تازہ ترین

Marquee xml rss feed

اںڈے برآمد ہونے کے بعد سیکیورٹی اہلکار چوکنے ہوگئے رانا ثنا اللہ نے کہا ہے کہ سیکیورٹی اہلکارہر بار ان سے پوچھتے ہیں کہ ان کے پاس انڈے تو نہیں ہیں-گرفتار رکن کو پنجاب اسمبلی میں لانے کیلئے شہبازشریف نے رولز میں ترمیم نہیں کی تھی‘ چودھری پرویزالٰہی سب سے زیادہ فلاحی کام ہمارے دور میں ہوئے‘باباجی خالد محمود مکی ... مزید-یکم جنوری سے تمام کمرشل ڈرائیورز کی سکریننگ اور مرحلہ وار خصوصی تربیتی کورسز کرانے کا فیصلہ 6ماہ میں ہر ڈرائیور کو اس عمل سے گزارا جائے ،آگاہی مہم جاری رکھی جائے‘عبدالعلیم ... مزید-آئی ایم ایف کی شرائط کے انتظار سے پہلے ہی معیشت کی بہتری کیلئے ازخود اقدامات کئے ‘ اسد عمر اصلاحات کے معاملے پر آئی ایم ایف اور حکومت کے درمیان اختلافات ہیں ،اقدامات ... مزید-سعودی عرب سے امداد حاصل کرنے پر پاکستان کو شرمندگی نہیں ہونی چاہیئے ہمیں شرم کرنے کا کہنے کی بجائے مغربی ملکوں کے رہنماوں کو شرم آنی چاہیے جو جمہوریت اور آزادی کی بات ... مزید-لندن میں پاکستانی تاجر کا کروڑوں کا کاروبار جل کر راکھ نسل پرستوں نے پاکستانی تاجر کی کروڑوں روپے مالیت کی گاڑیاں جلا ڈالیں-احتساب عدالت نے شوکت عزیز کیخلاف دائر ریفرنس میں شریک ملزم عارف علاؤالدین کو عدم حاضری کی بناء پر اشتہاری قرار دیدیا-جنگی حکمت عملی میں ہمیں ہائبرڈوار فئیر اور سائبر وار فئیر کے خلاف چوکنا رہنا ہے ،ْ نیول چیف ایڈمرل ظفر محمود عباسی جیو اسٹریٹجک حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے ہمیں اپنے قومی ... مزید-ْ پروٹوکول میں جو بات بتائی گئی اس میں کوئی بھی چیز یہاں موجود نہیں ،ْ چیف جسٹس ثاقب نثار-امریکہ نے پاکستان کو باعث تشویش ممالک پر عائد معاشی پابندیوں سے استثنیٰ دے دیا گذشتہ روز امریکہ نے پاکستان کو مذہبی آزادی کی خلاف ورزی کرنے والے ممالک کی فہرست میں ... مزید

GB News

تھک نیاٹ یوتھ قومی مومنٹ کا کمشنر دیامر ڈویژن کے آفس کے باہر دھرنا

Share Button

چلاس(نمائندہ خصوصی)تھک داس میں واپڈا ماڈل کالونی کی تعمیر اور اراضی کا ممکنہ ایوارڈ بنائے جانے کے خلاف مالکان تھک نیاٹ بابوسر اور تھک نیاٹ یوتھ قومی مومنٹ کے ہزاروں لوگوں نے کمشنر دیامر ڈویژن اور ڈپٹی کمشنر دیامر کے آفس کے باہر دھرنا دیا اور ضلعی انتظامیہ کے خلاف سخت غم و غصے کا اظہار کیا گیا ۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے احتجاجی مظاہرین کے سرکردہ رہنماوں ضیاء اللہ تھکوی، نمبردار زبیر،حاجی جیل خان،کالا خان،جمشید،حاجی طوطا،نجم خان غلام غفور و دیگر نے کہا کہ دیامر کی ضلعی انتظامیہ اور واپڈا حکام تھک نیاٹ اور بابوسر کے پرامن لوگوں کو جان بوجھ کر احتجاج پر اُکسا رہے ہیں ،کمشنر دیامر اور ڈی سی دیامر تھک داس کا ایوارڈبناکر تھک قبائل کے مستقبل کے ساتھ چھیڑ رہے ہیں اور مظلوم عوام کی عزتوں پر ہاتھ ڈال رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ کمشنر دیامر تھک نیاٹ کے لوگوں کو دہشت گرد نہ بنائیں ،ہم پرامن اور محب وطن پاکستانی ہیں ۔انہوں نے کہا کہ اگر کلکٹر دیامر ڈیم نے تھک داس کا ایوارڈبنانے کی کوشش کی تو پھر اُس کے بعد ضلع دیامر میں حالات کی تمام تر خرابی کا زمہ دار کمشنر اور ڈی سی دیامر ہونگے۔انہوں نے کہا کہ دیامر کی ضلعی انتظامیہ اور واپڈا متاثرین کے مسائل حل کرنے میں سنجیدہ دیکھائی نہیں دے رہے ہیں ،اگر انتظامیہ متاثرین کو آباد کرنا چاہتی ہے ڈاون کنٹری میں ماڈل کالونیاں بناکر وہاں بسائیں ۔دیامر کے لوگوں نے ڈیم کی تعمیر کیلئے ہزاروں کنال اراضی قربان کیا ہے حکومت متاثرین کی آباد کاری کیلئے ڈاون کنٹری میں کچھ اراضی فراہم کرکے متاثرین کو وہاں سٹل کرے ۔مظاہرین نے تھک داس میں ماڈل کالونی کی تعمیر اور ایوارڈ بنانے کے خلاف 11 مارچ کو تھک داس میں قومی جرگہ بلاکر حکومت اور انتظامیہ کے خلاف احتجاج کی باضابطہ کال بھی دے دی ہے۔دوسری جانب تھک داس میں ماڈل کالونی اور ایوارڈ بنانے کے خلاف دھرنے دینے والے مالکان تھک اور تھک نیاٹ یوتھ قومی مومنٹ کے رہنماوں سے کمشنر دیامر ڈویژن سید عبدالوحید شاہ اور ڈی سی دیامر دلدار احمد ملک نے الگ الگ ملاقات کی ۔ملاقات میں ڈپٹی کمشنر دیامر دلدار احمد ملک نے تھک داس کا ایوارڈاور تھک داس میں ماڈل کالونی بنانے کا سارا ملبہ واپڈا پر ڈال دیا اور کہا کہ واپڈا حکام تھک داس کے علاوہ کہیں اور ماڈل کالونی بنانے کیلئے تیار نہیں اور تھک داس کو کالونی کیلئے فیزبل قرار دے رہے ہیں ۔ڈی سی نے مزید کہا کہ واپڈا ضلعی انتظامیہ کے ساتھ کسی قسم کی تعاون کیلئے تیار نہیں ہے جس کی وجہ سے ری سٹلمنٹ کا معاملہ رکا ہوا ہے ،ڈی سی دیامر نے یہ بھی کہا کہ متاثرین کی ری سٹلمنٹ ضلعی انتظامیہ کا کام نہیں بلکہ یہ کام واپڈا کا ہے ،ڈی سی نے مزید کہا کہ واپڈا نے سی بی ایم کی تمام سکیموں کا بیڑا غرق کرکے رکھ دیا ہے ،دیامر میں واپڈا کا کوئی زمہ دار موجود نہیں ہے ،واپڈا کے تمام کام سرانجام دینے کیلئے الطاف اور رحیم شاہ ہیں اور وہ میٹنگز کررہے ہوتے ہیں ،ایسے میں متاثرین کے مسائل کیا حل ہونگے۔ڈی سی دیامر سے ملاقات میں مالکان تھک کے نمائندہ وفد میں شامل رہنماوں ضیاء اللہ تھکوی،کالا خان،نمبردار زبیر،جمشیدو دیگر نے کہا کہ ضلعی انتظامیہ اور واپڈا کے حکام کان کھول کر سن لیں تھک داس میں ماڈل کالونی کسی صورت بننے نہیں دیں گے،اگر انتظامیہ نے تھک داس کا ایوارڈ بنایا تو اس کے سنگین نتائج برآمد ہونگے۔اس سے قبل مالکان تھک کے نمائندہ وفد نے کمشنر دیامر کو بھی دو ٹوک جواب دیتے ہوئے کہا کہ انتظامیہ تھک داس کا ایوارڈ بنانے سے پہلے سوچ لیں اور بعد میں پیش آنے والے حالات کیلئے تیاری کرلیں ،تھک نیاٹ اور بابوسر کے عوام کو بندگلی میں دھکیلنے کی کوشیش کی گئی تو پھر اُس کے بعد گولی آگے سے لگے یا پیچھے تھک کے عوام گولیاں کھانے کیلئے تیار ہیں ۔اس موقع پر مالکان تھک نے کمشنر اور ڈی سی کو ایک درخواست بھی دی جس میں تھک داس کا ایوارڈ اور داس میں واپڈا کالونی کی تعمیر کے خلاف نقائص درج ہیں ۔

 

Facebook Comments
Share Button