تازہ ترین

Marquee xml rss feed

عمران خان کے لیے راستہ صاف، سابق وفاقی وزیر نے این اے 131لاہور سے کاغذات نامزدگی واپس لے لیے پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کرنے والے ہمایوں اختر نے عمران خان کے ... مزید-سندھ کے عوام کو وڈیروں نے اپنی طاقت کے زور سے نسل درنسل غلام بنائے رکھا، عائشہ گلالئی پیپلز پارٹی نے سندھ کو 10 میں بہتر بنانے کے بجائے مزید خراب کردیا، ضلع سجاول میں ... مزید-سندھ پولیس کی سطح پر شجرکاری مہم کا فوری طور پر آغاز کیا جائے ، آئی جی سندھ کی ہدایات-شاہ عبدالطیف بھٹائی انسائیکلوپیڈیا کی تین جلدیں شائع ہونا تھیں جن میں سے آج پہلی جلد شائع ہوگئی، نگراں وزیراعلیٰ سندھ شاہ عبداللطیف بھٹائی انسائیکلو پیڈیا سندھی ... مزید-پی پی پی کے حلقہ پی بی 25سے امیدوار شریف خلجی (کل) پریس کانفرنس کرینگے-سندھ کو پیپلزپارٹی اور ایم کیو ایم نے مل کر تباہ کردیا ہے، عوام بنیادی مسائل حل نہ ہونے سے پریشان ہیں، مصطفی کمال سندھ میں اگلا وزیر اعلیٰ پی ایس پی کا یا پھر ہمارا حمایت ... مزید-ایم ایم اے کے انتخابی دفتر پر پولیس کی فائرنگ پولیس اہلکار کو معطل کر کے واقعے کی مزید انکوائری کا حکم دے دیا گیا، پولیس-حکومت اور اس کے کارندوں نے 80 سالہ بزرگ پنشنرز کو عمر کے آخری دور میں بھی شدید عذاب میں مبتلا کررکھا ہے، جنرل سیکریٹری ایمپلائز ایسوسی ایشن چیف جسٹس کے ریمارکس عدالت ... مزید-عابد باکسر نے شہباز شریف کے لیے نئی مصیبت کھڑی کردی جائیداد ہتھیانے کے لیے مجھ سے قتل کروایا گیا،بعد میں مجھے ہی کیسسز میں ملوث کروا کر جعلی مقابلے میں قتل کروانے کی کوشش ... مزید-بلاول بھٹو زرداری انتخابات میں شفافیت پر بات کرنے سے قبل نواز شریف کا ساتھ دینے پر قوم سے معافی مانگیں ،ْفواد چوہدری بلاول کی جانب سے کسی نام نہاد سازش کی جانب اشارہ ... مزید

GB News

پاکستان تحریک انصاف نے انتخابی منشور2018کا اعلان کر دیا

Share Button

اسلام آباد(آئی این پی)پاکستان تحریک انصاف نے انتخابی منشور2018کا اعلان کر دیا جس میں پاکستان کو حقیقی معنوں میں اسلامی فلاحی ریاست بنانے،کرپشن کے خاتمے ، ایک کروڑ نوکریاں دینے اور کم آمدنی والے افراد کیلئے 50لاکھ گھر بنا کر دینے کے عزم کا اظہار کیا گیا ہے۔پارٹی منشور کا اعلان کرتے ہوئے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا کہ اقتدار میں آکر بے روزگاری کا خاتمہ کریں گے،ایف بی آر میں ریفارمز لائیں گے اور عوام کے ٹیکس کا پیسہ عوام پر خرچ کریں گئے، اداروں کو مضبوط بنائیں گے جبکہ اخراجات میں کمی اور آمدنی میں اضافہ کریں گئے، ایسا نظام مرتب کریں گے کہ ملک میں ٹیکس کم کر کے زیادہ ریونیو حاصل ہو،ٹیکسٹائل ایکسپورٹ بڑھانے کیلئے پالیسی مرتب کر لی، پاکستان میں سیاحت کو فروغ دینے کیلئے ہر سال 4نئی جگہیں متعارف کروائیں گے، فوری انصاف کیلئے عدالتی اصلاحات کا جامع پروگرام شروع کریں گے، گلت بلتستان کو مزید اختیارات سونپیں گے، پاکستان کو کاروبار دوست ملک بنائیں گے اوردو طرفہ روابط قائم کر کے سی پیک کو گیم چینجر میں تبدیل کریں گے،صحت انصاف کارڈ کا دائرہ کار پورے ملک میں وسیع کیا جائیگا، تعلیم اور روزگار میں درپیش مسائل کو دور کرتے ہوئے نوجوانوں پر خصوصی سرمایہ کاری کرینگے،ملک بھر میں پینے کا صاف پانی فراہم کیا جائیگا،کم از کم دفاعی اصلاحیت یقینی بنانا ہماری دفاعی پالیسی کا مرکزی اصول ہوگا،ملک میں 10 ارب درخت لگائیں گے ، تنازعات آب کے حل کیلئے ہر ممکنہ فورم استعمال کرینگے،پختونخوا کی طرز پر غیر سیاسی پولیس کاماڈل دیگر صوبوں میں بھی متعارف کروائیں گے، زراعت کو کسان کے لئے منافع بخش بنائیں گے ، پیداواری لاگت کم کریں گے، زرعی منڈیوں کی اصلاح کریں گے اور ویلیو ایڈیشن میکانائزیشن کے لئے سہولیات کی فراہمی کا بیڑا اٹھائیں گے۔ہمیں اپنے ہی منشور پر عمل کرنے کیلے سخت محنت کرنا پڑے گی۔پیر کو پاکستان تحریک انصاف نے اپنے انتخابی منشور2018کا اعلان کر دیا جسکی تقریب نجی ہوٹل میں منعقد ہوئی،تقریب میں تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان سمیت پارٹی کے دیگر سینئر رہنمائوں نے شرکت کی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا کہ پاکستان کے مسائل کا کوئی آسان حل نہیں ہے، ہمارا ویژن ہے کہ ہم ملک کو اسلامی فلاحی ریاست بنائیں گے، آنے والی حکومت کے لیے معیشت بڑا چیلنج ہوگا، ہم گورننس سسٹم میں تبدیلی سے جدت لاسکتے ہیں، کوئی نہ سمجھے ہم منشور کو آسانی سے لاگو کریں گے، ہمیں اپنے ہی منشور پر عمل کرنے کیلے سخت محنت کرنا پڑے گی، پاکستان میں ریونیو اکٹھا کرنے کا نظام ہی نہیں، یہ بھی ایک چیلنج ہے کہ پیسہ کیسے اکٹھا کرنا ہے، اس کے لیے ایف بی آر میں اصلاحات بہت ضروری ہیں کیونکہ وہاں پیسہ کرپشن سے ختم ہوجاتا ہے، اگر پیسہ اکٹھا کرنا ہے تو ایف بی آر کو ٹھیک کرنا ہوگا، ہم حکمرانوں کی عیاشی ختم کریں گے، عوام کے ٹیکس کا پیسہ عوام پر ہی خرچ کریں گے، لوگوں کو جب ایک بار یقین آجائے گاکہ پیسہ ان پر خرچ ہوگا تو قوم ٹیکس دے گی، 10ارب ڈالر ہر سال پاکستان سے باہر جاتا ہے، اس لیے کرپشن پر قابو پانا سب سے اہم ہے۔عمران خان نے کہا کہ جب روپیہ گرتا ہے تو چیزیں مہنگی ہو جاتی ہیں، مدینہ کی ریاست پہلی اسلامی فلاحی ریاست تھی، آنے والی حکومت کو بڑے معاشی چیلنجز کاسامنا ہو گا، گزشتہ دس سال میں قرضہ بہت بڑھا، ہمیں حکومتیں چلانے کیلئے نظام کو بالکل چینج کرنا ہے، 60کی دہائی میں پاکستان کی سول سروس بہت مقبول تھی، سول سروس کا امتحان بہت مشکل اور میرٹ پر ہوتا تھا، 90کی دہائی کے بعد ہماری بیورو کریسی کی اہلیت کمزور ہو گی، بیورو کریسی سے ادارے کمزور پڑ گئے، اداروں کو کمزور کیا گیا، ہمارے ادارے تباہ کئے گئے، جس کے باعث کرپشن بڑھی، کے پی میں پولیس کا کریڈٹ سب سے اچھا ہے، ہم نے پولیس کو غیر سیاسی بنانے کیلئے ایکٹ پاس کیا، کے پی میں دہشت گردی کے واقعات کم ہوئے، ہمارے دو ایم این ایز اور ایک منسٹر کو خود کش حملوں میں شہید کیا گیا، پولیس کی پرفارمنس کی وجہ سے آج لوگ جلسوں میں حصہ لے رہے ہیں، آج کوئی ثابت نہیں کر سکتا ہے کہ ہم نے پیسے لے کر بیوروکریٹس کی تعیناتیاں کیں، اسٹیٹ جو پیسہ کمائے وہ عوام پر خرچ کریں، ترقیاتی ممالک میں لوگ ٹیکس دیتے ہیں جس سے ملک چلتا ہے، لوگوں کو غربت سے نکالنا ہے اور کیسے اور نوجوانوں کو روزگار مہیا کرنا ہے، ہمارے منشور میں زراعت کے نظام کو بہتر بنانے کیلئے حکمت عملی کی گئی ہے،منشور میں یہ چیلنج ہے کہ ہم پاکستان میں نوکریاں کیسے دیں گے؟نوکریوں کا منشور اس لئے پڑھا ہے کہ پاکستان میں دوسرے نمبر پر نوجوان آتے ہیں، ہم نے اپنے منشور میں ایک کروڑ نوکریاں شامل کی ہیں، اس کیلئے ہم لوکاسٹ ہائوسنگ اسکیم لائیں گے، ہم پانچ سالوں میں 50لاکھ گھر بنائیں گے، اس معاملے پر ہم نے پاکستان بلڈرز ایسوسی ایشن سے رابطہ کیا، اگر ہم اس میں کامیاب ہو جائیں گے تو اس سے پاکستان کی معاشی صورتحال کے ساتھ بے روزگاری بھی کم ہو جائے گی، ہماری کوشش ہے کہ ون ونڈو آپریشن کریں، دوسرا یہ ہے کہ ہم سی پیک سے فائدہ اٹھا سکیں، اس کیلئے ہمیں پوری تیاری کرنی ہے، سی پیک گیم چینجر نہیں ہے، سی پیک گیم چینجر بن سکتا ہے، سمالر میڈیم انڈسٹری نوجوانوں کیلئے روزگار کی بہترین مواقع ہو سکتی ہے، ٹورازم ایک بہترین موقع ہے جس سے بہترین انوسٹمنٹ ہو سکتی ہے، ہم نے اب چار نئے ٹورازم کی جگہ کھولی ہیں، ٹورازم سوشل میڈیا کی وجہ سے مشہور ہو رہی ہے، پاکستان میں سب سے زیادہ ٹورسٹ آرہے ہیں، اس سے بھی روزگار کا بہترین موقع مل سکتا ہے،میں پوری دنیا پھرا ہوں، ٹورازم کی بہترین جگہ نہیں جتنی یہاں ہیں، اوورسیز پاکستانی بہت زیادہ آرہے ہیں، ہم نے کے پی میں روزگار کیلئے منی مائیکرو ہائیڈروشین قائم کئے، اب تک 3سو چھوٹے سٹیشن بنا دیئے ہیں، یہ بھی ایک طریقہ ہم نے متعارف کروایا ہے، ایف بی آر کی اصلاح کو بہتر کر کے بہتر ادارہ بنائیں گے، انرجی چیلنج کیلئے اقدامات کریں گے، انٹرنیشنل ٹریڈ بڑھائیں گے، زراعت کے نظام کو بہتر بنائیں گے، پانی کی کمی کے مسائل کو حل کریں گے، چھوٹے کسان کے مسائل حل کئے جائیں گے، لائیو سٹاک انڈسٹری بہتر بنائیں گے، دیامر بھاشا ڈیم جو کہ پانی کے وسائل کا بہترین ذریعہ ہے، ہم نے خرچ کم کرنے اور آمدنی بڑھانی ہے، توانائی چیلنج کا مقابلہ کرنے کیلئے جامع پلان ہے، برآمدات بڑھانے کیلئے ٹیکسٹائل پالیسی لے کر آئیں گے۔

Facebook Comments
Share Button