تازہ ترین

Marquee xml rss feed

سپیرئیر یونیورسٹی شعبہ ابلاغیات اور میڈیا کلب کے زیر اہتمام آزادی کی تقریب کا انعقاد تقریب کے اختتام پر ایک عزمیہ قرارداد پیش کی گئی جس میں ملک بہتری میں کردار ادا کرنے ... مزید-قومی اسمبلی میں حلف برداری کی تقریب میں عمران خان سے مصافحہ لیگی ارکان اسمبلی کی جارحانہ انداز نہ اپنانے پر شہباز شریف پر تنقید-خورشید شاہ نے متحدہ اپوزیشن کی جانب سے اسپیکر قومی اسمبلی کے لیے کاغذات نامزدگی جمع کروادیے موجودہ حالات میں ایسے اسپیکر کی ضرورت ہے جو سب کو ساتھ لے کر چلے، میں نے 30 ... مزید-جشن آزادی پر ہر کسی نے اپنایا الگ انداز ہر کوئی جشن آزادی کے رنگ میں رنگ گیا ، سوشل میڈیا پر دلچسپ ٹویٹ بھی کر دئیے-واہگہ باڈرپر پرچم کشائی کی تقریب میں شہریوں کی شرکت‘سرحدی محافظوں میں مٹھائیوں کا تبادلہ مقبوضہ کشمیر میں پاکستان کے جھنڈے لہرائے گئے‘کشمیری 15اگست کو بھارتی یوم آزادی ... مزید-نواز شریف کی احتساب عدالت میں پیشی پر کارکن اور رکن اسمبلی غائب نواز شریف اور مریم نواز کا سخت ناراضی کا اظہار-چکوال سے 3خواتین قومی اور پنجاب اسمبلی میں پہنچ گئیں آسیہ امجد اور فوزیہ بہرام تحریک انصاف جبکہ مہوش سلطانہ مسلم لیگ نون کے ٹکٹ پر مخصوص نشتشوں کے لیے نامزدہوئیں-قومی اسمبلی کی 11 نشستوں پر ضمنی انتخابات آئندہ 2 ماہ میں منعقد کروانے کا فیصلہ 11 نشستوں میں سے 9 ایسی نشستیں ہیں جو انتخابی امیدواروں نے ایک سے زائد ہونے کی وجہ سے واپس ... مزید-71یوم آزادی کی تقریبات :ملک بھر میں توپوں کی سلامی‘ تحریک پاکستان کے شہدا کو خراج عقیدت پیش کیا گیا جناح کنونشن سینٹراسلام آباد میں یوم آزادی کی مرکزی تقریب ‘ صدرممنون ... مزید-اس یوم آزادی پر میرے دل میں اُمید کا ایک عظیم چراغ روشن ہے یوم آزادی کے موقع پر پاکستان کے متوقع وزیر اعظم عمران خان کا ٹویٹر پیغام

GB News

پاکستانی شناختی کارڈ اور کرنسی بھی واپس کریں گے اب مزیدوہ ظلم برداشت نہیں کریں گے،سیدمہدی شاہ

Share Button

سکردو (محمداسحاق جلال) پیپلزپارٹی کی مرکزی مجلس عاملہ کے رکن وسابق وزیراعلیٰ سیدمہدی شاہ نے اعلان کیا ہے کہ اگر2018ء کے الیکشن کے بعد پیپلزپارٹی کی حکومت اقتدار میں آکرآئینی صوبہ نہ بنایاتووہ پیپلز پارٹی اورسیاست چھوڑدیں گے۔پاکستانی شناختی کارڈ اور کرنسی بھی واپس کریں گے اب مزیدوہ ظلم برداشت نہیں کریں گے۔ اسلام آباد نیشنل پریس کلب میں سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جب آزادکشمیر کوسیٹ آپ دیا جارہاتھا تو ہم سے کوئی رائے نہیں مانگی گئی اور ہم سے پوچھے بغیر اس علاقے کوسیٹ آپ دیا گیا مگرہمیں آئینی صوبہ دینے کے لئے اجلاس آزادکشمیر میںبلایاجارہا ہے۔بتایاجائے کہ گلگت بلتستان کے آئینی حقوق کے مسئلے پر اجلاس آزادکشمیر میں منعقدکیوںکیاجارہا ہے؟۔40سال میں پارٹی کے لئے دئے ہیں پارٹی کے میرے اوپراحسانات ضرور ہیں مگرمیں نے بھی اپنی جوانی لٹادی ہے اگرآئندہ آئینی حقوق کے بغیرگزارہ کرنے کاکہاگیا تو پارٹی کے ساتھ نہیںرہوں گا۔ہاں میںہاں ملانے کے بجائے گھر بیٹھنے کو ترجیح دوں گا۔پارٹی کی ہاں میں ہاں ملاکر قوم کی گالیاں سننے کے لئے ہرگزتیارنہیںہوں۔اب ہم صوبہ لے کردم لیں گے۔صوبے بے کم ترکوئی چیزقبول نہیںکریں گے۔ہم پاکستانی نہیں ہیں تو ہمارے دوشہداء کونشان حیدرکس بات کے دیئے گئے؟۔اب ہمیں سوچنا پڑے گا کہ مزیدبے وقوف نہںبنیںگے۔اگراب بھی نہیں سوچاتوآئندہ آنیوالی نسلیں ہمیںگالیاں دیںگی ۔افراسیاب خٹک نے ٹھیک کہاکہ گلگت بلتستان بیوروکریشی کی چراگاہ ہے ۔یہاں بیوروکریسی نے بڑے گندپھیلائے ہیں اس وقت بھی عملاً بیوروکریسی حکومت کررہی ہے انہوں نے کہا کہ آئینی حقوق لینے کے لئے اب عملی جدوجہد کرنا پڑے گی۔سیمینارزاورکانفرنسزکے انعقاد سے کوئی فرق نہیں پڑے گا مزاق بہت ہوا ہے اب مزیدمذاق برداشت نہیں کریں گے۔ آئینی حقوق کے لئے پورے خطے کو جام کریں گے۔ایساالائنس بنائیں گے کہ سب دنگ رہ جائیں گے کتنی ستم ظریفی کی بات یہ ہے کہ چن چن کر چوروں کوگلگت بلتستان میںبھیجاجارہا ہے اور وسائل کوبے رحمانہ طریقے سے لوٹاجارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اب ہمیں خیرات نہیں آئینی حقوق چاہیں۔آئینی صوبہ نہ دیاگیا توصورت حال کی ذمہ داروفاقی جماعتیں ہوں گی۔حقیقت بات یہ ہے کہ مسئلہ کشمیرنے حل ہونا ہی نہیں ہے  مزید مسئلہ کی آڑمیںہمیں آئینی حقوق سے محروم نہ رکھاجائے۔70سال ہم  نے کشمیریوں کودیئے ہیں10سال کشمیری ہمیں کیوں نہیں دیتے ہیں؟۔ایسااتحادبنایاجائے گا کہ وفاق آئینی حقوق دینے پرمجبور ہوجائے گا۔ملک کی تمام سرحدیں ہمارے پاس ہیں ہم حفاظت نہ کرتے تو ملک کے دوسرے حصوں کے لوگ کیسی آرام سکون کی زندگی گزارتے۔انہوں نے کہا کہ مشیرخارجہ سرتاج عزیزغیرملکی ایجنٹ ہیں انہیں ہمارے حقوق سے کیاغرض ہے۔انہوں نے کبھی گلگت بلتستان کے حق میں بات نہیں کرنی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے لوگوں کی حب الوطنی پرشکست کیاجارہا ہے۔ ہمارے بہادرکوہ پیماہ نانگاہ پربت پرپاکستانی جھنڈے لہرارہے ہیں اب مذاق بہت ہوگیا جوانی لٹ گئی مزید برداشت نہیں کریںگے۔بچہ بچہ آئینی صوبہ مانگ رہا ہے اب کسی کی مجال نہیں کہ وہ آئینی صوبہ بنانے سے روکے۔

Facebook Comments
Share Button