تازہ ترین

Marquee xml rss feed

گاڑیوں اور بھینسوں کے بعد 11کھلاڑی بھی نیلام کیے جائیں کھلاڑی نیلام کرنے سے تین ہزار ارب GB ڈیٹا اور 20 ہزار میگا واٹ سالانہ بجلی کی بچت ہو گی جو قوم کرکٹ میچ دیکھنے میں خرچ ... مزید-پنجاب کو آ پریٹو بینک اور سوسائٹی کے ریکارڈ روم میں آگ لگائے جانے کا انکشاف آگ شارٹ سرکٹ سے نہیں بلکہ پٹرولیم سے لگائی گئی تھی،جس وقت آ گ لگی اس وقت چوکیدار بھی موجود نہیں ... مزید-نواز شریف روزانہ بیگم کلثوم نواز کی قبر پر کچھ وقت گزارتے ہیں نواز شریف کو پچھتاوا ہے کہ وہ آخری وقت میں کلثوم نواز کے ساتھ نہیں تھے-پاکستان چین کے تعاون سے گوادر پورٹ کو دنیا کی جدید ترین بندرگاہ بنا کر سمندری راستے سے عالمی تجارت کو فروغ دینے کیلئے بھرپور اقدامات کر رہا ہے وفاقی وزیر منصوبہ بندی، ... مزید-امریکی سرمایہ کاروں کو پاکستان کے دورے کی دعوت، ویزے آسان بنانے کی کوشش جاری ہے امریکا میں پاکستان کے سفیر علی جہانگیر صدیقی کی ایف پی سی سی آئی کے صدر غضنفر بلور سے ... مزید-سابق صدر پرویز مشرف کی دبئی میں 4.5 ملین سے زائد کی جائیداد سپریم کورٹ میں جمع کروائے گئے بیان حلفی میں جائیدادوں کی تفصیل سامنے آ گئی-وزیراعظم عمران خان کا آج قوم سے خطاب متوقع وزیراعظم عمران خان قوم سے خطاب میں اہم اعلان کریں گے-کیپٹن (ر) صفدر کو بیرون ملک بھیجنے کی تیاریاں کیپٹن (ر) صفدر کو علاج کے لیے بیرون ملک منتقل کیا جا سکتا ہے-ضمنی انتخابات میں تحریک انصاف کی جیت یقینی ہے،لیاقت خان خٹک-چترال میں چینی انجینئرزکی گاڑی کوحادثہ ، 6 افراد زخمی

GB News

واں مالی سال کے 9مہینوں میں صوبائی حکومت نے کل بجٹ کا 36فیصد خرچ کرلیا،راجہ جہانزیب

Share Button

گلگت(فہیم اختر سے)ممبرقانون سازاسمبلی گلگت بلتستان راجہ جہانزیب نے کہا ہے کہ رواں مالی سال کے 9مہینوں میں صوبائی حکومت نے کل بجٹ کا 36فیصد خرچ کرلیا ہے اور آئندہ صرف تین مہینوں کیلئے بجٹ کا 64فیصد حصہ باقی ہے جس سے یہ خدشہ آرہا ہے کہ ترقیاتی بجٹ کی خطیر رقم خرچ نہیں ہوسکے گی جو کہ گلگت بلتستان کے ساتھ سنگین مذاق کے مترادف ہے صوبائی حکومت نے اب تک عوامی نمائندوں سے اے ڈی پی کیلئے منصوبے ہی طلب نہیں کئے ہیں مزید تاخیر کی صورت میں 15لاکھ عوام کے ووٹوں سے منتخب ممبران کا نہ صرف استحقاق مجروح ہوگا بلکہ عوام کے مفاد میں 1روپیہ بھی خرچ نہیں ہوگا جوکہ صوبائی حکومت کی نااہلی ہے کے پی این سے گفتگو کرتے ہوئے رکن صوبائی اسمبلی راجہ جہانزیب نے کہا کہ بجٹ خرچ کرنے کے حوالے سے صوبائی حکومت نے نااہلی کی انتہا کردی ہے صرف 3ماہ کیلئے بجٹ کا 64فیصد حصہ بقایا ہونا اور 9ماہ میں صرف 36فیصد خرچ ہونا اس نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے گزشتہ سال رانی عتیقہ کی سربراہی میں قائمہ کمیٹی میں ہم نے ہفتہ وار بنیادوں پر تمام اداروں کی چیک اینڈ بیلنس کی اور نہ صرف مکمل بجٹ خرچ کرنے میںہم کامیاب ہوئے بلکہ سابقہ سال کے 4ارب سے زائد رقم کو بھی خرچ کرایا اسی بنیاد پر صوبائی حکومت نے وفاق سے بجٹ میں اضافہ کا مطالبہ کردیا اور بجٹ دوگناہ کردیاگیا مگر بدقسمتی سے رواں مالی سال صوبائی حکومت نے اسمبلی معاملات اور قائمہ کمیٹی میں دلچسپی نہیں لی جس کی وجہ سے قائمہ کمیٹی کا کوئی بھی اجلاس طلب نہیں ہوسکا ہے قائمہ کمیٹی کا بذات خود غیر فعال ہونا سمجھ سے باہر ہے تاہم اس کا نزلہ عوام پر گر رہاہے انہوںنے کہا کہ صوبائی حکومت سے باربار مطالبہ کرنے اور وزیراعلیٰ سے پوچھنے کے باوجود ممبران اسمبلی سے اب تک ترقیاتی منصوبے طلب نہیں کئے گئے ہیں گزشتہ سال دسمبر سے اب تک صرف جلد ہی کے نام پر ٹرخایا جارہا ہے راجہ جہانزیب نے مزید کہا کہ صوبائی حکومت کے پاس بجٹ خرچ کرنے کے حوالے سے صلاحیت ہی نہیں ہے ممبران اسمبلی کے 2016-17کے منظور شدہ منصوبوں کے ٹینڈرز ابھی تک نہیں ہوئے رواں سال اب تک بجٹ کا کل 36فیصد خرچ کیاگیا ہے جبکہ آئندہ بجٹ کیلئے اب تک ممبران اسمبلی سے سکیمیں طلب ہی نہیں کئے گئے ہیں صوبائی حکومت اخبارات کی حد تک اچھی کارکردگی دکھا رہی ہے جبکہ عملی طورپر کارکردگی صفر ہے ممبران اسمبلی کو صرف یاد دہانیاں کرائی جارہی ہے۔

 

Facebook Comments
Share Button