تازہ ترین

Marquee xml rss feed

اںڈے برآمد ہونے کے بعد سیکیورٹی اہلکار چوکنے ہوگئے رانا ثنا اللہ نے کہا ہے کہ سیکیورٹی اہلکارہر بار ان سے پوچھتے ہیں کہ ان کے پاس انڈے تو نہیں ہیں-گرفتار رکن کو پنجاب اسمبلی میں لانے کیلئے شہبازشریف نے رولز میں ترمیم نہیں کی تھی‘ چودھری پرویزالٰہی سب سے زیادہ فلاحی کام ہمارے دور میں ہوئے‘باباجی خالد محمود مکی ... مزید-یکم جنوری سے تمام کمرشل ڈرائیورز کی سکریننگ اور مرحلہ وار خصوصی تربیتی کورسز کرانے کا فیصلہ 6ماہ میں ہر ڈرائیور کو اس عمل سے گزارا جائے ،آگاہی مہم جاری رکھی جائے‘عبدالعلیم ... مزید-آئی ایم ایف کی شرائط کے انتظار سے پہلے ہی معیشت کی بہتری کیلئے ازخود اقدامات کئے ‘ اسد عمر اصلاحات کے معاملے پر آئی ایم ایف اور حکومت کے درمیان اختلافات ہیں ،اقدامات ... مزید-سعودی عرب سے امداد حاصل کرنے پر پاکستان کو شرمندگی نہیں ہونی چاہیئے ہمیں شرم کرنے کا کہنے کی بجائے مغربی ملکوں کے رہنماوں کو شرم آنی چاہیے جو جمہوریت اور آزادی کی بات ... مزید-لندن میں پاکستانی تاجر کا کروڑوں کا کاروبار جل کر راکھ نسل پرستوں نے پاکستانی تاجر کی کروڑوں روپے مالیت کی گاڑیاں جلا ڈالیں-احتساب عدالت نے شوکت عزیز کیخلاف دائر ریفرنس میں شریک ملزم عارف علاؤالدین کو عدم حاضری کی بناء پر اشتہاری قرار دیدیا-جنگی حکمت عملی میں ہمیں ہائبرڈوار فئیر اور سائبر وار فئیر کے خلاف چوکنا رہنا ہے ،ْ نیول چیف ایڈمرل ظفر محمود عباسی جیو اسٹریٹجک حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے ہمیں اپنے قومی ... مزید-ْ پروٹوکول میں جو بات بتائی گئی اس میں کوئی بھی چیز یہاں موجود نہیں ،ْ چیف جسٹس ثاقب نثار-امریکہ نے پاکستان کو باعث تشویش ممالک پر عائد معاشی پابندیوں سے استثنیٰ دے دیا گذشتہ روز امریکہ نے پاکستان کو مذہبی آزادی کی خلاف ورزی کرنے والے ممالک کی فہرست میں ... مزید

GB News

گلگت بلتستان ورکنگ پارٹی کا اجلاس : 3ارب 79ارب 58کروڑ روپے لاگت کی دس ترقیاتی سکیموں کی جانچ پڑتال

Share Button

گلگت(پ ر )وزیر اعلیٰ کی زیر صدارت گلگت بلتستان ورکنگ پارٹی کے اجلاس میں 3ارب 79ارب 58کروڑ روپے لاگت کی دس ترقیاتی سکیموں کی جانچ پڑتال ہوئی ،پن بجلی کی پیداوار کے 2،صحت کے سماجی نظام کے ایک،بہبود آبادی کے ایک اور ,6آمدورفت اوررسد کے منصوبوںپر غور کیاگیا،بجلی کے دو منصوبوں کی مجموعی لاگت 64کروڑ روپے سے زیادہ ہے جس کے تحت ہنزہ میں3میگاواٹ کے دو پن بجلی گھر،1بتورا گلیشیئر پر،2میگاواٹ اور چپورزن میں ایک میگاواٹ کا منصوبہ ہے ان منصوبوں کی تکمیل سے ضلع ہنزہ میں بجلی کی قلت پر قابو پانے میں مدد ملے گی حکومت گلگت بلتستان نے پہلے ہی بجلی کی ترسیل کیلئے ہنزہ میں ٹرانسمیشن لائن کا منصوبہ منظور کیا ہے جس پرعملدرآمد جاری ہے،صحت کے شعبے میں غریب گھرانوں کے علاج کو بہتر بنانے کیلئے حکومت جرمنی کے اشتراک سے 39کروڑ 31لاکھ راپے کی لاگت سے ہیلتھ پروٹیکشن کے منصوبے کو منظور کیاگیا اس منصوبے کے تحت ضلع گلگت ،ہنزہ،نگر،غذر اور گانچھے میں صحت کی سہولیات فراہم کی جائیں گی جس سے نادار اور غریب گھرانوں کو صحت کے نظام کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی،اس منصوبے کیلئے83 فیصد رقم جرمن حکومت فراہم کریگی جبکہ باقی ماندہ رقم حکومت گلگت بلتستان کے ذریعے سے پوری ہوگی،صحت کے شعبے میں توازن برقرار رکھنے کیلئے بہبود آبادی کے ایک منصوبے پر غور کیاگیا جس کی مجموعی لاگت 43کروڑ80لاکھ روپے بنتی ہے اس منصوبے کو وفاقی حکومت کی منظوری کیلئے سفارش کی گئی،آمدورفت اور رسد کے 6اہم منصوبوں پر غور کیاگیا جس کی مجموعی لاگت 2ارب31کروڑ91لاکھ روپے بنتی ہے پہلا منصوبہ معلق پلوں کو آر سی سی میں تبدیل کرنا ہے جس کی لاگت 40کروڑ روپے ہے اس کے تحت گلگت کے 8معلق پلوں کو آرسی سی بنایا جائے گا13کروڑ 77 کی رقم سے 186میٹر سے زائد لمبائی کے پلوں کو تعمیر کیا جائے گا،ضلع غذر میں 12کروڑ 58لاکھ کی لاگت سے 8پل تعمیر کیے جائیں گے ہنزہ میں4پلوں کی تعمیر کیلئے 4کروڑ 80لاکھ سے زائد کی رقم خرچ کی جائے گی۔دیامر اوربلتستان میں اسی نوعیت کے منصوبے پہلے ہی منظور کیے جاچکے ہیں،گلگت میں210میڑ لمبا آرسی سی پل 61کروڑ 77لاکھ کی لاگت سے تعمیر کیا جائے گا اس پل کی تعمیر سے صوبائی دارلحکومت کو ضلع ہنزہ،نگر کے مضافاتی مقامات کو ملانے میں آسانی ہوگی،بلتستان ریجن میں ترقی کی رفتار کو تیز کرنے کیلئے 3اہم منصوبوں کی منظوری دی گئی،سکردو ایئر پورٹ سے کلفٹن بریج تک روڈ چونکہ این ایچ اے کریگی لہٰذا تمام مختص وسائل سے چھومک سے تھورگور پائن تک بائی پاس روڈ بنایا جائے گا،صحت انشورنس کے دائرہ کار کو ہنزہ ،نگر،غذر اور گانچھے تک بڑھایا جائیگا جس کے بعد 30ہزار گھرانے مستفید ہونگے۔

 

Facebook Comments
Share Button