تازہ ترین

Marquee xml rss feed

گاڑیوں اور بھینسوں کے بعد 11کھلاڑی بھی نیلام کیے جائیں کھلاڑی نیلام کرنے سے تین ہزار ارب GB ڈیٹا اور 20 ہزار میگا واٹ سالانہ بجلی کی بچت ہو گی جو قوم کرکٹ میچ دیکھنے میں خرچ ... مزید-پنجاب کو آ پریٹو بینک اور سوسائٹی کے ریکارڈ روم میں آگ لگائے جانے کا انکشاف آگ شارٹ سرکٹ سے نہیں بلکہ پٹرولیم سے لگائی گئی تھی،جس وقت آ گ لگی اس وقت چوکیدار بھی موجود نہیں ... مزید-نواز شریف روزانہ بیگم کلثوم نواز کی قبر پر کچھ وقت گزارتے ہیں نواز شریف کو پچھتاوا ہے کہ وہ آخری وقت میں کلثوم نواز کے ساتھ نہیں تھے-پاکستان چین کے تعاون سے گوادر پورٹ کو دنیا کی جدید ترین بندرگاہ بنا کر سمندری راستے سے عالمی تجارت کو فروغ دینے کیلئے بھرپور اقدامات کر رہا ہے وفاقی وزیر منصوبہ بندی، ... مزید-امریکی سرمایہ کاروں کو پاکستان کے دورے کی دعوت، ویزے آسان بنانے کی کوشش جاری ہے امریکا میں پاکستان کے سفیر علی جہانگیر صدیقی کی ایف پی سی سی آئی کے صدر غضنفر بلور سے ... مزید-سابق صدر پرویز مشرف کی دبئی میں 4.5 ملین سے زائد کی جائیداد سپریم کورٹ میں جمع کروائے گئے بیان حلفی میں جائیدادوں کی تفصیل سامنے آ گئی-وزیراعظم عمران خان کا آج قوم سے خطاب متوقع وزیراعظم عمران خان قوم سے خطاب میں اہم اعلان کریں گے-کیپٹن (ر) صفدر کو بیرون ملک بھیجنے کی تیاریاں کیپٹن (ر) صفدر کو علاج کے لیے بیرون ملک منتقل کیا جا سکتا ہے-ضمنی انتخابات میں تحریک انصاف کی جیت یقینی ہے،لیاقت خان خٹک-چترال میں چینی انجینئرزکی گاڑی کوحادثہ ، 6 افراد زخمی

GB News

چیف سیکرٹری کو اپنے عہدے کا خیال رکھتے ہوئے بات کرنی چاہیے، وزیراعلیٰ نوٹس لیں، میجر امین

Share Button

گلگت (ثاقب عمر) پارلیمانی سیکرٹری برائے واٹر اینڈ پاور میجر(ر) محمد امین نے کہا ہے کہ چیف سیکرٹری حاکم بننے کی کوشش نہ کریں ،عوامی مینڈیٹ ہمارے پاس ہے پالیسی ہم نے دینا ہے ،چیف سیکرٹری نے متنازعہ بیان دے کر گلگت بلتستان کے عوام کے جذبات کو مجروح کیا ہے جس پر انہیں معافی مانگنی چاہیے ،انہوں نے کہا کہ چیف سیکرٹری نے معافی نہیں مانگی تو بوریا بستر گول کرکے اسلام آباد کا راستہ دکھایا جائے گا،،انہوں نے کہا کہ گائنی کالوجسٹ کے معاملے پر ٹیکس کی بات کرنا کونسی عقل والی بات ہے ۔ہم نے چوڑیاں نہیں پہنیں سیاچن سے کوہستان تک عوام ایک ہیں لوگ اب باشعور ہوچکے ہیں ،یہ پرانا دور نہیں ہے کہ جو آئے منہ اٹھا کے بات کرنا شروع کردے، انہوں نے کہا کہ جس طرح عوامی جذبات کو مجروح کیاگیا ہے اس پر معافی نہیں مانگی گئی تو عوام کو سڑکوں پر لایا جائے گا،چیف سیکرٹری ایک ملازم ہیں انہیں اپنے عہدے کا خیال رکھتے ہوئے کام کرنا چاہیے اس طرح کے ریمارکس انتہائی شرمناک ہے جس کہ ہم مذمت کرتے ہیں اور وزیر اعلیٰ سے اپیل کرتے ہیں وہ چیف سیکرٹری کے رویے کیخلاف فوری ایکشن لیں اس وقت گلگت بلتستان میں ایک انتشار کی کیفیت پیداکی گئی ہے اس پر قابو پانے کیلئے اقدامات اٹھائے جائیں ، ہم گلگت بلتستان کے عوام کے ساتھ کسی قسم کی زیادتی برداشت نہیں کرینگے،ہم عوامی نمائندے ہیں عوامی سطح پر ہی کام کرینگے۔

Facebook Comments
Share Button