تازہ ترین

Marquee xml rss feed

خیبرپختونخواہ میں ہزاروں ملازمتیں ختم کرنے کا اعلان خیبرپختونخوا حکومت نے 4 ارب روپے کی بچت کے لیے صوبے میں 6 ہزار 500 ملازمتیں ختم کرنے کا فیصلہ کیاکرلیا-حکومت ملک میں کاروبار ی لاگت کم کرنے اور کاروباری طبقے کو ہر ممکنہ سہولت فراہم کر کے کاروبار کو آسان بنانے کے حوالے سے ملکی رینکنگ بہتر کرنے کیلئے پر عزم ہے، حکومت کاروبار ... مزید-اسلام آباد ،صرف آئی ایم ایف پر انحصار کرنے کی بجائے متبادل حل پر بھی کا م کر رہے ہیں،اسدعمر وال سٹریٹ جنرل کے انکشافات کی تحقیقات ہونی چاہیئے، اچھے فیصلے کروں یا برے ... مزید-ترجمان وزیر اعلیٰ پنجاب کا وزیر اعلی پنجاب سیکرٹریٹ کا بجٹ بڑھانے کی ترددید پچھلی حکومت کی جانب سے اس مد میں خرچ کئیے جانے والی رقم 802 ملین تھی جبکہ ہم نے جو رقم اس مد میں ... مزید-پاک پتن دربار اراضی قبضہ کیس،نواز شریف سمیت دیگر فریقین کو دوبارہ نوٹس جاری، آئندہ سماعت پرعدالت کو اراضی کا مکمل ریکارڈ پیش کیا جائے ،سپریم کورٹ-سابقہ حکومتوں نے جس انداز میں سرکاری وسائل اور عوام کے پیسوں کا استعمال کیا اور ملک کو جس دلدل میں دھکیلا ہے اس کی مثال نہیں ملتی، آج ملک تیس ٹریلین کا مقروض ہو چکا ہے۔ ... مزید-چترال میں کیلاش قبائل کی حدود میں تجاوزات سے متعلق ازخود نوٹس کیس کی سماعت،کیلاش قبائل کے لوگوں کی زمینوں پر قبضہ نہ کیا جائے، انہیں مکمل آزادی اور حقوق ملنے چاہئیں،کیلاش ... مزید-سپریم کورٹ نے لاہورکے سول اور کنٹونمنٹ علاقوں میں لگائے گئے تمام بڑے بل بورڈز اور ہورڈنگز ڈیڑھ ماہ کے اندر ہٹانے کا حکم جاری کر دیا، پبلک پراپرٹی پر کسی کوبھی بورڈ لگانے ... مزید-کے الیکٹرک بکا ہی نہیں تھا اس لئے کسی ڈیل کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا،خواجہ آصف-سپریم کورٹ کے فیصلے سے سعدیہ عباسی اور ہارون اختر تاحیات نا اہل نہیں ہوئے :آئینی ماہر بیرسٹر علی ظفر

GB News

اسلام آباد میں کرکٹ سٹیڈیم بنانا چاہتے ہیں:نجم سیٹھی، جگہ لینے میں مدد کریں گے،چیف جسٹس

Share Button

اسلام آباد:چیف جسٹس پاکستان ثاقب نثار نے اسلام آباد میں کرکٹ سٹیڈیم کی تعمیر کے لئے چیئرمین پی سی بی نجم سیٹھی کو مدد کرنے کی پیشکش کردی ۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں شکر پڑیاں کرکٹ سٹیڈیم کی تعمیرسے متعلق کیس کی سماعت ہوئی تو اس موقع پر چیئرمین پی سی بی بھی عدالتی کارروائی کا حصہ بنے جبکہ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ سپورٹس کی حوصلہ شکنی نہیں ہونی چاہیے بلکہ حوصلہ افزائی کرنی چاہیے ،سپورٹس نہ ہو تو ہم ” جھلے “ ہوجائیں گے، ہم پی سی بی کواسلام آباد میں کرکٹ سٹیڈیم کیلئے جگہ لینے میں مدد کریں گے

دوران سماعت پی سی بی کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ سی ڈی اے کو 50 کروڑ روپے دیے ہیں۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ ایم او یو کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے، پی سی بی نے جو درخت کاٹے وہ لگانے پڑیں گے، قانون کی خلاف ورزی کر کے سٹیڈیم کی تعمیر نہیں ہونے دیں گے۔جسٹس ثاقب نثار نے اپنے ریمارکس میں مزید کہا کہ دیکھنا ہے کہ شکرپڑیاں نیشنل پارک کا حصہ ہے یا نہیں؟ اگرحصہ ہے تو وہاں سٹیڈیم کی تعمیر نہیں ہوسکتی۔

چیئرمین سی ڈی اے نے کہا کہ پی سی بی اور سی ڈی اے کے مابین ایم او یو پر عمل نہیں ہوسکا،چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ ایم او یو کی کوئی قانونی حیثیت نہیں۔ پی سی بی کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ سی ڈی اے کو 50 کروڑ روپے دیے ہیں۔

نجم سیٹھی نے عدالت سے استدعا کی کہ سی ڈی اے ہمیں سٹیڈیم کیلئے متبادل جگہ دے دے جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ سی ڈی اے کو متبادل جگہ کیلئے کہہ دیتے ہیں،ہمیں آئے روز اس طرح کے مسائل کا سامنا ہے کلر کہار میں کئی سیمنٹ فیکٹریاں لگانے کی اجازت دے دی گئی، جس کے بعد فیکٹریوں نے اربوں گیلن زیر زمین پانی بے دریغ استعمال کیا۔

ہم آپ کواسلام آباد میں کرکٹ سٹیڈیم کیلئے جگہ لینے میں مدد کریں گے اور نیشنل پارک میں متاثرہ سائٹ کو اس کی اصل شکل میں بحال کرائیں گے۔
چیئرمین پی سی بی نے عدالت کو بتایا کہ پی سی بی کو پارک میں سٹیڈیم تعمیر کرنے میں دلچسپی نہیں ہے ، نیشنل پارک میں کرکٹسٹیڈیم کی تعمیر نہیں ہونی چاہیے، جب چیئرمین پی سی بی بنا توکہاکہ اس سائٹ پرسٹیڈیم تعمیرنہیں ہونا چاہیے،سی ڈی اے کی ذمے داری تھی کہ وہ ہمیں نیشنل پارک میں جگہ ہی نہ دیتے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ سپورٹس کی حوصلہ شکنی نہیں ہونی چاہیے بلکہ حوصلہ افزائی کرنی چاہیے ۔ بعدازاں کیس کی سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین پی سی بی نے کہا کہ اسلام آباد میں سٹیڈیم تعمیر کرنا چاہتے ہیں جبکہ راولپنڈی کا سٹیڈیم بھی ٹھیک کریں گے،ہم کرکٹ کی بحالی کے لیے کوشاں ہیں، ہرضلع میں کرکٹ سٹیڈیم ہوناچاہیے، اسلام آباد میں بھی کرکٹ سٹیڈیمہونا چاہیے کیونکہ یہاں بھی ضرورت ہے۔

نہوں نے کہا پی سی بی نے سوچا کہ اسلام آباد میں کرکٹ سٹیڈیم تعمیر کریں لیکن عدالت میں درخواست دائرکردی گئی، ہم یہ نہیں چاہتے کہ ماحولیات پراثر پڑے، ہم عدالت اور انوائرمینٹل ایجنسی کے ساتھ ہیں اور ہمیں کہیں اورزمین مل گئی تو4،3سال میںسٹیڈیم بن جائے گا۔
خیال رہے کہ چیئرمین پی سی بی نجم سیٹھی شکر پڑیاں میں کرکٹ سٹیڈیم کی تعمیر سے متعلق کیس کی سماعت کے سلسلے میں سپریم کورٹ میں پیش ہوئے تھے۔

Facebook Comments
Share Button