تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیر اعظم عمران خان کی روضہ رسول ﷺ پر حاضری، سعودی حکام کی جانب سے روضہ رسولﷺ کے دروازے خصوصی طور پر کھول دیئے گئے-آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی چین کے سنٹرل ملٹری کمیشن کے وائس چیئرمین جنرل یانگ یوشیا سے ملاقات کی، دہشتگردی کے خاتمے، ہتھیاروں و سازوسامان کی ٹیکنالوجی اور ٹریننگ ... مزید-ڈاکٹر بننے کا خواب دیکھنے والی خاتون نے ٹرک چلانا شروع کر دیا ناگرپارکر سے تعلق رکھنے والی خاتون مالی مشکلات کی وجہ سے ڈاکٹر نہیں بن سکی تھی-موسمیاتی تغیرات کے اس دور میں بجلی پیدا کرنے کیلئے ایٹمی توانائی کا استعمال امید افزاء آپشن ہے، ہم پاکستان میں نیوکلیئر ٹیکنالوجی کے پرامن استعمال کے فروغ کیلئے آئی ... مزید-سعودی عرب اور پاکستان کے درمیان دوستانہ اور تاریخی تعلقات قائم ہیں، وزیراعظم عمران خان کا دورہ انتہائی اہمیت کا حامل ہے،سعودی عرب اور پاکستان دنیا میں اسلام کی حقیقی ... مزید-کیا کل نواز شریف اور مریم نواز کی سزا معطل کی جا رہی ہے؟ نیب عدالت کو مطمئن نہیں کر پا رہی اس سے اندازہ ہو رہا ہے کہ معاملات کس طرف جا رہے ہیں،ملزمان کا پلڑہ بھاری نظر آ ... مزید-اسد عمر اور اسحاق ڈار میں کوئی فرق نہیں اسد عمر نے بھی اعدادو شمار کا ہیر پھیر کر کے اسحاق ڈار والے کام کیے-پی ٹی آئی نے جو منشور دیاتھا اور جو اعلانات کیے ، ان پر عملدرآمد حکومت کا امتحان ہے ‘سراج الحق عوام نے انہیں گیس ، بجلی اور پٹرول مہنگا کرنے کے لیے نہیں، سستا کرنے کے ... مزید-اہل بیت کی عظم قربانی درحقیقت پوری امت مسلمہ کے لئے درخشاں مثال ہے‘چوہدری محمد سرور اللہ کی رسی کو مضبوطی سے تھامے رکھنا اور فرقہ واریت کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنا وقت کی ... مزید-وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کا وزیراعلیٰ سیکریٹریٹ کے مختلف شعبوں کا معائنہ

GB News

گلگت سکردو روڈ کے معیار پر کسی صورت سمجھوتہ نہیں ہوگا،ڈائریکٹر جنرل ایف ڈبلیو اولیفٹیننٹ جنرل محمد افضل

Share Button

گلگت(راجہ شاہ سلطان مقپون سے) ڈائریکٹر جنرل ایف ڈبلیو اولیفٹیننٹ جنرل محمد افضل نے کہاہے کہ گلگت سکردو روڈ کے معیار پر کسی صورت سمجھوتہ نہیں ہوگااین ایچ اے کے ساتھ ہونیوالے معاہدے سے بڑھ کر ایف ڈبلیو او کام کررہی ہے۔ہفتے کے روز گلگت میں صحافیوں اور عمائدین کو جگلوٹ سکردو روڈ کے تعمیراتی کام کے حوالے سے بریفنگ دیتے ہوئے لیفٹیننٹ جنرل محمد افضل نے کہا کہ طے شدہ معاہدے کے تحت ڈیزائن،پلوں کی تعمیر اور سڑک کی کشادگی پر کام کیاجارہا ہے،ایف ڈبلیو او کی تین یونٹ کام میں مصروف ہیں عالم برج سمیت اب تک چارپل مکمل ہوچکے ہیں ان میں 2آرسی سی اور 2لوہے کے پل شامل ہیں۔انہوں نے کہا کہ گلگت سکردو روڈ کی تعمیر میں ماحولیات کا بھرپور خیال رکھتے ہوئے شاہراہ سے متصل درختوں اور پودوں کو بچایاجارہا ہے،سڑک پر کام کیلئے مقامی ٹھیکیداروں اور ٹیکنیکل اور نان ٹیکنیکل سٹاف کو ترجیح دی جارہی ہے ساتھ ساتھ مقامی افراد کی مشینری کو بھی ترجیحی بنیادوں پر مناسب ریٹ پر اٹھایاجارہا ہے،اس کا مقصد زیادہ سے زیادہ مقامی آبادی کو فائدہ پہنچانا ہے ،انہوں نے کہا کہ سکردو روڈ پر بننے والے پل80ٹن وزن برداشت کرسکتے ہیں تاہم مکمل طور پر فنکشنل ہونے کے بعد 180ٹن وزن کو بھی دونوں طرف سے اٹھایاجاسکتا ہے ان پلوں کے سلسلے میں خود انگلینڈ جاکر آیا ہوں ۔انہوں نے کہا کہ ایف ڈبلیو او نے سب سے کم ٹینڈر دے کر روڈ کا ٹھیکہ اس لیے لیاتھا کہ ہمیں گلگت بلتستان کے لوگوںکی خوشحالی عزیز تھی ایف ڈبلیو او کا مقصد بھی یہی تھا کہ دورافتادہ علاقوں کے عوام کی زندگی کو آسان بنایا جائے ،میں سمجھتا ہوں کہ یہ ادارہ گلگت بلتستان کیلئے ہی بنا تھا اس لیے اس کا نام ہی گلگت بلتستان ورکس آرگنائزیشن ہونا چاہیے تھا۔ انہوں نے کہا کہ سڑک کی تعمیر میں ٹنل بنایا معاہدے میں شامل نہیں تھا لیکن ایف ڈبلیو او 3چھوٹی اور ایک بڑی ٹنل بھی بنانے جارہی ہے بڑے ٹنل کی تعمیر سے جگلوٹ اور سکردو کے درمیان مسافت 42کلومیٹر کم ہوجائے گی ۔ جبکہ سڑک کی تعمیر مکمل ہونے کے بعد سکردوسے گلگت تک کا سفر 2سے ڈھائی گھنٹے ہوجائے گا، صحافیوں کے سوالوں کے جواب میں ڈی جی ایف ڈبلیواو کا کہناتھا کہ سڑک کی زد میں آنے والی زمینوں کا معاوضہ ایف ڈبلیو او نہیں این ایچ اے نے دینا ہے ہماری کوشش ہوتی ہے کہ این ایچ اے عوامی زمینوں کے معاوضے بروقت اداکرے ۔انہوں نے کہا کہ گلگت سکردو روڈ کے تعمیراتی کاموں کو ذاتی طور پر مانیٹر کررہا ہوں ہر روز روڈ کی پراگریس دیکھتاہوں ،انہوں نے کہا کہ حکومت نے بروقت پیسے ادانہیں کیے تو ہم نے خود انتظام کیا اور پوری تیاری کے ساتھ آگے بڑھ رہے ہیں تاکہ سڑک کی تکمیل میں تاخیر نہ ہو، اب کام پہلے سے زیادہ تیز ہوگا تاہم بعض تکنیکی وجوہات کی وجہ سے کچھ مشکلات تھیں جنہیں وفاقی کابینہ کے ذریعے دورکرلیاگیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ہمارے دشمن منصوبہ بندی کے تحت منفی اور بے بنیاد پراپیگنڈا کررہا ہے ۔دشمن کو جگلوٹ سکردو روڈ ہضم نہیں ہورہا ۔

Facebook Comments
Share Button