاری سی این جی سلنڈر نصب کرنے پر ڈرائیور کوگرفتار کر لِیا-ڈاکٹر خادم حسین قریشی کا ٹنڈو الہیار ، ٹنڈو جام ، شاہ بھٹائی اسپتال لطیف آباد ، تعلقہ اسپتال قاسم آباد ، نوابشاہ اور ہالا میں ہیپاٹائٹس سینٹر ز کا دورہ

GB News

پیپلزپارٹی کا تحریک عدم اعتماد کے معاملے پرغور کیلئے اسلام آبادمیں اجلاس طلب

Share Button

اسلام آباد(لیاقت علی انجم)پاکستان پیپلزپارٹی نے تحریک عدم اعتماد کے معاملے پرغور کرنے کے لئے اہم اجلاس اسلام آبادمیں طلب کرلیا۔گلگت بلتستان سے پارٹی کے اہم رہنمائوں کواسلام آباد میں طلب کرلیاگیا ہے جبکہ تحریک عدم اعتماد کے مرکزی کردارجاویدحسین کوبھی اسلام آبادبلالیاگیا ہے۔ذرائع کے مطابق اجلاس میں تحریک عدم اعتماد کے حوالے سے پیپلزپارٹی کی پالیسی فائنل کی جائے گی اور آئندہ کالائحہ عمل تیار کیاجائے گا۔پارٹی کی ہائی کمان کے ساتھ ہونے والی میٹنگ میں گلگت بلتستان کی سیاسی صورتحال اورپارٹی کی پالیسی کے حوالے سے اہم امورفائنل کیے جائیں گے۔ذرائع نے بتایا کہ عدم اعتماد کے حوالے سے بڑھتی چہ مگوئیوں اوربیانات کی جنگ کے بعدپیپلزپارٹی اپنی پوزیشن واضح کرناچاہتی ہے۔اسی لئے یہ اجلاس بلایاگیا ہے۔ ذرائع کاکہنا تھا کہ عدم اعتماد کے معاملے پرپیپلزپارٹی کھل کرمیدان میں آنے کی صورت میں وزیراعلیٰ کے خلاف چارج شیٹ کی تیاری میں چیلنج درپیش ہوگا اس لئے پارٹی قیادت چاہتی ہے کہ اندرون خانہ رابطوں کوتیز کرنے کے ساتھ ساتھ وزیراعلیٰ کے خلاف مضبوط”چارج شیٹ”تیارکی جائے گی تاکہ عدم اعتماد کے حوالے سے پارٹی کی پوزیشن مستحکم ہو۔ذرائع کاکہناتھا کہ پیپلزپارٹی کی صوبائی قیادت میں عدم اعتماد کے معاملے پر اختلاف رائے پائی جاتی ہے۔بعض لیڈرتحریک عدم اعتماد کے حوالے سے”بے تاب”دکھائی دیتے ہیں۔جاوید حسین کے علاوہ کئی اوررہنمائوں کابھی موقف ہے کہ تحریک عدم اعتماد کے معاملے پرپارٹی کوسستی نہیں دکھائی جانی چاہیے لیکن بعض رہنما جاویدحسین اوران کے ہم نوائوں کی جلدبازی سے اختلاف رکھتے ہیں ان کا موقف ہے کہ جب تک وزیراعلیٰ کے خلاف مضبوط چارج شیٹ تیار نہیں کی جاتی۔تحریک عدم اعتماد کے معاملے کوسردخانے میں ہی رکھنا ہوگا انہی صورتحال پرن لیگ کے ساتھ بیانات کی جنگ میںتیزی آنے اورایک دوسرے پرالزامات کی بارش کے بعد پیپلزپارٹی کی قیادت اپنی پوزیشن واضح کرناچاہتی ہے تاہم یہ بات واضح ہے کہ عدم اعتماد کے معاملے پرشریک چیئرمین آصف زرداری کی بھرپور تائید حاصل ہے۔ادھرلیگی ذرائع نے بھی اس بات کااعتراف کیا ہے کہ پیپلزپارٹی کے بعد لیڈران نے بعض لیگی رہنمائوں سے ملاقات کی ہے صورتحال سے نمٹنے کے لئے مشیراطلاعات شمس میرکوٹاسک دیدیاگیا ہے دوسری جانب پیپلزپارٹی کے اہم رہنما نے دعویٰ کیا ہے کہ بلتستان سے تعلق رکھنے والے3اہم ممبران اسمبلی سے رابطہ کیاگیا ہے ان کی طرف سے اچھاریسپانس آرہا ہے تاہم ایک رکن اسمبلی کوکنٹرول کرنے میں مشکل پیش آئے گی۔کے پی این نے جب پیپلزپارٹی کی سیکرٹری اطلاعات سعدیہ دانش سے رابطہ کیاتوان کاکہنا تھا کہ12فروری کوگلگت بلتستان کی آئینی حیثیت کے حوالے سے اہم سیمینار ہوگا جبکہ13کوپارٹی کاالگ اجلاس ہوسکتا ہے ان کاکہنا تھا کہ تحریک عدم اعتماد کے حوالے سے پارٹی کی پالیسی13فروری کے بعدواضح ہوگی ایک سوال کے جواب میں سعدیہ دانش نے کہا کہ پارٹی کے تمام رہنما اسلام آباد میںہیں اورجوگلگت یاسکردومیں تھے ان کو بھی طلب کرلیاگیا ہے عدم اعتماد کے معاملے کواب فائنل کیاجائے گا اورپارٹی کی پالیسی واضح کی جائے گی۔

 

Facebook Comments
Share Button