تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی کی بھارتی ہم منصب سے ملاقات 27 ستمبرکونیویارک میں ہوگی-حضرت امام حسین ؓ اور ان کے خاندان کی قربانی ہمیں باطل قوتوں کے سامنے ڈٹ جانے کا درس دیتی ہے ،ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی-امام حسین کی قربانیوں کو یاد کرنے کے ساتھ پیغام پر بھی عمل کیا جائے ،سید منورحسن امام حسین ؓ سے عقیدت ومحبت کا تقاضہ ہے کہ اقتدار اور اختیار کے غلط استعمال کو روکا جائے ... مزید-وزیراعظم عمران خان کو 4 نئے ہیلی کاپٹر دینے کی پیش کش معروف کاروباری شخصیت نے وزیراعظم ہاوس کے 4 پرانے ہیلی کاپٹرز کے بدلے نئے ہیلی کاپٹر دینے کی پیش کش کردی-چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کا لواری ٹنل بند ہونے کا نوٹس-بھارت نے وزیراعظم عمران خان کی ملاقات کی تجویز قبول کرلی 27 ستمبر کو جنرل اسمبلی اجلاس میں پاک بھارت وزرائے خارجہ شاہ محمود قریشی اور سشما سوراج کے درمیان ملاقات ہوگی-کے ڈی اے کو اپنے پاؤں پرکھڑا کرنا ہم سب کی ذمہ داری ہے۔ وزیر بلدیات سندھ ْماسٹر پلان ڈیپارٹمنٹ کا فیصلہ اور دیگرمعاملات کو غوروخوص کے بعد حل کیا جائے گا۔ سعید غنی-غربت،ناانصافی، جہالت، محرومی، جارحیت اور توسیع پسندانہ عزائم امن کے قیام میں بڑی رکاوٹیں ہیں، دنیا میں امن کے قیام کی کوششوں میں پاکستان ہراول دستے کا کردار ادا کررہا ... مزید-واقعہ کربلا صبر و تحمل، رواداری،ایثار اورقربانی کا درس دیتا ہے،حق و باطل کا یہ معرکہ مسلمانوں کو ظلم اور بربریت کیخلاف جہاد کرنے کا درس دیتاہے،وزیراعلیٰ سردار عثمان ... مزید-وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سے مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے اراکین اسمبلی اور تحریک انصاف کے عہدیداروں کی ملاقات

GB News

مریضوں کے لواحقین کا چلاس ہسپتال کے ڈاکٹروں کیخلاف سخت احتجاج ک

Share Button

چلاس(بیورورپورٹ)ڈی ایچ کیو ہسپتال چلاس کے ڈاکٹروں کی طرف سے او پی ڈیز بند کرکے بلاجواز ہڑتال کرنے کے خلاف دیامر کے مختلف علاقوں سے اپنے مریضوں کے ساتھ آنے والے لوگوں نے چلاس ہسپتال کے ڈاکٹروں کے خلاف شاہراہ قائد اعظم بلاک کرکے سخت احتجاج کیا ۔مظاہرین نے چلاس بازار ،چلاس ہسپتال اور کے کے ایچ کو جانے والی لنک سڑکوں پر پتھر ڈال کر سڑک کو ہر طرف سے ہر قسم کی ٹریفک کیلئے بند کر دیا ،اور چلاس ہسپتال کے ڈاکٹروں کی من مانی کے خلاف شدید نعرے بازی کی ۔مظاہرین نے چلاس ہسپتال کے نااہل ڈاکٹر مردہ باد کے فلگ شگاف نعرے بھی لگائے اور محکمہ صحت کے خلاف برس پڑے۔مظاہرین نے ایک گھنٹے تک شاہراہ قائد اعظم کو بلاک رکھا اور شدید غم و غصے کا اظہار بھی کیا گیا۔مظاہرین نے کہا کہ گلگت سٹی ہسپتال کے ڈاکٹر کے ساتھ پولیس کی بدتمیزی پر چلاس ہسپتال کے ڈاکٹروں کا احتجاج بلاجواز ہے ۔چلاس ہسپتال کے ڈاکٹر بے لگام ہوچکے ہیں اور گلگت ہسپتال کے ایک ڈاکٹر کے ساتھ پولیس کی بدتمیزی کی سزا چلاس ہسپتال کے ڈاکٹر ہمارے مریضوں کو دے رہے ہیں ۔انہوںنے کہا کہ مریض لیکر صبح ٧ بجے چلاس ہسپتال پہنچے ہیں کوئی بھی ڈاکٹر مریضوں کو چیک اپ کرنے کیلئے تیار نہیں ہے ،چلاس ہسپتال کے ڈاکٹر مسیحائی کی بجائے ہمارے مریضوں کی قصائی کررہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ چلاس ہسپتال میں ظلم کی تاریخ رقم ہورہی ہے ،حکومتی رٹ کمزور ہوچکی ہے ،یہاں کے ڈاکٹروں نے حکومت اور انتظامیہ کو یرغمال بنایا ہوا ہے ،کوئی قانون نہیں ہے یہاں کے ڈاکٹر اپنی مرضی سے ڈیوٹی پر آتے ہیں اور آپنی مرضی سے چھٹی لیکر گھوم رہے ہیں ،کوئی پوچھنے والا نہیں ہر طرف اندھیر نگری چوپٹ راج ہے ۔انہوں نے کہا کہ ڈائریکٹرہیلتھ اور ایم ایس چلاس ہسپتال میں موجود نہیں ہیں اور ڈاکٹر اپنی مرضی کے مالک بنے پھرتے ہیں اور ہسپتال آنے کے بجائے کلنکوں کو سجائے بیٹھے ہیں ۔احتجاجی مظاہرین نے مزید کہا کہ خدا را وزیر علی ا ور چیف سیکرٹری ان ڈاکٹروں کا قبلہ درست کریں ،ان ڈاکٹروں نے گلگت بلتستان میں اپنی الگ حکومت قائم کی ہوئی ہے اور حکومتی رٹ کو چیلنج کررہے ہیں ،آئے روز غیر ضروری احتجاج کرکے عوام اور مریضوں کو رولا رہے ہیں یہ کہاں کا قانون اور کہاں کا انصاف ہے ۔ڈاکٹروں کے خلاف احتجاج کرنے والے مریضوں کے لواحقین اور عوام الناس چلاس سے مذکرات کرتے ہوئے ایس پی دیامر رائے اجمل نے کہا کہ مظاہرین کے مطالبات پر غور کریں گے اور چلاس ہسپتال کے ڈاکٹروں کو ہسپتال لانے کیلئے بھر پور کوشیش کی جائیگی ۔ایس پی دیامر کی یقین دہانی پر مظاہرین پرامن طریقے سے منتشر ہوگئے۔

Facebook Comments
Share Button