تازہ ترین

Marquee xml rss feed

ایشیاءکپ،پاکستان کی بھارت سےشکست،شائقین کرکٹ مایوس کھلاڑیوں کی ٹریننگ میں”اعصابی تناؤ کی مضبوطی“ پرتوجہ اولین ترجیح ہونی چاہیے، ہار جیت کھیل کا حصہ لیکن ہارا تو لڑ ... مزید-ایرانی سیکیورٹی فورس نے پاک ایران سرحد تفتان کے قریب مزید 149 پاکستانی لیویز فورس کے حوالے کر دیئے-پی ٹی آئی کا جیل سےرہائی کےبعد نوازشریف سے بڑا مطالبہ نوازشریف قوم کا پیسا واپس لے آئیں ہماری لڑائی ختم ہوجائے گی، نوازشریف سے ہماری کوئی ذاتی لڑائی نہیں ہے۔وفاقی وزیراطلاعات ... مزید-جعلی وزیر اعظم عمران خان کی جعلی حکومت بری طرح ناکام ہو چکی ہے ‘ شاہد خاقان عباسی این اے 124کی سیٹ پر شاہد خاقان عباسی کو بھاری اکثریت سے کامیاب کرا کے یہ امانت نواز شریف ... مزید-اے این پی رہنماء کی متنازع ایشو پرعمران خان کی حمایت افغانی اور بنگلادیشی لوگوں کوشہریت کا حق آئین دیتا ہے، وزیراعظم نے قومی اسمبلی میں حقائق پرمبنی بات کی ہے، افغان ... مزید-وزیراعلیٰ پنجاب سے گورنر خیبرپختونخوا شاہ فرمان کی ملاقات، باہمی دلچسپی کے امور اور بین الصوبائی ہم آہنگی پر تبادلہ خیال-پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن(پنجاب) کے سالانہ انتخابات ، آواز گروپ نے میدان مار لیا-پنجاب میں بارشوں کے باعث ممکنہ سیلاب کی پیشین گوئی کے پیش نظرتمام پیشگی انتظامات مکمل کئے جائیں، متعلقہ محکمے ایمرجنسی پلان مرتب کریں،وزیراعلیٰ پنجاب کی کابینہ سب کمیٹی ... مزید-پاکستان کو اس کی اصل منزل سے ہٹانے والے ملک و قوم کے مجرم ہیں،کپتان نے پاکستان کو اس کی منزل کی طرف رواں دواں کر دیا، نئے پاکستان میں کمز ور اور غریب کو بھی ان کا حق ملے گا، ... مزید-وزیراعلیٰ کی اہلیہ اور صاحبزادیوں کی لاہو ر میں ایس او ایس ویلج آمد ، ایس اوایس ویلج میں مقیم بچوں کے ساتھ گھل مل گئیں، گیمز کھیلی او رگپ شپ لگائی ،مجھے یہاں آ کر دلی ... مزید

GB News

گلگت بلتستان کے عوام کو سیاسی و معاشی حقوق کی فراہمی یقینی بنائیں گے،تحریک انصاف کا انتخابی منشور

Share Button

اسلام آباد(لیاقت علی انجم سے)تحریک انصاف نے اپنے انتخابی منشور میں جہاں ایک کروڑ ملازمتیں دینے اور 50لاکھ سستے مکانات بنانے کا وعدہ کیا گیا ہے وہاں خصوصی طور پر گلگت بلتستان کو واضح اہمیت دی گئی ہے ، انتخابی منشور میں کہا گیا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف گلگت بلتستان کے عوامکی پاکستان کے ساتھ وابستگی کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے جو کہ مثالی اور قربانیوں کی تاریخ سے عبارت ہے ، ہم گلگت بلتستان کے عوام کو سیاسی و معاشی حقوق کی فراہمی یقینی بنائیں گے، انتخابی منشور میں اس بات کا بھی اعتراف کیا گیا ہے کہ گلگت بلتستان کو گوناں گوں مسائل کا سامنا ہے جن میں معاشی ترقی کا فقدان، اقتصادی راہداری منصوبے یعنی سی پیک میں محدود شرکت ، مرکزیت کی حامل نوکر شاہی اور پہلے ہی سے قدرے بے اختیار قانون ساز اسمبلی جیسے مسائل شامل ہیں۔ یہ مسائل گلگت بلتستان کے عوام کیلئے ان کی قدرتی اہلیت و قابلیت اور وسائل کے مناسب استعمال کی راہ میں بڑی رکاوٹ ہیں، انتخابی منشور میں آگے چل کر وعدہ کیا گیا ہے کہ ہم قانون ساز اسمبلی کو خودمختاری دے کر گلگت بلتستان کے عوام کو بااختیار بنائیں گے ، سیاحت ، معدنیات اور قابل تجدید توانائی میں سرمایہ کاری کے ذریعے خطے میں بڑی معاشی سرگرمی کی راہ ہموار کریں گے ، انتخابی منشور میں کہا گیا ہے کہ ہم راہداری منصوبے میں مقامی آبادی کی شمولیت کے ساتھ گلگت بلتستان کے عوام کو منصوبے سے مستفید ہونے کے ٹھوس مواقع بھی فراہم کریں گے ، انتخابی منشور میں سیاحت فروغ دینے کا بھی وعدہ کیا گیا ہے تحریک انصاف کے منشور میں گلگت بلتستان کو خاص اہمیت دینے سے یہ بات واضح ہوتی ہے کہ پی ٹی آئی کی مرکزی قیادت گلگت بلتستان کے مسائل سے آگاہ ہے دوسری طرف اس کی ایک وجہ یہ بھی ہو سکتی ہے کہ صوبائی قیادت کی جانب سے پارٹی کی مرکزی قیادت کوخطے کے مسائل سے باخبر رکھا ہوا اور تفصیلی طور پر بریف کیا گیا ہو دونوں صورتوں میں خوش آئند پہلو موجود ہے اس سے پہلے پیپلزپارٹی نے اپنے منشور میں گلگت بلتستان کو مزید بااختیار بنانے کا وعدہ کیا تھا دوسری جانب مسلم لیگ ن کے انتخابی منشور میں گلگت بلتستان کو نکال دینے سے کئی سوالات جنم لے رہے ہیں پاکستان کی سب سے بڑی پارٹی جس نے پنجاب میں مسلسل دس سال او وفاق میں پانچ سال کامیابی سے مکمل کیے ہوں اس پارٹی کو گلگت بلتستان سے دلچسپی نہ ہونے کی وجہ کیا ہو سکتی ہے؟ سیاسی ماہرین کے مطابق چونکہ مسلم لیگ ن اس وقت بحرانی کیفیت سے گزر رہی ہے پارٹی کی سیاسی آکسیجن کا دارومدار عدالتوں کے فیصلوں پر منحصر ہے اس لئے یہی وجہ ہو سکتی ہے کہ گلگت بلتستان کو اپنے منشور میں شامل کرنے کی فرصت ہی نہ ملی ہو ، تاہم اس سے صوبائی قیادت کی نااہلی عیاں ہوتی ہے ، انہیں چاہیے تھا کہ انتخابی منشور میں گلگت بلتستان کو شامل کرنے کیلئے مرکزی قیادت کو قائل کرتے اور انہیں تفصیلی بریفنگ دی جاتی، ن لیگ کی صوبائی قیادت کی جانب سے الفاظ کی جادوگری کے ذریعے عوام کے سامنے لاکھ تاویلیں پیش کریں لیکن سیاسی مخالفین اس معاملے کو ہر صورت کیچ کریں گے اور یہ مسلم لیگ ن گلگت بلتستان کے مستقبل کیلئے کوئی نیک شگون نہیں ہو گا۔

Facebook Comments
Share Button