تازہ ترین

Marquee xml rss feed

بھارتی ہیکرز کی جانب سے پاکستانی ٹی وی چینلز اور اخبارات کی ویب سائٹس پر سائبر حملہ چینل 24، دی نیشن، نئی بات، روزنامہ پاکستان سمیت دیگر متعدد ٹی وی چینلز اور اخبارات کی ... مزید-پلوامہ واقعہ کے بھارتی پراپیگنڈا،چین نے بھارت کی حیلہ سازیوں کا سخت جواب دے دیا بھارت پلوامہ واقعہ کا ذمہ دار پاکستان اور چین کو ٹھہرانے سے گریز کرے،چینی سرکاری میڈیا-جعلی اکاؤنٹس کیس کی سماعت ، آصف زرداری کا کل سپریم کورٹ میں پیش نہ ہونے کا فیصلہ وکلاء ٹیم پیش ہو گی-نیب کی اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کی سفارش-سعودی عرب پاکستان کی پچھلی قیادت سے مایوس تھا،شاہ محمود قریشی سعودی عرب کی 20 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری تاریخ کی سب سے بڑی سرمایہ کاری ہے ، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ ... مزید-پاکستان کا بھارت کے جارحانہ رویے کے خلاف اقوام متحدہ کو خط لکھنے کا فیصلہ میں اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل کو خط لکھ رہا ہوں۔انکا کہنا تھا کہ میں خط میں لکھوں گا کہ بھارت ... مزید-وزیراعظم نے ہنگامی طور پر قومی سلامتی کونسل کا اجلاس طلب کرلیا اجلاس میں کونسل کے رکن خزانہ، دفاع، خارجہ، وفاقی وزرا، وزیرمملکت داخلہ، حساس اداروں کےسربراہان اورسیکیورٹی ... مزید-میں وزیر اعظم ہوتا تو سعودی ولی عہد کو ایوان سے خطاب کا موقع دیتا،یوسف رضا گیلانی حکومت کو چاہیے تھا کہ وہ اپوزیشن کو بھی مدعو کرتی تاکہ ہم بھی انکو خوش آمدید کہتے،سابق ... مزید-انڈونیشیا 5 تا 7 اپریل تک کراچی میں ہونے والی 16ویں کراچی ایکسپو میں شرکت کرے گا، قونصل جنرل انڈونیشیا تاجر برادری کو مزید سہولتیں فراہم کرنا چاہتے ہیں دونوں اسلامی برادر ... مزید-طلبا تنظیموں پر پابندی نے کراچی کی قومی ’تہذیبی شناخت کو شدید نقصان پہنچایا‘حافظ نعیم الرحمن طلبہ کی صلاحیتوں کو نکھارنے والی سرگرمیوں کا انعقاد خوش آئند ہے ‘ ہمدرد ... مزید

GB News

آج تک گلگت بلتستان کے عوام کے بنیادی حقوق کیلئے کبھی کوئی کام نہیں کیا گیا، کیپٹن(ر)محمد شفیع خان

Share Button

گلگت(نمائندہ خصوصی+خبرنگار خصوصی) اپوزیشن لیڈر کیپٹن(ر)محمد شفیع خان نے کہا ہے کہ سیاسی بصیرت کی کمی اورسیاسی قائدین کی غیر سنجیدگی کے بدولت آج گلگت بلتستان کے عوام بنیادی آئینی حقوق سے محروم ہیں ہمارے سیاسی جماعتوں کے افراد ڈرائی فروٹ لے کراپنے عہدوں کیلئے اپنے آقائوں کے دروازوں پر کھڑے ہوتے ہیں لیکن آج تک گلگت بلتستان کے عوام کے بنیادی حقوق کیلئے کبھی کوئی کام نہیں کیا ہے اورآج ایک گھنٹے کیلئے ان جماعتوں کے ذمہ داروں کا اے پی سی میں نہیں آنا اس بات کی دلیل ہے کہ ان کو عوام کے مسائل نہیں بلکہ اپنے مراعات عزیز ہیں ایسے افراد کو شرم آنی چاہیے اتوار کے روز گلگت کے مقامی ہوٹل میں عوامی ایکشن کمیٹی کی جانب سے بلائی گئی کل جماعتی کانفرنس سے خطا ب کرتے ہوئے انہوںنے کہا کہ وزیراعلیٰ ،گورنر گلگت بلتستان ربڑسٹمپ کی طرح استعمال کررہے ہیں گلگت بلتستان میں وفاق کی نمائندگی گورنر کررہاہے اگر وہ اتنا مجبورہے تو ریاستی ادارے اس حوالے سے کردارادا کرے۔انہوںنے کہا کہ سب سے پہلے ہمیں اپنا محاسبہ کرنا ہوگا اور صوبائی صدورکے عہدوں کے دوڑ کے بجائے عوامی حقوق کیلئے کام کرنا ہوگا۔انہوںنے کہا کہ ہماری جماعت کا موقف واضح ہے کہ گلگت بلتستان کو آئینی صوبہ بنایا جائے کیونکہ ہم نے پاکستان کے ساتھ الحاق کیا ہے اوراگر ہم متنازعہ ہوتے تو کشمیر کے ساتھ الحاق کرتے ۔انہوںنے کہا کہ اقوام متحدہ کے قراردادوں میں 3اکائیوں کا ذکر ہے اورجس طرح انڈیا نے مقبوضہ کشمیر کو سیٹ اپ دیا ہے ایسا سیٹ اپ ہمیں دینے میں کیا دشواری ہے اگر اس میں تحفظات ہیں تو ہم آرڈرز کے نظام کو یکسر مسترد کرتے ہیں اور ہمارے لئے ایک بہترین سیٹ اپ کا ماڈل آزاد کشمیر اورمقبوضہ کشمیر کا موجود ہے اگر ہمیں پھر بھی کوئی سیٹ اپ نہیں ملتا ہے تو پھر ہم یکم نومبر والے سٹیج پر کھڑے ہونگے۔انہوںنے کہا کہ اٹھارویں ترمیم کے تحت صوبوں کو جو مراعات حاصل ہیں وہ گلگت بلتستان کو نہیں ملتے ہیں جبکہ اکیسویں ترمیم کے تحت ایکشن پلان اورشیڈول فورتھ ایک دم لاگو کیاجاتا ہے اگر شیڈول فورتھ لگانا ہے تو ڈپٹی سپیکر جعفر اللہ خان پر لگایا جائے ۔ریاست اورریاستی اداروں کے خلاف ہرزہ سرائی کی ہے سیاسی انتقام کے طورپر استعمال کیا جارہاہے جس کوہم مسترد کرتے ہیں انہوںنے کہا کہ ہم ایک کٹھ پتلی اسمبلی میں بیٹھے ہوئے ہیں اوراسمبلی کی کوئی حیثیت نہیں ہے وزیراعلیٰ اور اس کے چند ملازمین سیاسی انتقام کے طورپر شیڈول فورتھ کو استعمال کررہے ہیں اور یہ زیادتی ہے جب آزاد کشمیر میں نیشنل ایکشن پلان اورشیڈول فورتھ لاگو نہیں ہوتا ہے تو گلگت بلتستان مسئلہ کشمیرکا حصہ ہو کر کس طرح لاگو ہوسکتا ہے اس شیڈول فورتھ کے خلاف عوام کو میدان میں نکلنا ہوگا۔انہوںنے کہا کہ چیف سیکرٹری نے جو توہین کی ہے اس پر ہم خاموش نہیں رہ سکتے ہیں اورچیف سیکرٹری کو فوری طورپرواپس بجھوایا جائے۔

Facebook Comments
Share Button