تازہ ترین

Marquee xml rss feed

نعیم الحق نے شہباز شریف کے پروڈکشن آرڈر ضبط کرنے کی دھمکی دے دی شہباز شریف اور اس کے چمچوں کی اتنی جرات کہ وہ قومی اسمبلی میں وزیر اعظم پر ذاتی حملے کریں۔کیا وہ جیل میں ... مزید-وزیراعظم کا سانحہ ساہیول پر وزراء متضاد بیانات پر سخت برہمی کا اظہار آئندہ بغیر تیاری میڈیا پر بیان بازی نہ کی جائے انسانی زندگیوں کا معاملہ ہے کسی قسم کی معافی کی گنجائش ... مزید-5 ارب روپے قرض حسنہ کیلئے مختص کرنا خوش آئند ہے، فنانس بل میں غریب آدمی کو صبر کا پیغام دیا گیا ہے امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق کی پارلیمنٹ ہائوس کے باہر میڈیا ... مزید-فنانس بل سے متوسط طبقہ کو ریلیف ملا ہے، عوام کا پیسہ عوام پر خرچ ہو گا، اپوزیشن کے پاس بات کرنے کو کچھ نہیں وفاقی وزیر آبی وسائل فیصل واوڈا کی پارلیمنٹ ہائوس کے باہر میڈیا ... مزید-صوبائی اسمبلی کے حلقہ پی ایس94 کے ضمنی الیکشن کے موقع پر سیکورٹی کو غیرمعمولی بنایا جائے، آئی جی سندھ-وزیر خزانہ اسد عمر کی طرف سے قومی اسمبلی میں پیش کردہ ضمنی مالیاتی (دوسری ترمیم) بل 2019 کا مکمل متن-جنوری کو ہونے والے ضمنی انتخابات کراچی کی سیاست میں نئی راہیں متعین کرے گا،مصطفی کمال پی ایس پی کسی فرد یا گروہ کا نام نہیں ہے بلکہ ایک تحریک کا نام ہے جو مظلوم و محکوموں ... مزید-ملک کا اقتصادی مستقبل کراچی کی معاشی ترقی میں مضمر ہے۔گورنر سندھ-سی پیک پاکستان اور چین کے مابین تعلقات کو مزید گہرا کرنے کے لئے مستحکم بنیاد، خطے کو منسلک کرنے میں اہم کردارادا کر رہا ہے، سی پیک تمام خطے میں امن و استحکام لانے میں ... مزید-احتساب عدالت اسلام آباد میں اسحاق ڈار کیخلاف آمدن سے زائد اثاثوں کے مقدمے میں دو مزید گواہوں کے بیانات ریکارڈ

GB News

پیپلز پارٹی نے ہمیشہ جنوبی پنجاب کے لیے کام کیا، بلاول بھٹو زرداری

Share Button

مظفر گڑھ: پاکستان پیپلزپارٹی (پی پی پی) کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ آپ کو فیصلہ کرنا ہے کہ آپ کو شوباز چاہیے یا یوٹرن والا؟ ووٹ کی بنیاد منشور، نظریہ اور پالیسی ہونی چاہیے۔

مظفر گڑھ میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی نے 50 سال میں جمہوری جدوجہد کی، ہم نےجیلیں کاٹی ہیں اور حکومت بھی کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ کراچی سےخیبر تک جہاں جہاں گیا، عوام نے استقبال کیا اور آج بھی خدمت کا وہی جذبہ لے کر خان گڑھ میں آیا ہوں۔

ان کا کہنا ہے کہ میرا مقابلہ سیاستدان سے نہیں بلکہ محرومیوں سے ہے، میرا مقابلہ غربت، بھوک اور معاشی ناانصافی سے ہے اور میں استحصال سے پاک معاشرہ چاہتاہوں، دنیاکی کوئی طاقت شہید بی بی کا مشن پورا کرنے سے نہیں روک سکتی۔

بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ الیکشن میں عوام دوست اور زرعی دوست منشور لایا ہوں، پیپلزپارٹی ہمیشہ کسان دوست منشور لاتی ہے جب کہ ہم کپاس،چاول، گندم اور دالوں کی امدادی قیمت دیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ملک کی 60 فیصد آبادی خوراک کی کمی کاشکار ہے لہذا حکومت میں آنے کے بعد بھوک مٹاؤ پروگرام کے تحت بھوک کارڈ دیں گے اور یونین کونسل کی سطح پر فوڈ اسٹور کھولیں گے۔

ان کا کہنا ہے کہ میں نے ہمیشہ جنوبی پنجاب صوبےکامقدمہ لڑا ہے لیکن چند کٹھ پتلیوں کو آخری دنوں میں جنوبی پنجاب یاد آیا جب کہ حکمرانوں نے جنوبی پنجاب کو اپنی جاگیر سمجھا اور مسائل کو اہمیت نہ دی۔

پی پی پی چیئرمین کا کہنا تھا کہ ہم نے سندھ میں درجنوں اسپتال بنائے، 8 دل کے اسپتال سندھ میں بنائے لیکن ہمارے مخالفین کہتے ہیں ہم نے میٹرو نہیں بنائی، ہم نے 14 نئی یونیورسٹیاں بنائی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ آپ کو میٹرو چاہیے یا معیاری تعلیم اور علاج؟ آپ کو روزگار چاہیے یا میٹرو؟ الیکشن میں 2 ہفتےرہ گئے لیکن پاکستان بدلنے والے کا منشور بھی تیار نہیں۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ آپ کو فیصلہ کرنا ہے کہ آپ کو شوباز چاہیے یا یوٹرن والا؟ ووٹ کی بنیاد منشور، نظریہ اور پالیسی ہونی چاہیے، یہ الیکشن میری سیاسی انا اور اقتدار کی ہوس کی بات نہیں بلکہ یہ الیکشن آپ کے حقوق کی جنگ ہے۔

انہوں نے کہا کہ مجھے اقتدار کی ہوس نہیں اور نہ ہی اقتدار اپنے لیے چاہیے بلکہ یہ  اقتدار غربت اور معاشی ناانصافی کے خاتمے کے لیے چاہتا ہوں، ملک کی خوشحالی اور نوجوانوں کے روزگار کے لیے اقتدار چاہتا ہوں۔

Facebook Comments
Share Button