تازہ ترین

Marquee xml rss feed

بھارتی ہیکرز کی جانب سے پاکستانی ٹی وی چینلز اور اخبارات کی ویب سائٹس پر سائبر حملہ چینل 24، دی نیشن، نئی بات، روزنامہ پاکستان سمیت دیگر متعدد ٹی وی چینلز اور اخبارات کی ... مزید-پلوامہ واقعہ کے بھارتی پراپیگنڈا،چین نے بھارت کی حیلہ سازیوں کا سخت جواب دے دیا بھارت پلوامہ واقعہ کا ذمہ دار پاکستان اور چین کو ٹھہرانے سے گریز کرے،چینی سرکاری میڈیا-جعلی اکاؤنٹس کیس کی سماعت ، آصف زرداری کا کل سپریم کورٹ میں پیش نہ ہونے کا فیصلہ وکلاء ٹیم پیش ہو گی-نیب کی اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کی سفارش-سعودی عرب پاکستان کی پچھلی قیادت سے مایوس تھا،شاہ محمود قریشی سعودی عرب کی 20 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری تاریخ کی سب سے بڑی سرمایہ کاری ہے ، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ ... مزید-پاکستان کا بھارت کے جارحانہ رویے کے خلاف اقوام متحدہ کو خط لکھنے کا فیصلہ میں اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل کو خط لکھ رہا ہوں۔انکا کہنا تھا کہ میں خط میں لکھوں گا کہ بھارت ... مزید-وزیراعظم نے ہنگامی طور پر قومی سلامتی کونسل کا اجلاس طلب کرلیا اجلاس میں کونسل کے رکن خزانہ، دفاع، خارجہ، وفاقی وزرا، وزیرمملکت داخلہ، حساس اداروں کےسربراہان اورسیکیورٹی ... مزید-میں وزیر اعظم ہوتا تو سعودی ولی عہد کو ایوان سے خطاب کا موقع دیتا،یوسف رضا گیلانی حکومت کو چاہیے تھا کہ وہ اپوزیشن کو بھی مدعو کرتی تاکہ ہم بھی انکو خوش آمدید کہتے،سابق ... مزید-انڈونیشیا 5 تا 7 اپریل تک کراچی میں ہونے والی 16ویں کراچی ایکسپو میں شرکت کرے گا، قونصل جنرل انڈونیشیا تاجر برادری کو مزید سہولتیں فراہم کرنا چاہتے ہیں دونوں اسلامی برادر ... مزید-طلبا تنظیموں پر پابندی نے کراچی کی قومی ’تہذیبی شناخت کو شدید نقصان پہنچایا‘حافظ نعیم الرحمن طلبہ کی صلاحیتوں کو نکھارنے والی سرگرمیوں کا انعقاد خوش آئند ہے ‘ ہمدرد ... مزید

GB News

گلگت بلتستان کے عوام کو سیاسی و معاشی حقوق کی فراہمی یقینی بنائیں گے،تحریک انصاف کا انتخابی منشور

Share Button

اسلام آباد(لیاقت علی انجم سے)تحریک انصاف نے اپنے انتخابی منشور میں جہاں ایک کروڑ ملازمتیں دینے اور 50لاکھ سستے مکانات بنانے کا وعدہ کیا گیا ہے وہاں خصوصی طور پر گلگت بلتستان کو واضح اہمیت دی گئی ہے ، انتخابی منشور میں کہا گیا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف گلگت بلتستان کے عوامکی پاکستان کے ساتھ وابستگی کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے جو کہ مثالی اور قربانیوں کی تاریخ سے عبارت ہے ، ہم گلگت بلتستان کے عوام کو سیاسی و معاشی حقوق کی فراہمی یقینی بنائیں گے، انتخابی منشور میں اس بات کا بھی اعتراف کیا گیا ہے کہ گلگت بلتستان کو گوناں گوں مسائل کا سامنا ہے جن میں معاشی ترقی کا فقدان، اقتصادی راہداری منصوبے یعنی سی پیک میں محدود شرکت ، مرکزیت کی حامل نوکر شاہی اور پہلے ہی سے قدرے بے اختیار قانون ساز اسمبلی جیسے مسائل شامل ہیں۔ یہ مسائل گلگت بلتستان کے عوام کیلئے ان کی قدرتی اہلیت و قابلیت اور وسائل کے مناسب استعمال کی راہ میں بڑی رکاوٹ ہیں، انتخابی منشور میں آگے چل کر وعدہ کیا گیا ہے کہ ہم قانون ساز اسمبلی کو خودمختاری دے کر گلگت بلتستان کے عوام کو بااختیار بنائیں گے ، سیاحت ، معدنیات اور قابل تجدید توانائی میں سرمایہ کاری کے ذریعے خطے میں بڑی معاشی سرگرمی کی راہ ہموار کریں گے ، انتخابی منشور میں کہا گیا ہے کہ ہم راہداری منصوبے میں مقامی آبادی کی شمولیت کے ساتھ گلگت بلتستان کے عوام کو منصوبے سے مستفید ہونے کے ٹھوس مواقع بھی فراہم کریں گے ، انتخابی منشور میں سیاحت فروغ دینے کا بھی وعدہ کیا گیا ہے تحریک انصاف کے منشور میں گلگت بلتستان کو خاص اہمیت دینے سے یہ بات واضح ہوتی ہے کہ پی ٹی آئی کی مرکزی قیادت گلگت بلتستان کے مسائل سے آگاہ ہے دوسری طرف اس کی ایک وجہ یہ بھی ہو سکتی ہے کہ صوبائی قیادت کی جانب سے پارٹی کی مرکزی قیادت کوخطے کے مسائل سے باخبر رکھا ہوا اور تفصیلی طور پر بریف کیا گیا ہو دونوں صورتوں میں خوش آئند پہلو موجود ہے اس سے پہلے پیپلزپارٹی نے اپنے منشور میں گلگت بلتستان کو مزید بااختیار بنانے کا وعدہ کیا تھا دوسری جانب مسلم لیگ ن کے انتخابی منشور میں گلگت بلتستان کو نکال دینے سے کئی سوالات جنم لے رہے ہیں پاکستان کی سب سے بڑی پارٹی جس نے پنجاب میں مسلسل دس سال او وفاق میں پانچ سال کامیابی سے مکمل کیے ہوں اس پارٹی کو گلگت بلتستان سے دلچسپی نہ ہونے کی وجہ کیا ہو سکتی ہے؟ سیاسی ماہرین کے مطابق چونکہ مسلم لیگ ن اس وقت بحرانی کیفیت سے گزر رہی ہے پارٹی کی سیاسی آکسیجن کا دارومدار عدالتوں کے فیصلوں پر منحصر ہے اس لئے یہی وجہ ہو سکتی ہے کہ گلگت بلتستان کو اپنے منشور میں شامل کرنے کی فرصت ہی نہ ملی ہو ، تاہم اس سے صوبائی قیادت کی نااہلی عیاں ہوتی ہے ، انہیں چاہیے تھا کہ انتخابی منشور میں گلگت بلتستان کو شامل کرنے کیلئے مرکزی قیادت کو قائل کرتے اور انہیں تفصیلی بریفنگ دی جاتی، ن لیگ کی صوبائی قیادت کی جانب سے الفاظ کی جادوگری کے ذریعے عوام کے سامنے لاکھ تاویلیں پیش کریں لیکن سیاسی مخالفین اس معاملے کو ہر صورت کیچ کریں گے اور یہ مسلم لیگ ن گلگت بلتستان کے مستقبل کیلئے کوئی نیک شگون نہیں ہو گا۔

Facebook Comments
Share Button