تازہ ترین

Marquee xml rss feed

ایشیاءکپ،پاکستان کی بھارت سےشکست،شائقین کرکٹ مایوس کھلاڑیوں کی ٹریننگ میں”اعصابی تناؤ کی مضبوطی“ پرتوجہ اولین ترجیح ہونی چاہیے، ہار جیت کھیل کا حصہ لیکن ہارا تو لڑ ... مزید-ایرانی سیکیورٹی فورس نے پاک ایران سرحد تفتان کے قریب مزید 149 پاکستانی لیویز فورس کے حوالے کر دیئے-پی ٹی آئی کا جیل سےرہائی کےبعد نوازشریف سے بڑا مطالبہ نوازشریف قوم کا پیسا واپس لے آئیں ہماری لڑائی ختم ہوجائے گی، نوازشریف سے ہماری کوئی ذاتی لڑائی نہیں ہے۔وفاقی وزیراطلاعات ... مزید-جعلی وزیر اعظم عمران خان کی جعلی حکومت بری طرح ناکام ہو چکی ہے ‘ شاہد خاقان عباسی این اے 124کی سیٹ پر شاہد خاقان عباسی کو بھاری اکثریت سے کامیاب کرا کے یہ امانت نواز شریف ... مزید-اے این پی رہنماء کی متنازع ایشو پرعمران خان کی حمایت افغانی اور بنگلادیشی لوگوں کوشہریت کا حق آئین دیتا ہے، وزیراعظم نے قومی اسمبلی میں حقائق پرمبنی بات کی ہے، افغان ... مزید-وزیراعلیٰ پنجاب سے گورنر خیبرپختونخوا شاہ فرمان کی ملاقات، باہمی دلچسپی کے امور اور بین الصوبائی ہم آہنگی پر تبادلہ خیال-پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن(پنجاب) کے سالانہ انتخابات ، آواز گروپ نے میدان مار لیا-پنجاب میں بارشوں کے باعث ممکنہ سیلاب کی پیشین گوئی کے پیش نظرتمام پیشگی انتظامات مکمل کئے جائیں، متعلقہ محکمے ایمرجنسی پلان مرتب کریں،وزیراعلیٰ پنجاب کی کابینہ سب کمیٹی ... مزید-پاکستان کو اس کی اصل منزل سے ہٹانے والے ملک و قوم کے مجرم ہیں،کپتان نے پاکستان کو اس کی منزل کی طرف رواں دواں کر دیا، نئے پاکستان میں کمز ور اور غریب کو بھی ان کا حق ملے گا، ... مزید-وزیراعلیٰ کی اہلیہ اور صاحبزادیوں کی لاہو ر میں ایس او ایس ویلج آمد ، ایس اوایس ویلج میں مقیم بچوں کے ساتھ گھل مل گئیں، گیمز کھیلی او رگپ شپ لگائی ،مجھے یہاں آ کر دلی ... مزید

GB News

آج تک گلگت بلتستان کے عوام کے بنیادی حقوق کیلئے کبھی کوئی کام نہیں کیا گیا، کیپٹن(ر)محمد شفیع خان

Share Button

گلگت(نمائندہ خصوصی+خبرنگار خصوصی) اپوزیشن لیڈر کیپٹن(ر)محمد شفیع خان نے کہا ہے کہ سیاسی بصیرت کی کمی اورسیاسی قائدین کی غیر سنجیدگی کے بدولت آج گلگت بلتستان کے عوام بنیادی آئینی حقوق سے محروم ہیں ہمارے سیاسی جماعتوں کے افراد ڈرائی فروٹ لے کراپنے عہدوں کیلئے اپنے آقائوں کے دروازوں پر کھڑے ہوتے ہیں لیکن آج تک گلگت بلتستان کے عوام کے بنیادی حقوق کیلئے کبھی کوئی کام نہیں کیا ہے اورآج ایک گھنٹے کیلئے ان جماعتوں کے ذمہ داروں کا اے پی سی میں نہیں آنا اس بات کی دلیل ہے کہ ان کو عوام کے مسائل نہیں بلکہ اپنے مراعات عزیز ہیں ایسے افراد کو شرم آنی چاہیے اتوار کے روز گلگت کے مقامی ہوٹل میں عوامی ایکشن کمیٹی کی جانب سے بلائی گئی کل جماعتی کانفرنس سے خطا ب کرتے ہوئے انہوںنے کہا کہ وزیراعلیٰ ،گورنر گلگت بلتستان ربڑسٹمپ کی طرح استعمال کررہے ہیں گلگت بلتستان میں وفاق کی نمائندگی گورنر کررہاہے اگر وہ اتنا مجبورہے تو ریاستی ادارے اس حوالے سے کردارادا کرے۔انہوںنے کہا کہ سب سے پہلے ہمیں اپنا محاسبہ کرنا ہوگا اور صوبائی صدورکے عہدوں کے دوڑ کے بجائے عوامی حقوق کیلئے کام کرنا ہوگا۔انہوںنے کہا کہ ہماری جماعت کا موقف واضح ہے کہ گلگت بلتستان کو آئینی صوبہ بنایا جائے کیونکہ ہم نے پاکستان کے ساتھ الحاق کیا ہے اوراگر ہم متنازعہ ہوتے تو کشمیر کے ساتھ الحاق کرتے ۔انہوںنے کہا کہ اقوام متحدہ کے قراردادوں میں 3اکائیوں کا ذکر ہے اورجس طرح انڈیا نے مقبوضہ کشمیر کو سیٹ اپ دیا ہے ایسا سیٹ اپ ہمیں دینے میں کیا دشواری ہے اگر اس میں تحفظات ہیں تو ہم آرڈرز کے نظام کو یکسر مسترد کرتے ہیں اور ہمارے لئے ایک بہترین سیٹ اپ کا ماڈل آزاد کشمیر اورمقبوضہ کشمیر کا موجود ہے اگر ہمیں پھر بھی کوئی سیٹ اپ نہیں ملتا ہے تو پھر ہم یکم نومبر والے سٹیج پر کھڑے ہونگے۔انہوںنے کہا کہ اٹھارویں ترمیم کے تحت صوبوں کو جو مراعات حاصل ہیں وہ گلگت بلتستان کو نہیں ملتے ہیں جبکہ اکیسویں ترمیم کے تحت ایکشن پلان اورشیڈول فورتھ ایک دم لاگو کیاجاتا ہے اگر شیڈول فورتھ لگانا ہے تو ڈپٹی سپیکر جعفر اللہ خان پر لگایا جائے ۔ریاست اورریاستی اداروں کے خلاف ہرزہ سرائی کی ہے سیاسی انتقام کے طورپر استعمال کیا جارہاہے جس کوہم مسترد کرتے ہیں انہوںنے کہا کہ ہم ایک کٹھ پتلی اسمبلی میں بیٹھے ہوئے ہیں اوراسمبلی کی کوئی حیثیت نہیں ہے وزیراعلیٰ اور اس کے چند ملازمین سیاسی انتقام کے طورپر شیڈول فورتھ کو استعمال کررہے ہیں اور یہ زیادتی ہے جب آزاد کشمیر میں نیشنل ایکشن پلان اورشیڈول فورتھ لاگو نہیں ہوتا ہے تو گلگت بلتستان مسئلہ کشمیرکا حصہ ہو کر کس طرح لاگو ہوسکتا ہے اس شیڈول فورتھ کے خلاف عوام کو میدان میں نکلنا ہوگا۔انہوںنے کہا کہ چیف سیکرٹری نے جو توہین کی ہے اس پر ہم خاموش نہیں رہ سکتے ہیں اورچیف سیکرٹری کو فوری طورپرواپس بجھوایا جائے۔

Facebook Comments
Share Button