تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیراعلیٰ پنجاب کا گجرات میں طالبات پر تیزاب پھینکنے کے واقعہ کا نوٹس،ملزمان کی گرفتاری کا حکم-وزیراعلیٰ پنجاب سے دانش سکولز سے فارغ التحصیل ہوکراعلی تعلیمی اداروں میںتعلیم حاصل کرنے والے طلباء و طالبات کی ملاقات دانش سکول پر تنقید کرنے والے سیاسی لیڈروںنے اپنے ... مزید-سپریم کورٹ کی سفارش پر قائم کمیٹی نے سندھ اور بلوچستان کے اکیس غیر معیاری نجی اور سرکاری لاء کالجز بند کرنے کی سفارش کر دی-چیف جسٹس نے پنجاب میں 600 سے زائد بچوں کے اغوا کی میڈیا رپورٹس کا نوٹس لے لیا-وزیراعلیٰ پنجاب کا پیپلز پارٹی کے رہنما جہانگیر بدر مرحوم کے بھائی کے انتقال پر اظہار تعزیت-وزیراعلیٰ پنجاب سے سندھ کے شیرازی برادران کی ملاقات شیرازی برادران کا عوام کی فلاح و بہبود اور ترقی کیلئے بے مثال اقدامات پر شہبازشریف کو خراج تحسین عوام کی خدمت کا ... مزید-فیس بک کے لوگو کا رنگ نیلا کیوں ہے،ایسا انکشاف جو آپ کے وہم و گمان میں بھی نہ ہو گا-لاہور، ملک کے وزیر اعظم عمران خان ہونگے،اعجازاحمد چوہدری نواز شریف اور زرداری ٹولہ نے اقتدار میں آ کر صرف عوام کا خون چونسا ہے اور اپنی جیبیں بھری ہے ملک کے تباہی کے ... مزید-پشاور، بس ریپڈٹرانزٹ منصوبے پر صوبائی کابینہ کو بریفننگ واحد منصوبہ ہے جو قلیل عرصے اور کم لاگت سے مکمل ہوگا،پرویز خٹک مجموعی لاگت میں بسوں کی خریداری، اراضی، کمرشل ... مزید-عوام کی عدم دلچسپی کے باعث سندھ گیمز کی افتتاحی تقریب نا کامی کا شکار ہوئی ہے ، سید صفدر حسین شاہ

GB News

پیپلز پارٹی کے قائدین منافقت پر اتر آئے ہیں،محمد باقر حیدر

Share Button

گلگت(علی محمدحیدر سے )اسلامی تحریک کے رہنما و سابق امیدوار جی بی ایل اے 4نگرمحمد باقر حیدر نے کہا ہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے قائدین منافقت پر اتر آئے ہیں اسلامی تحریک اگر پیپلز پارٹی کا ساتھ دے تو کوئی کالعدم جماعت نہیں ہوتی ہے اور اگر اسلامی تحریک کسی اور پارٹی کا ساتھ دے تو اسلامی تحریک کالعدم جماعت بن جاتی ہے پی پی کے اپنی کرتوتوں کی وجہ سے گلگت بلتستان کے عوام نے 2015کے انتخابات میں پی پی کو مسترد کردیا ہے رہی سہی کسر ہم 2020کے الیکشن میں پورا کریں گے اور گلگت بلتستان سے پی پی کا نام ونشان مٹا کر دم لیں گے۔انہوںنے کہا کہ اسلامی تحریک نے ہمیشہ اصولوں کی سیاست کی ہے اور جس جماعت نے بھی گلگت بلتستان کی تعمیر وترقی میں کردار ادا کیا ہے اسلامی تحریک نے ان سے ہمیشہ تعاون کیا ہے انہوںنے کہاکہ مسلم لیگ (ن) کی صوبائی حکومت بالخصوص وزیراعلیٰ حافظ حفیظ الرحمن نے گلگت بلتستان میں ترقیاتی منصوبوں کا جال بچھادیا ہے صرف ضلع نگر میں پانچ ارب روپے کے ترقیاتی منصوبوںپر کام ہورہاہے اس کے برعکس پی پی کے دور اقتدارمیں پورے گلگت بلتستان میں کہیں پر ایک روپے کا بھی کام نہیںہوا ہے انہوںنے کہا کہ ان ترقیاتی منصوبوں کی وجہ سے نگر کے غیور عوام نے وزیراعلیٰ حفیظ الرحمن کاشاندار استقبال کیاتو پی پی کے قائدین کو تکلیف شروع ہوئی ہے۔انہوںنے کہا کہ اسلامی تحریک اگرکالعدم جماعت تھی تو 2015کے الیکشن میں پی پی گلگت بلتستان کے رہنما بالخصوص امجد حسین ایڈووکیٹ اسلامی تحریک کے قائدین کی الیکشن میں حمایت حاصل کرنے کیلئے منت سماجت کیوں کی تھی اگر اسلامی تحریک کالعدم جماعت ہے تو گزشتہ ماہ پی پی گلگت بلتستان کے رہنما اس کالعدم جماعت کے قائدین کے پاس عدم اعتماد کی تحریک میں تعاون مانگنے کیلئے کیوں گئے تھے انہوںنے کہا کہ پی پی کے رہنمائوکں کی اس منافقت کی وجہ سے اسلامی تحریک کے مرکزی قائدین نے صاف صاف بتادیا کہ پی پی پہلے اسلامی تحریک کے قائدین سے معافی مانگے پھر بات چیت کرے محمد باقر حیدرنے کہاکہ اسلامی تحریک عدم اعتماد کی کسی بھی تحریک میں شامل نہیں ہے یہ صرف کسی ایک شخص کی نہیں بلکہ اسلامی تحریک کی مرکزی قیادت کافیصلہ ہے کہ وزیراعلیٰ کے خلاف کسی سازش کا حصہ بننے کی بجائے وزیراعلیٰ سے تعاون کیاجائے۔انہوںنے کہا کہ پورے ملک میں کرپشن کی وجہ سے پی پی کا نام و نشان مٹ چکا ہے گلگت بلتستان میں بھی پی پی کا وجود ایک دو حلقوں تک محدود ہے رہی سہی کسر گلگت بلتستان کے عوام 2020کے الیکشن میں پورا کریںگے اور پی پی کو دفن کر کے دم لیں گے۔انہوںنے ایک سوال کے جواب میں بتایاکہ فرقہ واریت میں مسلم لیگ ن نہیں بلکہ پی پی کے قائدین ملوث ہیں نگرحلقہ 4میں پی پی کے قائدین کی تقریروں کا ریکارڈ چیک کیا جائے پی پی کے رہنمائوںنے مسلسل اور مکمل فرقہ وارانہ تقریریں کی ہیں ان رہنمائوں کی تقریروں کو سن کر یوں محسوس ہوتا تھا کہ کوئی کالعدم فرقہ وارانہ تنظیم کے رہنما تقریر کررہے ہیں ان تقریروںکے بعد پی پی کے قائدین کے خلاف نیشنل ایکشن پلان کے تحت کارروائی ہونی چاہیے تھی اور ان رہنمائوں کا نام فورتھ شیڈول میں شامل ہونا چاہیے تھا ہم اب بھی وزیر اعلیٰ سے اپیل کرتے ہیں کہ فرقہ واریت پھیلانے میں ملوث پی پی گلگت بلتستان کے صدرامجد حسین ایڈووکیٹ اور دیگر رہنمائوں کے خلاف نیشنل ایکشن پلان کے تحت کارروائی کر کے ان کا نام فورتھ شیڈول میں شامل کیا جائے۔انہوںنے کہا کہ گلگت بلتستان کے عوام نے 2015کے الیکشن میں پی پی کو مسترد کردیا ہے اب پی پی علاقے میں فرقہ واریت کو ہوا دے کر فرقہ وارانہ بنیادوں پر الیکشن لڑنے کی سازش کررہی ہے ہم عوام اورعلاقے کے جید علما کے تعاون سے پی پی کے رہنمائوں کی اس سازش کو بھی ناکام بنادیںگے۔

Facebook Comments
Share Button