تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیراعظم عمران خان نے پولیس افسر طاہر خان داوڑ کے اغواءاور قتل کی تحقیقات کا حکم دیدیا خیبرپختونخوا حکومت اور اسلام آباد پولیس مشترکہ تحقیقات کریں گی‘وفاقی دارالحکومت ... مزید-ایس پی طاہر داوڑ کی افغنستان حوالگی میں ان کے دوست سہولت کار ثابت ہوئے ملزم دوستوں نے جس وقت طاہر داوڑ کو غیر ملکی قوتوں کے حوالے کیا تو اُس وقت وہ نیم بیہوشی کی حالت میں ... مزید-امریکا کی سول اور فوجی قیادت افغان تنازع کے غیر عسکری حل پر یقین رکھتی ہے . ترجمان سٹیٹ ڈیپارٹمنٹ افغانستان میں جاری جنگ میں 6 ہزار 3 سو 34 امریکی اور 1ہزار سے زیادہ اتحادی ... مزید-سندھ سے گرفتار خواجہ سعد رفیق کے پارٹنرقیصر امین بٹ کا سفری ریمانڈ سابق رکن اسمبلی نیب میں پیراگون کیس شروع ہونے کے بعد سے روپوش تھے-افغانستان نے ایس پی طاہر داوڑ کو قتل کر کے جنرل رزاق کا بدلہ لیا افغانستان میں قونصلیٹ کے اندر باقاعدہ ویڈیو موجود ہے جس میں شہید طاہر داوڑ پر تشدد کیا جا رہا ہے اور کہا ... مزید-سید علی گیلانی کا غیر قانونی طور پر نظر بند کشمیریوں کی حالت زار پر اظہار تشویش نظر بندوں کو بڑے پیمانے پر سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، حریت چیئرمین-بھارتی تحقیقاتی ادارے نے خاتون کشمیری رہنمائوںکے خلاف 4ماہ 10دن کی نظربندی کے بعد فرد جرم عائدکردی آسیہ اندرابی، فہمیدہ صوفی اور ناہیدہ نسرین ٹیوٹر، فیس بک، یو ٹیوب کے ... مزید-حقیقی زندگی کے ''ویر زارا'' جو اپنی محبت حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے ہندو خاتون اور پاکستانی شہری گذشتہ 24 سال سے دبئی میں مقیم خوشگوار زندگی گزار رہے ہیں-صدیق الفاروق نواز شریف کے قدموں میں گر پڑے نواز شریف کی احتساب عدالت میں پشی کے موقع پر قائد سے ملتے ہوئے صدیق الفاروق گر پڑے، دیگر لوگوں نے سہارا دے کر اٹھایا-کیمرے کی آنکھ نے عدالت میں بیماری کے بہانے کرنے والے ڈاکٹر عاصم کو پارک میں پکڑ لیا لاٹھی کے سہارے عدالت میں پیش ہونے والے ڈاکٹر عاصم ویڈیو میں بلکل ہشاش بشاش نظر آئے،ویڈیو ... مزید

GB News

آج تک گلگت بلتستان کے عوام کے بنیادی حقوق کیلئے کبھی کوئی کام نہیں کیا گیا، کیپٹن(ر)محمد شفیع خان

Share Button

گلگت(نمائندہ خصوصی+خبرنگار خصوصی) اپوزیشن لیڈر کیپٹن(ر)محمد شفیع خان نے کہا ہے کہ سیاسی بصیرت کی کمی اورسیاسی قائدین کی غیر سنجیدگی کے بدولت آج گلگت بلتستان کے عوام بنیادی آئینی حقوق سے محروم ہیں ہمارے سیاسی جماعتوں کے افراد ڈرائی فروٹ لے کراپنے عہدوں کیلئے اپنے آقائوں کے دروازوں پر کھڑے ہوتے ہیں لیکن آج تک گلگت بلتستان کے عوام کے بنیادی حقوق کیلئے کبھی کوئی کام نہیں کیا ہے اورآج ایک گھنٹے کیلئے ان جماعتوں کے ذمہ داروں کا اے پی سی میں نہیں آنا اس بات کی دلیل ہے کہ ان کو عوام کے مسائل نہیں بلکہ اپنے مراعات عزیز ہیں ایسے افراد کو شرم آنی چاہیے اتوار کے روز گلگت کے مقامی ہوٹل میں عوامی ایکشن کمیٹی کی جانب سے بلائی گئی کل جماعتی کانفرنس سے خطا ب کرتے ہوئے انہوںنے کہا کہ وزیراعلیٰ ،گورنر گلگت بلتستان ربڑسٹمپ کی طرح استعمال کررہے ہیں گلگت بلتستان میں وفاق کی نمائندگی گورنر کررہاہے اگر وہ اتنا مجبورہے تو ریاستی ادارے اس حوالے سے کردارادا کرے۔انہوںنے کہا کہ سب سے پہلے ہمیں اپنا محاسبہ کرنا ہوگا اور صوبائی صدورکے عہدوں کے دوڑ کے بجائے عوامی حقوق کیلئے کام کرنا ہوگا۔انہوںنے کہا کہ ہماری جماعت کا موقف واضح ہے کہ گلگت بلتستان کو آئینی صوبہ بنایا جائے کیونکہ ہم نے پاکستان کے ساتھ الحاق کیا ہے اوراگر ہم متنازعہ ہوتے تو کشمیر کے ساتھ الحاق کرتے ۔انہوںنے کہا کہ اقوام متحدہ کے قراردادوں میں 3اکائیوں کا ذکر ہے اورجس طرح انڈیا نے مقبوضہ کشمیر کو سیٹ اپ دیا ہے ایسا سیٹ اپ ہمیں دینے میں کیا دشواری ہے اگر اس میں تحفظات ہیں تو ہم آرڈرز کے نظام کو یکسر مسترد کرتے ہیں اور ہمارے لئے ایک بہترین سیٹ اپ کا ماڈل آزاد کشمیر اورمقبوضہ کشمیر کا موجود ہے اگر ہمیں پھر بھی کوئی سیٹ اپ نہیں ملتا ہے تو پھر ہم یکم نومبر والے سٹیج پر کھڑے ہونگے۔انہوںنے کہا کہ اٹھارویں ترمیم کے تحت صوبوں کو جو مراعات حاصل ہیں وہ گلگت بلتستان کو نہیں ملتے ہیں جبکہ اکیسویں ترمیم کے تحت ایکشن پلان اورشیڈول فورتھ ایک دم لاگو کیاجاتا ہے اگر شیڈول فورتھ لگانا ہے تو ڈپٹی سپیکر جعفر اللہ خان پر لگایا جائے ۔ریاست اورریاستی اداروں کے خلاف ہرزہ سرائی کی ہے سیاسی انتقام کے طورپر استعمال کیا جارہاہے جس کوہم مسترد کرتے ہیں انہوںنے کہا کہ ہم ایک کٹھ پتلی اسمبلی میں بیٹھے ہوئے ہیں اوراسمبلی کی کوئی حیثیت نہیں ہے وزیراعلیٰ اور اس کے چند ملازمین سیاسی انتقام کے طورپر شیڈول فورتھ کو استعمال کررہے ہیں اور یہ زیادتی ہے جب آزاد کشمیر میں نیشنل ایکشن پلان اورشیڈول فورتھ لاگو نہیں ہوتا ہے تو گلگت بلتستان مسئلہ کشمیرکا حصہ ہو کر کس طرح لاگو ہوسکتا ہے اس شیڈول فورتھ کے خلاف عوام کو میدان میں نکلنا ہوگا۔انہوںنے کہا کہ چیف سیکرٹری نے جو توہین کی ہے اس پر ہم خاموش نہیں رہ سکتے ہیں اورچیف سیکرٹری کو فوری طورپرواپس بجھوایا جائے۔

Facebook Comments
Share Button