تازہ ترین

Marquee xml rss feed

حکومت اور تحریک لبیک پاکستان میں بیک ڈور رابطے تحریک لبیک کے 322 رہنماؤں اور کارکنان کو رہا کر دیا گیا-سپریم کورٹ کا علیمہ خان کو 29.4 ملین روپے جمع کروانے کا حکم-چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کا تھر کا دورہ چیف جسٹس کے دورے کے دوران کئی اہم انکشافات سامنے آ گئے-خواجہ سعد رفیق ریلوے خسارہ کیس کی سماعت کے لیے سپریم کورٹ میں پیشی سابق وزیر ریلوے کو نیب اور پولیس کی تحویل میں عدالت میں لایا گیا-سپریم کورٹ نے پاکپتن اراضی کیس میں جے آئی ٹی تشکیل دے دی تین رکنی جے آئی ٹی کے سربراہ خالد داد لک ہوں گے جب کہ تحقیقاتی ٹیم میں آئی ایس آئی اور آئی بی کا ایک ایک رکن بھی شامل ... مزید-لاہور میں پنجاب اسمبلی کی خالی نشست پی پی 168 پر ضمنی انتخاب‘نون لیگ اور تحریک انصاف میں مقابلہ پولنگ کا آغاز صبح 8 بجے سے 5 بجے تک جاری رہے گی-نواز شریف کے خلاف العزیزیہ ریفرنس کی سماعت‘فیصلہ محفوظ کیے جانے کا امکان نیب پراسیکیوٹر سردار مظفر عباسی جواب الجواب دے رہے ہیں‘حسن، حسین کی پیش دستاویزات کو انڈورس ... مزید-صدر مملکت عارف علوی کی عمرہ کی ادائیگی صدر مملکت کے لیے خانہ کعبہ کا دروازہ بھی کھولا گیا-گوگل پر احمق (Idiot) لکھیں صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی تصاویردیکھیں کمپنی نے کانگریس کی کمیٹی کے سامنے پیش ہوکر مبینہ الزام کو مسترد کردیا-آئندہ چوبیس گھنٹوں کے دوران ملک کے شمالی علاقوں میں موسم شدید سرد اور خشک رہے گا، محکمہ موسمیات

GB News

پاکستان نے اپنی سرزمین سے تمام دہشت گردوں کی منظم موجودگی کا خاتمہ کردیا ، جنرل قمر جاوید

Share Button

راولپنڈی (ایجنسیاں+مانیٹرنگ ڈیسک) پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ آپریشن ردالفساد صرف آپریشن نہیں ایک نظریئے کا نام ہے، پاکستان نے اپنی سرزمین سے تمام دہشت گردوں کی منظم موجودگی کا خاتمہ کردیا ہے۔ملٹری اکیڈمی کاکول میں پی ایم اے کے 137 ویں لانگ کورس، آٹھویں مجاہد کورس اور 56 ویں انٹی گریٹڈ کورس کی پاسنگ آؤٹ پریڈ سے خطاب کرتے ہوئے آرمی چیف نے کہا کہ پاکستان نے دشمن کی ہر چال کو شکست دی اور انشائ اللہ آئندہ بھی شکست دیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ پاس ہونے والے کمیشنڈ ایسے وقت میں پاکستان آرمی کا حصہ بن رہے ہیں جب ملک کو روایتی اور غیر روایتی دونوں محاذوں پر چیلنجز درپیش ہیں۔انہوں نے کہا کہ موجودہ دور میں کمانڈ اور قیادت کا نظریہ سب سے زیادہ توقعات کا مطالبہ کرتا ہے کیونکہ آپریشنز کی گرمی میں آپ کے ماتحت لوگ آپ کی جانب دیکھ رہے ہوتے ہیں جہاں آپ کو کمانڈر سے زیادہ ایک لیڈر کا مظاہرہ کرنا پڑتا ہے۔سربراہ پاک فوج نے کہا کہ ہمارا دشمن جانتا ہے کہ وہ ہمیں جنگی محاذ پر شکست نہیں دے سکتا اس لیے وہ ہمارے خلاف ‘ہائبرڈ جنگ’ کر رہا ہے، دشمن ہمیں اندر سے کمزرو کرنے کی کوشش کر رہا ہے انہوں نے کہا کہ ہم نے دشمنوں کی ہر چال کو شکست دی اور انشاء اللہ آئندہ بھی شکست دیں گے کیونکہ ہمیں قوم کی بھرپور اور مکمل حمایت حاصل ہے۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان ایک امن پسند ملک ہے اور تمام ہمسایہ ممالک کے ساتھ امن چاہتا ہے لیکن ہماری امن کی خواہش کو ہماری کمزوری نہ سمجھا جائے۔جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ پاکستان نے اپنی سرزمین سے منظم دہشت گردوں کا خاتمہ کر دیا ہے اور بچے ہوئے دہشت گردوں کا آپریشن ردالفساد کے ذریعے پیچھا کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ردالفساد صرف آپریشن نہیں بلکہ ایک نظریے کا نام ہے اور آخری دہشت گرد کے خاتمے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ ہماری فوج ہر قسم کے خطرات کا سامنا کرنے کی بھرپور صلاحیت رکھتی ہے اور اپنی سرزمین کسی دوسرے ملک کے خلاف استعمال نہیں ہونے دیں گے۔پاک فوج کے سربراہ نے کہا کہ پاکستان کشمیریوں کے حق خود ارادیت کی مکمل سیاسی و اخلاقی حمایت کرتا ہے اور مقبوضہ کشمیر کے امن پسند شہریوں کو ریاستی دہشت گردی کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ بین الاقوامی برادری کے لیے بہترین وقت ہے کہ وہ جاگے اور مقبوضہ کشمیرکے عوام کو امن فراہم کرنے کے لیے اپنا کردار ادا کرے۔ان کا کہنا تھا کہ ہمار اس بات پر مکمل یقین ہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان کشمیر سمیت تمام تنازع بامقصد مذاکرات کے ذریعے ہی حل کیے جا سکتے ہیں، یہ مذاکرات کسی ایک فریق کے حق میں نہیں بلکہ پورے خطے میں امن کے لیے اہم ہیں۔جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ بھارت کے ساتھ تمام معاملات پر برابری کی سطح پر بامقصد مذاکرات کے لیے تیار ہیں۔افغانستان کے حوالے سے بات کرتے ہوئے سربراہ پاک فوج کا کہنا تھا کہ ہم ہر فورم پر افغان امن عمل میں ثالثی کا کردار ادا کرنے کے لیے تیار ہیں اور ہم اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ افغانستان میں امن کے بغیر پاکستان میں امن قائم نہیں ہو سکتا اس لیے ہمیں امن کے حصول کے لیے اپنے افغان بھائیوں کے ساتھ مل کر کام کرنا ہے۔جنرل قمر جاوید باجوہ نے مزید کہا کہ پاکستان نے شدت پسندی اور دہشت گردی کے خاتمے کے لیے اپنے حصے کا کام کر دیا ہے اور ہماری کوششوں کے ثمرات بھی سامنے آنا شروع ہو گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہم پاکستان کو محفوظ، خوشحال اور ترقی یافتہ بنانے کے لیے ان کوششوں کو جاری رکھنے کے لیے پرعزم ہیں۔

Facebook Comments
Share Button