تازہ ترین

Marquee xml rss feed

اںڈے برآمد ہونے کے بعد سیکیورٹی اہلکار چوکنے ہوگئے رانا ثنا اللہ نے کہا ہے کہ سیکیورٹی اہلکارہر بار ان سے پوچھتے ہیں کہ ان کے پاس انڈے تو نہیں ہیں-گرفتار رکن کو پنجاب اسمبلی میں لانے کیلئے شہبازشریف نے رولز میں ترمیم نہیں کی تھی‘ چودھری پرویزالٰہی سب سے زیادہ فلاحی کام ہمارے دور میں ہوئے‘باباجی خالد محمود مکی ... مزید-یکم جنوری سے تمام کمرشل ڈرائیورز کی سکریننگ اور مرحلہ وار خصوصی تربیتی کورسز کرانے کا فیصلہ 6ماہ میں ہر ڈرائیور کو اس عمل سے گزارا جائے ،آگاہی مہم جاری رکھی جائے‘عبدالعلیم ... مزید-آئی ایم ایف کی شرائط کے انتظار سے پہلے ہی معیشت کی بہتری کیلئے ازخود اقدامات کئے ‘ اسد عمر اصلاحات کے معاملے پر آئی ایم ایف اور حکومت کے درمیان اختلافات ہیں ،اقدامات ... مزید-سعودی عرب سے امداد حاصل کرنے پر پاکستان کو شرمندگی نہیں ہونی چاہیئے ہمیں شرم کرنے کا کہنے کی بجائے مغربی ملکوں کے رہنماوں کو شرم آنی چاہیے جو جمہوریت اور آزادی کی بات ... مزید-لندن میں پاکستانی تاجر کا کروڑوں کا کاروبار جل کر راکھ نسل پرستوں نے پاکستانی تاجر کی کروڑوں روپے مالیت کی گاڑیاں جلا ڈالیں-احتساب عدالت نے شوکت عزیز کیخلاف دائر ریفرنس میں شریک ملزم عارف علاؤالدین کو عدم حاضری کی بناء پر اشتہاری قرار دیدیا-جنگی حکمت عملی میں ہمیں ہائبرڈوار فئیر اور سائبر وار فئیر کے خلاف چوکنا رہنا ہے ،ْ نیول چیف ایڈمرل ظفر محمود عباسی جیو اسٹریٹجک حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے ہمیں اپنے قومی ... مزید-ْ پروٹوکول میں جو بات بتائی گئی اس میں کوئی بھی چیز یہاں موجود نہیں ،ْ چیف جسٹس ثاقب نثار-امریکہ نے پاکستان کو باعث تشویش ممالک پر عائد معاشی پابندیوں سے استثنیٰ دے دیا گذشتہ روز امریکہ نے پاکستان کو مذہبی آزادی کی خلاف ورزی کرنے والے ممالک کی فہرست میں ... مزید

GB News

صادق سنجرانی چیئرمین سینٹ جبکہ سلیم مانڈوی والا ڈپٹی چیئرمین کے امیدوار ہونگے ، پیپلزپارٹی

Share Button

اسلام آباد (آن لائن آئی این پی) پاکستان پیپلزپارٹی نے چیئرمین و ڈپٹی چیئرمین سینٹ کیلئے اپوزیشن کے متفقہ امیدواروں کے ناموں کا اعلان کر دیا ہے ،بلوچستان سے منتخب آزاد سینیٹر صادق سنجرانی چیئرمین سینٹ جبکہ پیپلز پا رٹی کے سینیٹر سلیم مانڈوی والا ڈپٹی چیئرمین کے امیدوار ہونگے ،ذرائع کے مطابق پیپلز پارٹی کو اپنے امیدواروں کو منتخب کرانے کیلئے 56 سینیٹرز کی حمایت حاصل ہوگئی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز زرداری ہائوس اسلام آباد میں چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو کی زیرصدارت چیئرمین سینیٹ اورڈپٹی چیئرمین سینیٹ کی نامزدگی کے حوالے سے مشاورت کی گئی۔ اجلاس میں صدر پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرینز آصف علی زرداری ،اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ ، وزیر اعلی بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو ، میاں رضاربانی ، فرحت اللہ بابر سمیت پارٹی کے تمام نو منتخب سینیٹرز اور پارٹی کے دیگر سنئیر رہنمائوں نے شرکت کی ۔ اس موقع پرپیپلزپارٹی کی قیادت نے چیئرمین سینیٹ کیلئے صادق سنجرانی اور ڈپٹی چیئرمین کیلئے سلیم مانڈوی والا کی حمایت کااعلان کردیا ہے۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ پیپلز پارٹی اپنے امیدوار کا اعلان کرے، چیئرمین سینیٹ کے لیے ہمارے امیدوار بھی صادق سنجرانی ہی ہوں گے جب کہ ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کے لیے ہم اپنے امیدوار سلیم مانڈوی والا کی حمایت کرتے ہیں، چیئرمین سینیٹ کے لیے اپوزیشن کا متفقہ امیدوار مسلم لیگ (ن) کے امیدوار کا مقابلہ کرے گا۔ بلاول بھٹو نے کہاکہ اگر بلوچستان سمجھتا ہے کہ ایک صوبہ سے چیئرمین بننے سے ان کے مسائل حل نہیں ہوتے توہم توقعات رکھتے ہیں کہ اب نئے چیئرمین سینیٹ بلوچستان کے مسائل کوحل کریں گے۔بلاول بھٹو نے میڈ یا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے سینیٹرز کے اکثریت ہمارے ساتھ ہے ،اگر تعداد بتادی تو ن لیگ کو معلوم ہوجائے گا ۔انکا کہنا تھاکہ رضاربانی کے لئے میرے پاس دوسرا پلان ہے ،انہیں دوسرے ٹاسک دئیے ہیں وہ 2018ء کے الیکشن میں نظر آئیگا۔ اجلاس کے بعد میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو نے کہا ہے کہ یہ تاریخ رقم ہورہی ہے کہ اکثریت کے باوجود پیپلز پارٹی نے ہمارے امیدوار صادق سنجرانی کی حمایت کی ہے، پیپلز پارٹی نے آئینی ترامیم میں پہلے بھی بلوچستان کے حقوق کیلئے کام کیا ہے جس پر ہم آصف زرداری ،بلاول بھٹو اور انکی پارٹی کے مشکور ہیں۔انکا کہنا تھا کہ بلوچستان سے چیئرمین سینٹ بننے سے ہمارے احساس محرومی میں کمی واقع ہوگی ۔بلوچستان بھی پیپلز پارٹی کا ہی ہے اور چیرمین سینیٹ بلوچستان سے منتخب کرکے پیپلزپارٹی نے بلوچستان کی عوام کے دل جیت لئے ہیں ۔دوسری جانب ذرائع کا کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی کو اپنے امیدواروں کو منتخب کرانے کیلئے 56 سینیٹرز کی حمایت حاصل ہو ہے۔اس سے قبلپاکستان تحریک انصاف نے صادق سنجرانی کی بطور چیئرمین سینیٹ نامزدگی کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا ہے کہبلوچستان اور فاٹا کو اہم عہدے دینے سے احساس محرومی کم ہوگا،مین سینیٹ کے عہدے پر بلوچستان کا حق بنتا ہے اور ہم چاہتے ہیں ڈپٹی چیئرمین سینیٹ فاٹا سے ہو جبکہ وزیراعلی بلوچستان عبدالقدوس بزنجو نے کہا کہ تحریک انصاف نے بلوچستان کا حق تسلیم کر کے اچھی روایت قائم کی اور حمایت کرنے پر عمران خان کے مشکور ہیں۔ اتوار کووزیراعلی بلوچستان عبدالقدس بزنجو کی قیادت میں بلوچستان کے آزاد سینیٹرز کا وفد بنی گالا پہنچا جہاں انہوں نے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان سے ملاقات کی اور انہیں چیئرمین و ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کے انتخاب کے لئے کی گئی کوششوں سے متعلق آگاہ کیا۔

Facebook Comments
Share Button