تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیراعلیٰ پنجاب کا گجرات میں طالبات پر تیزاب پھینکنے کے واقعہ کا نوٹس،ملزمان کی گرفتاری کا حکم-وزیراعلیٰ پنجاب سے دانش سکولز سے فارغ التحصیل ہوکراعلی تعلیمی اداروں میںتعلیم حاصل کرنے والے طلباء و طالبات کی ملاقات دانش سکول پر تنقید کرنے والے سیاسی لیڈروںنے اپنے ... مزید-سپریم کورٹ کی سفارش پر قائم کمیٹی نے سندھ اور بلوچستان کے اکیس غیر معیاری نجی اور سرکاری لاء کالجز بند کرنے کی سفارش کر دی-چیف جسٹس نے پنجاب میں 600 سے زائد بچوں کے اغوا کی میڈیا رپورٹس کا نوٹس لے لیا-وزیراعلیٰ پنجاب کا پیپلز پارٹی کے رہنما جہانگیر بدر مرحوم کے بھائی کے انتقال پر اظہار تعزیت-وزیراعلیٰ پنجاب سے سندھ کے شیرازی برادران کی ملاقات شیرازی برادران کا عوام کی فلاح و بہبود اور ترقی کیلئے بے مثال اقدامات پر شہبازشریف کو خراج تحسین عوام کی خدمت کا ... مزید-فیس بک کے لوگو کا رنگ نیلا کیوں ہے،ایسا انکشاف جو آپ کے وہم و گمان میں بھی نہ ہو گا-لاہور، ملک کے وزیر اعظم عمران خان ہونگے،اعجازاحمد چوہدری نواز شریف اور زرداری ٹولہ نے اقتدار میں آ کر صرف عوام کا خون چونسا ہے اور اپنی جیبیں بھری ہے ملک کے تباہی کے ... مزید-پشاور، بس ریپڈٹرانزٹ منصوبے پر صوبائی کابینہ کو بریفننگ واحد منصوبہ ہے جو قلیل عرصے اور کم لاگت سے مکمل ہوگا،پرویز خٹک مجموعی لاگت میں بسوں کی خریداری، اراضی، کمرشل ... مزید-عوام کی عدم دلچسپی کے باعث سندھ گیمز کی افتتاحی تقریب نا کامی کا شکار ہوئی ہے ، سید صفدر حسین شاہ

GB News

پی ٹی اے گلگت بلتستان میں جلد تھری اور فور جی سروس شروع کرے، قانون ساز اسمبلی کی قرارداد

Share Button

گلگت بلتستان قانون سازاسمبلی نے ایک قرارداد کی متفقہ طورپر منظوری دی ہے جس میں پی ٹی اے سے گلگت بلتستان میں بھی تھری جی فور جی سروس شروع کرنے کا مطالبہ کیاگیا ہے۔قرارداد میں کہاگیاہے کہ گلگت بلتستان کا یہ مقتدر ایوان محسوس کرتا ہے کہ آج کے اس جدید مواصلاتی دورمیں گلگت بلتستان جیسا دور افتادہ علاقہ تھری جی اورفور جی سروس سے یکسر محروم ہے جس سے عوام کو شدید مواصلاتی مشکلات پیش آرہی ہیں جبکہ ملک کے دیگر صوبوں اور آزاد کشمیر میں تھری جی فور جی سروس دستیاب ہے اس لئے یہ مقتدر ایوان پی ٹی اے اور ایس سی او حکام سے مطالبہ کرتا ہے کہ گلگت بلتستان میں بھی تھری جی فور جی سروس کو فوراً شروع کیا جائے تاکہ گلگت بلتستان کے عوام اس جدید مواصلاتی سروس سے مستفید ہو سکیں۔یہ قرارداد جمعرات کے روز پارلیمانی سیکرٹری میجر(ر) محمد امین نے ایوان میں پیش کی قرارداد کی حمایت کرتے ہوئے کاچو امتیازحیدر نے کہا کہ تھری جی فور جی سروس دینا ایس سی او کے بس کی بات نہیں ہے دیگر کمپنیوں کو تھری جی فور جی کا لائسنس جاری کیا جائے انہوںنے کہا کہ ایس سی او نے آزمائشی بنیادوں پر تھری جی فورجی سروس شروع کی تھی مگر ان کی سروس انتہائی ناقص ہے ایس سی او نے ڈیٹا کا بینڈورتھ بہت کم کیا ہے جس کی وجہ سے ان کی سروس خراب ہے وزیرقانون اورنگزیب ایڈووکیٹ نے قرارداد کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ یہ قرارداد اسمبلی کیساتھ مذاق ہے۔جاوید حسین نے قرارداد کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ جب آزاد کشمیر کوتھری جی فور جی سروس دی جاسکتی ہے تو گلگت بلتستان کو تھری جی فور جی سروس کیوں نہیں دی جاسکتی ہے۔وزیرتعلیم حاجی ابراہیم ثنائی نے قرارداد کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ یہ ایک عوامی مسئلہ ہے اسے ہم نظر انداز نہیں کرسکتے ہیں انہوںنے کہاکہ گلگت بلتستان میں دیگر کمپنیاں بھی تھری جی فور جی سروس شروع کرنا چاہتی ہیں مگر ایس سی او اس میں رکاوٹ بنا ہوا ہے ایس سی او کی سروس انتہائی خراب ہے ایس سی او کو اپنی سروس بہتر بنانے کی طرف توجہ دیناچاہیے۔نواز خان ناجی نے کہا کہ ایس سی او کی بہت سے شکایات سامنے آرہی ہیں نوجوان جذباتی ہیںانہوںنے کہاکہ تھری جی فور جی میںکسی بھی قسم کی کوئی رکاوٹ نہیںہے۔قرارداد کی سوائے وزیر قانون اورنگزیب ایڈووکیٹ کے کسی نے بھی مخالفت نہیں کی جس پر ڈپٹی سپیکر جعفر اللہ خان نے قرارداد کی بھاری اکثریت سے منظوری کا اعلان کرتے ہوئے اپنے ریمارکس میں کہا کہ گلگت بلتستان میں ایس سی او کی اجارہ داری بھی ہے خدمات بھی ہیںاورشکایات بھی ہیں انہوںنے کہا کہ ایس سی او کی سروس انتہائی ناقص ہے خود میرے دفتر میں ڈی ایس ایل لگا ہوا ہے کبھی چلتاہے مگر اکثر بند رہتا ہے جب شکایت کرتے ہیں تو وہ ٹھیک بھی نہیں کرتے ہیںانہوںنے کہا کہ دو سال قبل جب سابق وزیراعظم گلگت تشریف لائے تھے اور فائبر آپٹک کاسنگ بنیاد رکھنے کی تقریب تھی تو ایس سی او کے ذمہ دار حکام نے بڑی بڑی باتیں کی تھیں اور گلگت بلتستان میں انقلاب لانے کا دعویٰ کیا تھا مگر اب تک انقلاب اور تبدیلی تو دور کی بات ہے سروس کے معیار میں کچھ بھی بہتری نہیں آئی ہے ۔ابھی تک ہمیں کوئی تبدیلی اور انقلاب کہیں نظرنہیں آرہا ہے انہوںنے کہا کہ ایس سی او کی یہ ذمہ داری بنتی ہے کہ اپنی سروس کو بہتر کرے اگرسسٹم چلانے کی صلاحیت نہیںہے تو دیگر موبائل کمپنیوں کے حوالے کرے انہوںنے کہا کہ ہم اس قرارداد کے ساتھ ایس سی او کے ذمہ دار حکام کولکھیں گے کہ وہ ایک ماہ کے اندر اندر اپنی سروس کوبہتر کرے اگر ایک ماہ کے اندر اندر سروس ٹھیک نہیں کرسکتے ہیں توہمیں آگاہ کریں ہم وفاق میں ذمہ دار حکام اور پی ٹی اے سے بات کر کے متبادل انتظام کریںگے۔

Facebook Comments
Share Button