تازہ ترین

Marquee xml rss feed

حکومت اور تحریک لبیک پاکستان میں بیک ڈور رابطے تحریک لبیک کے 322 رہنماؤں اور کارکنان کو رہا کر دیا گیا-سپریم کورٹ کا علیمہ خان کو 29.4 ملین روپے جمع کروانے کا حکم-چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کا تھر کا دورہ چیف جسٹس کے دورے کے دوران کئی اہم انکشافات سامنے آ گئے-خواجہ سعد رفیق ریلوے خسارہ کیس کی سماعت کے لیے سپریم کورٹ میں پیشی سابق وزیر ریلوے کو نیب اور پولیس کی تحویل میں عدالت میں لایا گیا-سپریم کورٹ نے پاکپتن اراضی کیس میں جے آئی ٹی تشکیل دے دی تین رکنی جے آئی ٹی کے سربراہ خالد داد لک ہوں گے جب کہ تحقیقاتی ٹیم میں آئی ایس آئی اور آئی بی کا ایک ایک رکن بھی شامل ... مزید-لاہور میں پنجاب اسمبلی کی خالی نشست پی پی 168 پر ضمنی انتخاب‘نون لیگ اور تحریک انصاف میں مقابلہ پولنگ کا آغاز صبح 8 بجے سے 5 بجے تک جاری رہے گی-نواز شریف کے خلاف العزیزیہ ریفرنس کی سماعت‘فیصلہ محفوظ کیے جانے کا امکان نیب پراسیکیوٹر سردار مظفر عباسی جواب الجواب دے رہے ہیں‘حسن، حسین کی پیش دستاویزات کو انڈورس ... مزید-صدر مملکت عارف علوی کی عمرہ کی ادائیگی صدر مملکت کے لیے خانہ کعبہ کا دروازہ بھی کھولا گیا-گوگل پر احمق (Idiot) لکھیں صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی تصاویردیکھیں کمپنی نے کانگریس کی کمیٹی کے سامنے پیش ہوکر مبینہ الزام کو مسترد کردیا-آئندہ چوبیس گھنٹوں کے دوران ملک کے شمالی علاقوں میں موسم شدید سرد اور خشک رہے گا، محکمہ موسمیات

GB News

ادبی میلے کے نام پر دو کروڑ روپے کی کرپشن ہوئی، انجمن تاجران

Share Button

انجمن تاجران کے صدر غلام حسین اطہر نے کہا ہے کہ ادبی میلے کے نام پر دو دو کروڑ روپے ہڑپ کیے گئے لیکن کمشنر بلتستان خپلو کے ہسپتال میں ایک گائنالوجسٹ تعینات نہیں کر سکے ہم ادبی میلے کے نام پر ہونے والی سنگین کرپشن کی مذمت کرتے ہیں اور خپلو ہسپتال سمیت تمام ہسپتالوں میں ڈاکٹروں کی کمی کو پورا کرنے کا مطالبہ کرتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے یادگار چوک پر احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ بلتستان مسائل کی دلدل میں پھنسا ہوا ہے مسائل حل کرنے کے بجائے چیف سیکرٹری عوام کو دھمکیاں دے رہے ہیں اور ان کے ساتھ طوفان بدتمیزی پر اتر آئے ہیں سکردو گزشتہ پانچ ماہ سے اندھیرے میں ڈوبا ہوا ہے لیکن چیف سیکرٹری کمشنر سمیت کسی کو کوئی احساس نہیں ہے بجلی گھروں کی مرمت کے نام پر گھپلوں کی شکایات بھی سامنے آ رہی ہیں چیف سیکرٹری عوام کے نوکر ہیں انہیں نوکر کے طور پر کام کرنا ہو گا، ہمارے آبائو اجداد نے ڈوگروں کو بھگایا ہے بابر حیات تارڑ کی کیا حیثیت ہے؟ سابق چیف سیکرٹری ڈاکٹر کاظم نیاز بڑے قابل ، دیانتدار افسر تھے انہیں ہٹانے کی وجہ سمجھ نہیں آ رہی ہے ، ہماری عادت ہے کہ ہم اچھے کو اچھا برے کو برا کہتے ہیں سابق چیف سیکرٹری کو محض کرپشن کرنے کیلئے ہٹایا گیا ہے ہم انہیں ہٹانے کی بھی مذمت کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بلتستان تہذیب و تمدن آداب کے لحاظ سے اپنی مثال آپ ہے یہاں کے لوگ بڑے مہمان نواز ہیں مگر چیف سیکرٹری نے یہاں کے لوگوں کی شرافت اور تہذیب سے غلط فائدہ اٹھانے کی کوشش کی ہے بتایا جائے کہ خپلو میں گائنا لوجسٹ کا مطالبہ کرنے والے شخص نے کونسی بدتمیزی کی تھی؟ ہم امن پسند اور شریف النفس لوگ ہیں ہماری امن پسندی اور شرافت سے غلط فائدہ نہ اٹھایا جائے۔

Facebook Comments
Share Button