تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی کی بھارتی ہم منصب سے ملاقات 27 ستمبرکونیویارک میں ہوگی-حضرت امام حسین ؓ اور ان کے خاندان کی قربانی ہمیں باطل قوتوں کے سامنے ڈٹ جانے کا درس دیتی ہے ،ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی-امام حسین کی قربانیوں کو یاد کرنے کے ساتھ پیغام پر بھی عمل کیا جائے ،سید منورحسن امام حسین ؓ سے عقیدت ومحبت کا تقاضہ ہے کہ اقتدار اور اختیار کے غلط استعمال کو روکا جائے ... مزید-وزیراعظم عمران خان کو 4 نئے ہیلی کاپٹر دینے کی پیش کش معروف کاروباری شخصیت نے وزیراعظم ہاوس کے 4 پرانے ہیلی کاپٹرز کے بدلے نئے ہیلی کاپٹر دینے کی پیش کش کردی-چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کا لواری ٹنل بند ہونے کا نوٹس-بھارت نے وزیراعظم عمران خان کی ملاقات کی تجویز قبول کرلی 27 ستمبر کو جنرل اسمبلی اجلاس میں پاک بھارت وزرائے خارجہ شاہ محمود قریشی اور سشما سوراج کے درمیان ملاقات ہوگی-کے ڈی اے کو اپنے پاؤں پرکھڑا کرنا ہم سب کی ذمہ داری ہے۔ وزیر بلدیات سندھ ْماسٹر پلان ڈیپارٹمنٹ کا فیصلہ اور دیگرمعاملات کو غوروخوص کے بعد حل کیا جائے گا۔ سعید غنی-غربت،ناانصافی، جہالت، محرومی، جارحیت اور توسیع پسندانہ عزائم امن کے قیام میں بڑی رکاوٹیں ہیں، دنیا میں امن کے قیام کی کوششوں میں پاکستان ہراول دستے کا کردار ادا کررہا ... مزید-واقعہ کربلا صبر و تحمل، رواداری،ایثار اورقربانی کا درس دیتا ہے،حق و باطل کا یہ معرکہ مسلمانوں کو ظلم اور بربریت کیخلاف جہاد کرنے کا درس دیتاہے،وزیراعلیٰ سردار عثمان ... مزید-وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سے مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے اراکین اسمبلی اور تحریک انصاف کے عہدیداروں کی ملاقات

GB News

میرے کوئی سیاسی عزائم نہیں اور نہ ہی میں سیاست میں آؤں گا: میاں ثاقب نثار

Share Button

اسلام آباد: چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے کہا ہے کہ میرے کوئی سیاسی عزائم نہیں اور نہ ہی میں سیاست میں آؤں گا۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے کہا کہ عدلیہ پر تنقید کرنے والوں کے معاملے کو ذاتی حیثیت میں نہیں دیکھ رہے۔ سپریم کورٹ سمیت ملک بھر کی عدالتیں آئین اور قانون کی پاسدار ہیں۔ سپریم کورٹ نے آج تک کسی سیاسی مقدمے پر آز خود نوٹس نہیں لیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ اب تک 50 سے زائد از خود نوٹسز بنیادی حقوق سے متعلق لیے۔ بڑے افسوس کے ساتھ کہنا پڑ رہا ہے کہ ملک میں پانی، صحت، توانائی اور تعلیم سمیت کسی بنیادی حقوق کیلئے کچھ بھی نہیں کیا گیا۔

چیف جسٹس نے کہا کہ وہ بلوچستان کی طرح کے پی کے میں بھی جائیں گے۔ سیاسی مقدمات میں تمام فریقین نے سیاسی دائرہ اختیار کو تسلیم کیا۔

Facebook Comments
Share Button