تازہ ترین

Marquee xml rss feed

گاڑیوں اور بھینسوں کے بعد 11کھلاڑی بھی نیلام کیے جائیں کھلاڑی نیلام کرنے سے تین ہزار ارب GB ڈیٹا اور 20 ہزار میگا واٹ سالانہ بجلی کی بچت ہو گی جو قوم کرکٹ میچ دیکھنے میں خرچ ... مزید-پنجاب کو آ پریٹو بینک اور سوسائٹی کے ریکارڈ روم میں آگ لگائے جانے کا انکشاف آگ شارٹ سرکٹ سے نہیں بلکہ پٹرولیم سے لگائی گئی تھی،جس وقت آ گ لگی اس وقت چوکیدار بھی موجود نہیں ... مزید-نواز شریف روزانہ بیگم کلثوم نواز کی قبر پر کچھ وقت گزارتے ہیں نواز شریف کو پچھتاوا ہے کہ وہ آخری وقت میں کلثوم نواز کے ساتھ نہیں تھے-پاکستان چین کے تعاون سے گوادر پورٹ کو دنیا کی جدید ترین بندرگاہ بنا کر سمندری راستے سے عالمی تجارت کو فروغ دینے کیلئے بھرپور اقدامات کر رہا ہے وفاقی وزیر منصوبہ بندی، ... مزید-امریکی سرمایہ کاروں کو پاکستان کے دورے کی دعوت، ویزے آسان بنانے کی کوشش جاری ہے امریکا میں پاکستان کے سفیر علی جہانگیر صدیقی کی ایف پی سی سی آئی کے صدر غضنفر بلور سے ... مزید-سابق صدر پرویز مشرف کی دبئی میں 4.5 ملین سے زائد کی جائیداد سپریم کورٹ میں جمع کروائے گئے بیان حلفی میں جائیدادوں کی تفصیل سامنے آ گئی-وزیراعظم عمران خان کا آج قوم سے خطاب متوقع وزیراعظم عمران خان قوم سے خطاب میں اہم اعلان کریں گے-کیپٹن (ر) صفدر کو بیرون ملک بھیجنے کی تیاریاں کیپٹن (ر) صفدر کو علاج کے لیے بیرون ملک منتقل کیا جا سکتا ہے-ضمنی انتخابات میں تحریک انصاف کی جیت یقینی ہے،لیاقت خان خٹک-چترال میں چینی انجینئرزکی گاڑی کوحادثہ ، 6 افراد زخمی

GB News

چین ہماری بحری مشقوں کی جاسوسی کررہا ہے،امریکہ

Share Button

امریکہ نے کہا ہے کہ چین نے دنیا کی سب سے بڑی بین الاقوامی بحری مشقوں کی جاسوسی کیلئے اپنا جہاز بھیج دیا ہے،یہ مشقیں ہوائی میں ہورہی ہیں۔جنوبی چینی سمندر میں چینی اقدامات کے باعث ان مشقوں میں چین کو شرکت کی دعوت نہیں دی گئی،رم آف دی پیسفیک(بحرالکاہل کا گھیرا) کے نام سے ہونے والی مشقوں میں 25ممالک شرکت کر رہے ہیں جن میں نیوزی لینڈ بھی شامل ہے، ان مشقوں میں ان ممالک کے 25ہزار ارکان بحری جہازوں،آب دوزوں،جنگی طیاروں کے ساتھ شریک ہیں،بحری جہاز ہوائی کے ساحل پراہم اقتصادی زون میں موجود ہے اس طرح یہ تصور کیا جا سکتا ہے، یہ ٹائپ 815ڈانگ دیائو کلاس جاسوسی کرنے والا بحری جہاز ہے۔امریکی بحر الکاہل بیڑے کے ترجمان ٹم گور مین نے جاپان ٹائمز کو بتایا ہمیں توقع ہے کہ یہ چینی جاسوسی جہاز امریکی سمندری سرحدوں سے دور رہے گا اور یہ کوئی ایسا اقدام نہیں کریگا جس سے ہماری بحری مشقیں متاثر ہوں۔

Facebook Comments
Share Button