تازہ ترین

Marquee xml rss feed

بچے کی ولادت دوہری خوشی لائے گی بچے کی ولادت پر ماں کے لیے 6 اور باپ کے لیے 3 ماہ کی چھٹیوں کا بل سینیٹ میں پیش کر دیا گیا-وزیر اعظم عمران خان 21 نومبر کو ملائشیا کے دورے پر روانہ ہوں گے وزیر اعظم ، ملائشین ہم منصب سے ملاقات کے علاوہ کاروبای شخصیات سے ملاقاتیں کریں گے-متعدد وزراء کی چھٹی ہونے والی ہے 100 روز مکمل ہونے پر 5,6 وفاقی وزراء اور متعدد صوبائی وزراء اپنی ناقص کارکردگی کے باعث اپنی وزارتوں سے ہاتھ دھو بیٹھیں گے-نوازشریف،مریم نوازاورکیپٹن(ر)صفدرکی رہائی کےخلاف نیب اپیل کامعاملہ سپریم کورٹ نے نیب اپیل پر لارجر بنچ تشکیل دینے کا حکم جاری کردیا-ڈیرہ اسماعیل خان میں جشن عید میلاد النبی ؐکی تیاریاںعروج پرپہنچ گئیں-آئی جی سندھ نے حیدرآباد میں واقع مارکیٹ میں نقب زنی کا نوٹس لے لیا-عمر سیف سے چیئرمین پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کا اضافی چار ج واپس لے لیا گیا-پنجاب کے 10ہزار فنکاروں کے لئے 4لاکھ روپے مالیت کے ہیلتھ کارڈ جاری کئے جائیں گے‘فیاض الحسن چوہان صوبے میں 200فنکاروں اور گلوکاروںمیں ان کی کارکردگی,اہلیت اور میرٹ کی ... مزید-پاکستان میں امیر اور غریب کے درمیان طبقاتی فرق اضافہ ہوگیا ہے ،ْ دن بدن فرق بڑھتا جارہاہے ،ْ ورلڈبینک-وزیراعظم جنوبی پنجاب صوبے سے متعلق جلد اہم اقدامات کا اعلان کرینگے جنوبی پنجاب صوبے کے قیام کیلئے وزیراعظم عمران خان اتحادی جماعتوں اور اپوزیشن ارکان پر مشتمل کمیٹی ... مزید

GB News

چیف کورٹ، فورتھ شیڈول کے خلاف درخواست سماعت کیلئے مقرر

Share Button

ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن عوامی ایکشن کمیٹی اوردیگر کئی تاجر اورسیاسی رہنمائوں نے شیڈول فورتھ میں نام شامل کرنے کے خلاف چیف کورٹ (عدالت عالیہ )گلگت بلتستان میںدائر رٹ پٹیشن کو قابل سماعت قراردے کر عدالت نے وفاقی وزارت داخلہ،حکومت گلگت بلتستان ،سیکرٹری داخلہ گلگت بلتستان سمیت 14فریقین کو نوٹس جاری کرنے کا حکم صادر کردیاہے ،جمعرات کے روز چیف کورٹ کے چیف جسٹس وزیر شکیل احمد اورجسٹس علی بیگ پر مشتمل ڈویژنل بنچ نے دائر کی گئی رٹ پٹیشن کو قابل سماعت قراردیا عدالت نے بذریعہ وفاقی سیکرٹری داخلہ وفاقی حکومت جبکہ بذریعہ چیف سیکرٹری گلگت بلتستان حکومت اور سیکرٹری داخلہ گلگت بلتستان سمیت متعلقہ کمشنرز،ڈپٹی کمشنرز اورمتعلقہ اضلاع کے ضلعی پولیس سربراہان کو نوٹسز جاری کرنے کا حکم دیا ہے ۔عدالت نے رٹ پٹیشن میں بنائے گئے فریقین کو ایک ہفتے کے اندر حاضر ہونے کا حکم دیا ہے 7صفحات پر مشتمل رٹ پٹیشن میں پٹیشنز نے ان کے نام شیڈول فور میں شامل کرنے کو خلاف قانون قراردیا ہے اورموقف اختیار کیا ہے کہ جن جن افراد پر شیڈول فور انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت لگایا گیا ہے یہ صرف دہشت گردی میں ملوث افراد پر لاگو ہوتا ہے رٹ پٹیشن میں پٹیشنرز نے موقف اختیار کیا ہے کہ ہم سب شریف شہری ہیں واضح رہے کہ گزشتہ دنوں کئی افراد کے نام شیڈول فور میں شامل کرنے کے بعد گلگت سکردواورگاہکوچ میں شیڈول فورکے خلاف مظاہرے ہوئے تھے گلگت کے احتجاجی مظاہرے میں ہائی کورٹ بار کے صدرراجہ شکیل نے اعلان کیا تھا کہ شیڈول فور کے خلاف قانونی جنگ میں ہائی کورٹ بار عوامی ایکشن کمیٹی اور اورانجمن تاجران کا ساتھ دے گی۔جس کی بنیاد پر ہائی کورٹ بھی پٹیشنرز میں شامل ہوگئی ہے ۔

Facebook Comments
Share Button