تازہ ترین

Marquee xml rss feed

گاڑیوں اور بھینسوں کے بعد 11کھلاڑی بھی نیلام کیے جائیں کھلاڑی نیلام کرنے سے تین ہزار ارب GB ڈیٹا اور 20 ہزار میگا واٹ سالانہ بجلی کی بچت ہو گی جو قوم کرکٹ میچ دیکھنے میں خرچ ... مزید-پنجاب کو آ پریٹو بینک اور سوسائٹی کے ریکارڈ روم میں آگ لگائے جانے کا انکشاف آگ شارٹ سرکٹ سے نہیں بلکہ پٹرولیم سے لگائی گئی تھی،جس وقت آ گ لگی اس وقت چوکیدار بھی موجود نہیں ... مزید-نواز شریف روزانہ بیگم کلثوم نواز کی قبر پر کچھ وقت گزارتے ہیں نواز شریف کو پچھتاوا ہے کہ وہ آخری وقت میں کلثوم نواز کے ساتھ نہیں تھے-پاکستان چین کے تعاون سے گوادر پورٹ کو دنیا کی جدید ترین بندرگاہ بنا کر سمندری راستے سے عالمی تجارت کو فروغ دینے کیلئے بھرپور اقدامات کر رہا ہے وفاقی وزیر منصوبہ بندی، ... مزید-امریکی سرمایہ کاروں کو پاکستان کے دورے کی دعوت، ویزے آسان بنانے کی کوشش جاری ہے امریکا میں پاکستان کے سفیر علی جہانگیر صدیقی کی ایف پی سی سی آئی کے صدر غضنفر بلور سے ... مزید-سابق صدر پرویز مشرف کی دبئی میں 4.5 ملین سے زائد کی جائیداد سپریم کورٹ میں جمع کروائے گئے بیان حلفی میں جائیدادوں کی تفصیل سامنے آ گئی-وزیراعظم عمران خان کا آج قوم سے خطاب متوقع وزیراعظم عمران خان قوم سے خطاب میں اہم اعلان کریں گے-کیپٹن (ر) صفدر کو بیرون ملک بھیجنے کی تیاریاں کیپٹن (ر) صفدر کو علاج کے لیے بیرون ملک منتقل کیا جا سکتا ہے-ضمنی انتخابات میں تحریک انصاف کی جیت یقینی ہے،لیاقت خان خٹک-چترال میں چینی انجینئرزکی گاڑی کوحادثہ ، 6 افراد زخمی

GB News

آزادکشمیر اور گلگت بلتستان میں ماڈل حکومتیں قائم کی جائیں ،ڈاکٹر خالدمحمود

Share Button

اسلام آباد(پ ر) جماعت اسلامی آزاد جموں وکشمیر و گلگت بلتستان کا ایک اعلیٰ سطحی اجلاس زیر صدارت امیر جماعت اسلامی آزادکشمیر و گلگت بلتستان ڈاکٹر خالد محمود خان منعقد ہوا ،اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ گلگت بلتستان کو مسئلہ کشمیر کو متاثرکیے بغیر ایک با اختیار اور باوقار نظام حکومت دیا جائے جس کی بہترین صورت آزادکشمیر طرز کا آئینی سیٹ اپ ہے جو مالی اور انتظامی طور پر بااختیار ہو ،نیز اقوام متحدہ کی قراردادوں کی روشنی میں گلگت بلتستان اور آزادکشمیر کو مسئلہ کشمیر سے مربوط کرنے اور رائے شماری میں دونوں خطوں کے عوام کا پاکستان سے الحاق کے حق میں ووٹ کا موقع فراہم کیا جاسکے اجلاس میں یہ طے کیا گیا کہ آئینی انتظام کے ذریعے سے گلگت بلتستان کے عوام کو وہ تمام حقوق میسر ہوں جو پاکستان اور آزادکشمیر کو حاصل ہیں سپریم کورٹ اور ہائی کورٹ ،آزاد سپریم کورٹ اور ہائی کورٹ کے ذریعے سے قانون اور آئین کے تقاضے پورے کیے جائیں ،اجلاس سے سابق امیر جماعت اسلامی وممبرقانون ساز اسمبلی کنونیئر کل جماعتی کشمیررابطہ کونسل عبدالرشید ترابی،سابق وزیر قانون وامیر گلگت بلتستان مشتاق ایڈووکیٹ،نائب امیر وکنونیئر اورسیز کشمیری راجہ جہانگیر خان،نائب امیر وچیئرمین سیاسی امور نورالباری،سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی راجہ فاضل حسین تبسم سمیت دیگر قائدین نے خطاب کیا،ڈاکٹر خالدمحمود نے کہاکہ جماعت اسلامی نے اول روز سے کشمیرکے دونوں آزاد خطوں میں باوقار اور بااختیار نظام حکومت کے لیے طویل جدوجہد کی ہے ،انہوں نے کہاکہ آزادکشمیر اور گلگت بلتستان میں ماڈل حکومتیں قائم کی جائیں ،دیامر ڈیم کی رائلٹی یہاں کے عوام کو فراہم کی جائے تاکہ یہ ماڈل خطے اپنے عوام کے مسائل حل کرنے کے ساتھ ساتھ کشمیرکی آزادی کی تحریک کو منطقی انجام تک پہنچانے کے لیے بیس کیمپ کا کردار ادا کر سکیں یہ ماڈل آزاد خطے مقبوضہ کشمیر کے بھائیوں کے لیے باعث رغبت ہوں گے ۔

 

Facebook Comments
Share Button