تازہ ترین

Marquee xml rss feed

حکومت اور تحریک لبیک پاکستان میں بیک ڈور رابطے تحریک لبیک کے 322 رہنماؤں اور کارکنان کو رہا کر دیا گیا-سپریم کورٹ کا علیمہ خان کو 29.4 ملین روپے جمع کروانے کا حکم-چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کا تھر کا دورہ چیف جسٹس کے دورے کے دوران کئی اہم انکشافات سامنے آ گئے-خواجہ سعد رفیق ریلوے خسارہ کیس کی سماعت کے لیے سپریم کورٹ میں پیشی سابق وزیر ریلوے کو نیب اور پولیس کی تحویل میں عدالت میں لایا گیا-سپریم کورٹ نے پاکپتن اراضی کیس میں جے آئی ٹی تشکیل دے دی تین رکنی جے آئی ٹی کے سربراہ خالد داد لک ہوں گے جب کہ تحقیقاتی ٹیم میں آئی ایس آئی اور آئی بی کا ایک ایک رکن بھی شامل ... مزید-لاہور میں پنجاب اسمبلی کی خالی نشست پی پی 168 پر ضمنی انتخاب‘نون لیگ اور تحریک انصاف میں مقابلہ پولنگ کا آغاز صبح 8 بجے سے 5 بجے تک جاری رہے گی-نواز شریف کے خلاف العزیزیہ ریفرنس کی سماعت‘فیصلہ محفوظ کیے جانے کا امکان نیب پراسیکیوٹر سردار مظفر عباسی جواب الجواب دے رہے ہیں‘حسن، حسین کی پیش دستاویزات کو انڈورس ... مزید-صدر مملکت عارف علوی کی عمرہ کی ادائیگی صدر مملکت کے لیے خانہ کعبہ کا دروازہ بھی کھولا گیا-گوگل پر احمق (Idiot) لکھیں صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی تصاویردیکھیں کمپنی نے کانگریس کی کمیٹی کے سامنے پیش ہوکر مبینہ الزام کو مسترد کردیا-آئندہ چوبیس گھنٹوں کے دوران ملک کے شمالی علاقوں میں موسم شدید سرد اور خشک رہے گا، محکمہ موسمیات

GB News

روہینگیا مسلمانوں کی ملک بدری اور آسٹریا میںمساجد کا بند کیا جانا ایک ہی ذہنیت کے دو نام ہیں،ترک صدر

Share Button

ترک صدر رجب طیب اردگان نے شب قدر کی مناسبت سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ روہینگیا مسلمانوں کی ملک بدری اور آسٹریا کی مساجد کا بند کیا جانا ایک ہی ذہنیت کے دو نام ہیں،مساجد کو بند کئے جانے اور مسلمانوں کو ملک بدر کئے جانے سے صلیب اور ہلال کی جنگ شروع ہو جائے گی،آسٹریا میں موجود 2 لاکھ 50 ہزار مسلمان بھائیوں پر ظلم کی ہرگز اجازت نہیں دی جائے گی۔غیرع ملکی میڈیا کے مطابق روہینگیا مسلمانوں کی ملک بدری اور آسٹریا کی مساجد کا بند کبا جانا ایک ہی ذہنیت کے دو نام ہیں۔ترکی کے صدر رجب طیب ایردوان نے مساجد کو بند کرنے اور دینی شخصیات کو ملک سے نکالنے پر ایک دفعہ پھر آسٹریا کے خلاف سخت ردعمل کا اظہار کیا ہے۔صدر ایردوان نے استنبول کے علاقے ایسین لر میں شب قدر کی مناسبت سے منعقدہ دعا پروگرام میں شرکت کی۔تقریب سے خطاب میں انہوں نے آسٹریا کے وزیر اعظم سباسٹئین کروز کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آسٹریا میں مساجد کو بند کئے جانے اور مسلمانوں کو ملک بدر کئے جانے سے صلیب اور ہلال کی جنگ شروع ہو جائے گی اور اس کے ذمہ دار آپ ہوں گے۔اپنے پیغام کے صرف آسٹریا کے لئے ہی نہیں بلکہ پورے یورپ کے لئے ہونے پر زور دیتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ “میں یہ بات کہتے ہوئے صرف آسٹریا کو نہیں بلکہ پورے یورپ کو مخاطب کر رہا ہوں اور مغرب سے کہتا ہوں کہ اس شخص کو کہیں کہ اپنے آپ میں آئے ۔ اگر آپ اس شخص کو درست رویہ اختیار کرنے کی ترغیب نہیں دیتے تو یہ مسئلہ ہلال اور صلیب کی جنگ کی طرف چلا جائے گا”۔صدر ایردوان نے کہا کہ ” ہمارے بھی اپنے مطابق اقدامات موجود ہیں ہم آسٹریا میں موجود 2 لاکھ 50 ہزار مسلمان بھائیوں پر ظلم کی ہرگز اجازت نہیں دیں گے۔ اس معاملے میں جو ضروری ہوا کیا جائے گا”۔صدر ایردوان نے کہا کہ” ذہنیت کے اعتبار سے رخائن کے مسلمانوں کو ان کے گھر بار سے اور ملک سے نکالنے میں اور یورپ کے مرکز میں مسلمانوں کی مساجد کو بند کرنے کے درمیان کوئی فرق نہیں ہے”۔دعا پروگرام میں ایک لاکھ سے زائد افراد نے شرکت کی۔

Facebook Comments
Share Button