تازہ ترین

Marquee xml rss feed

پی ٹی اے نے پرانے موبائلوں کی خرید و فروخت پر ٹیکس لگا دیا پاکستان ٹیلی کمیونیشن اتھارٹی نے تاجروں کو پابند کیا ہے کہ پرانے موبائل بیچنے سے پہلے انہیں اس پر ٹیکس ادا کرنا ... مزید-آئی جی سندھ نے شہری کے پولیس کیساتھ نامناسب رویے کا نوٹس لے لیا-نواز شریف کی ضمانت پر اظہار تشکر کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع کروا دی گئی-عدالتی حکم پر من و عن عمل درآمد کیا جائے گا، ڈاکٹر شہباز گل مریم نواز کی درخواست پر کارڈیالوجی سینٹر جیل کے اندر بنایا گیا تھا ۔ کارڈیالوجی سینٹر میں 21 ڈاکٹرزاور 21 ٹیکنیشن ... مزید-نواز شریف کو ان کی ضمانت پر رہائی کے عدالتی حکم کی اطلاع جیل میں دی گئی-شکر ہے عدالت نے نواز شریف کو باہر جانے کی اجازت نہیں دی، وزیر اعظم لندن میں سیل لگی ہوئی تھی اور نواز شریف وہاں شاپنگ کرنے کے لیے مچل رہے تھے، عمران خان-تاریخی شاہی قلعہ میں واقعہ شیش محل کی سیاحت کے لئے سیاحوں پر 100 روپے مالیت کا ٹکٹ لاگو کر دیا گیا-لاہورہائی کورٹ نے اپوزیشن لیڈر شہبازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دے دیا-اللہ تعالیٰ کا شکر ہے نواز شریف کو رہائی ملی ،عدالتی فیصلے کو سراہتے ہیں،شہباز شریف-وفاقی جامعہ اردو کراچی میں طلباء گروپوں کے مابین تصادم، کھڑکیاں ،دروازے توڑ دیے گئے انتظامیہ جھگڑا رکوانے میں ناکام ، پولیس اور رینجرز طلب کر لی گئی

GB News

ڈاکٹر بشارت قتل کیس میں تین ملزمان کو سزائے موت

Share Button

ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج گلگت راجہ منہاج علی نے جرم ثابت ہونے پر ڈاکٹر بشارت حسین قتل مقدمے کے ملزمان ،شکور، مقبول اور تنویر حسین کو سزاء موت سنا دی ۔تفصیلات کے مطابق ملزمان نے 15 جون 2016 کو ڈاکٹر بشارت حسین کے گھر پر حملہ کرکے گھر یلو لڑائی کی وجہ سے ڈاکٹر بشارت حسین کو پتھر مار کر قتل کرکے موقع سے فرار ہوئے تھے مقتول کے بھائی نو شیروان کی درخواست پر تھانہ دنیور میں پولیس نے مقدمہ درج کر کے ملزمان کو گرفتار کرکے تفتیش مکمل کرکے چالان عدالت میں پیش کرادیا تھا ۔عدالت نے تمام گواہوں کے بیانات قلمبند کرکے دونوں فریقین کے وکلاء کے جرح میڈیکل رپورٹ کو مد نظر رکھتے ہوئے جرم ثابت ہونے پر ملزم شکور، مقبول اور تنویر حسین کو سزاء موت دیدی ۔ ایک اور شخص کو زخمی کرنے کے الزام ثابت ہونے پر ملزمان پر 10 ،10 ہزار روپے جرمانے بھی عائد کردی۔ مقتول کی جانب سے ایڈووکیٹ شہباز علی حراموشی اور ایڈووکیٹ منیر جبکہ ملزمان کی جانب سے ڈسٹرکٹ پبلک پراسکوٹر نے عدالت میں دلائل دئیے۔

Facebook Comments
Share Button