تازہ ترین

Marquee xml rss feed

شیریں مزاری نے ایران میں سیاہ برقع کیوں پہنا؟ ایران میں خواتین کا سر کو ڈھانپ کر رکھنا سرکاری طور پر لازمی ہے، اس قانون کا اطلاق زوار، سیاح مسافر خواتین، غیر ملکی وفود ... مزید-وفاقی وزیر برائے تعلیم کا پاکستان نیوی کیڈٹ کالج اورماڑہ اور پی این ایس درمان جاہ کا دورہ-پاکستانی لڑکیوں سے کئی ممالک میں جس فروشی کروائے جانے کا انکشاف لڑکیوں کو نوکری کا لالچ دیکر مشرق وسطیٰ لے جا کر ان سے جسم فروشی کرائی جاتی ہے، اہل خانہ کی جانب سے دوبارہ ... مزید-جدید بسیں اب پاکستان میں ہی تیار کی جائیں گی، معاہدہ طے پا گیا چینی کمپنی پاکستان میں لگژری بسوں اور ٹرکوں کا پلانٹ تعمیر کرے گی، 5 ہزار نوکریوں کے مواقع پیدا ہوں گے-وفاقی وزارتِ مذہبی امور نے ملک میں ایک ساتھ رمضان کے آغاز کے لیے صوبوں سے قانونی حمایت مانگ لی ملک بھر میں ایک ہی دن رمضان کے آغاز کے لیے وزارتِ مذہبی امور نے صوبائی اسمبلیوں ... مزید-جہانگیر ترین یا شاہ محمود قریشی، کس کے گروپ کا حصہ ہیں؟ وزیراعلی پنجاب نے بتا دیا میں صرف وزیراعظم عمران خان کی ٹیم کا حصہ ہوں، کسی گروپنگ سے کوئی تعلق نہیں: عثمان بزدار-اسلام آباد میں طوفانی بارش نے تباہی مچا دی جڑواں شہروں راولپنڈی، اسلام آباد میں جمعرات کی شب ہونے والی طوفانی بارش کے باعث درخت جڑوں سے اکھڑ گئے، متعدد گاڑیوں، میٹرو ... مزید-گورنر پنجاب چوہدری سرور کی جانب سے اراکین اسمبلی،وزراء اور راہنماؤں کے لیے دیے جانے والے اعشائیے میں جہانگیرترین کو مدعونہ کیا گیا 185میں سے صرف 125اراکین اسمبلی شریک ہوئے،پرویز ... مزید-بھارت کی جوہری ہتھیاروں میں جدیدیت اور اضافے سے خطے کا استحکام کو خطرات لاحق ہیں،ڈاکٹر شیریں مزاری جنوبی ایشیاء میں ہتھیاروں کی دوڑ سے بچنے کیلئے پاکستان کی جانب سے ... مزید-وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا نے ضلع کرم میں میڈیکل کالج کے قیام اور ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال کی اپ گریڈیشن کا اعلان کردیا ضلع کرم میں صحت اور تعلیم کے اداروں کو ترجیحی بنیادوں ... مزید

GB News

گلگت بلتستان آرڈر 2018 پرمذاکرات کی دعوت

Share Button

وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمان نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان تاریخی دوراہے پر ہے ‘ہر ادارے اور فرد کو اپنی ذمہ داریوں کا احساس کرنا ہوگامسلم لیگ نون نے گلگت بلتستان آرڈر 2018 کا نیا نظام دیا ہے ۔اپوزیشن جماعتوں نے گلگت بلتستان کے اس اہم مسئلے پر صرف منفی سیاست کی ہم دعوت دیتے ہیں کہ وہ آئیں اور اس آرڈر میں موجود خامیوں کی نشاندہی کریں ہم اس میں ترمیم کریںگے عوام کے پاس جانے اور دھرنے دینے سے مسائل حل نہیں ہوتے۔ اپوزیشن سمیت کوئی بھی جماعت اس میں کسی مسئلے پر تحفظات رکھتی ہے یا خامی سمجھتی ہے تو نشاندہی کریں ان کے تحفظات کو دور کریںگے۔گلگت بلتستان آرڈر2018 پر مختلف نکتہ ہائے نظر سامنے آچکے ہیں اور ہنوز اس پر تبصروں کا سلسلہ جاری ہے یہ تبصرے کہیں مخالفت کا عنصر لیے ہوئے ہیں اور کہیں انہیں خطے کے مفاد میں پہلے سے بہتر قرار دیا جا رہا ہے’اپوزیشن کی جانب سے اس پر تنقید کا سلسلہ بھی جاری ہے ہم پہلے بھی یہ عرض کر چکے ہیںکہ جب بات خطے کے مفاد کی ہے تو اپنی اپنی ڈیڑھ اینٹ کی مسجد بنانے کی کیا ضرورت ہے؟ایک متفقہ لائحہ عمل کا تعین کر کے علاقے کے مفادات کو یقینی بنایا جائے’اس ضمن میں بہترین طریقہ مذاکرات کا ہے ہم یہ کہہ چکے ہیں کہ آرڈر پر جو تحفظات ہیں انہیں حکومت کے سامنے زیر بحث لایا جائے تاکہ اس میں مزید بہتری لائی جا سکے خوش آئند بات یہ ہے کہ وزیراعلی گلگت بلتستان نے اس حوالے سے اپوزیشن جماعتوں کو نہ صرف گفت و شنید کی دعوت دی بلکہ خامیوں کی نشاندہی پر ترمیم کی یقین دہانی بھی کرائی ہے’ ان کا یہ کہنا درست ہے کہ مسائل دھرنوں اور احتجاج سے حل نہیں ہوتے اس لیے عقلمندی کا تقاضا یہی ہے کہ اس بارے میں اپنے تحفظات پیش کر کے انہیں بات چیت کے ذریعے حل کرنے کی راہ ہموار کی جائے اسی میں خطے کا مفاد پوشیدہ ہے ۔

Facebook Comments
Share Button