تازہ ترین

Marquee xml rss feed

اںڈے برآمد ہونے کے بعد سیکیورٹی اہلکار چوکنے ہوگئے رانا ثنا اللہ نے کہا ہے کہ سیکیورٹی اہلکارہر بار ان سے پوچھتے ہیں کہ ان کے پاس انڈے تو نہیں ہیں-گرفتار رکن کو پنجاب اسمبلی میں لانے کیلئے شہبازشریف نے رولز میں ترمیم نہیں کی تھی‘ چودھری پرویزالٰہی سب سے زیادہ فلاحی کام ہمارے دور میں ہوئے‘باباجی خالد محمود مکی ... مزید-یکم جنوری سے تمام کمرشل ڈرائیورز کی سکریننگ اور مرحلہ وار خصوصی تربیتی کورسز کرانے کا فیصلہ 6ماہ میں ہر ڈرائیور کو اس عمل سے گزارا جائے ،آگاہی مہم جاری رکھی جائے‘عبدالعلیم ... مزید-آئی ایم ایف کی شرائط کے انتظار سے پہلے ہی معیشت کی بہتری کیلئے ازخود اقدامات کئے ‘ اسد عمر اصلاحات کے معاملے پر آئی ایم ایف اور حکومت کے درمیان اختلافات ہیں ،اقدامات ... مزید-سعودی عرب سے امداد حاصل کرنے پر پاکستان کو شرمندگی نہیں ہونی چاہیئے ہمیں شرم کرنے کا کہنے کی بجائے مغربی ملکوں کے رہنماوں کو شرم آنی چاہیے جو جمہوریت اور آزادی کی بات ... مزید-لندن میں پاکستانی تاجر کا کروڑوں کا کاروبار جل کر راکھ نسل پرستوں نے پاکستانی تاجر کی کروڑوں روپے مالیت کی گاڑیاں جلا ڈالیں-احتساب عدالت نے شوکت عزیز کیخلاف دائر ریفرنس میں شریک ملزم عارف علاؤالدین کو عدم حاضری کی بناء پر اشتہاری قرار دیدیا-جنگی حکمت عملی میں ہمیں ہائبرڈوار فئیر اور سائبر وار فئیر کے خلاف چوکنا رہنا ہے ،ْ نیول چیف ایڈمرل ظفر محمود عباسی جیو اسٹریٹجک حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے ہمیں اپنے قومی ... مزید-ْ پروٹوکول میں جو بات بتائی گئی اس میں کوئی بھی چیز یہاں موجود نہیں ،ْ چیف جسٹس ثاقب نثار-امریکہ نے پاکستان کو باعث تشویش ممالک پر عائد معاشی پابندیوں سے استثنیٰ دے دیا گذشتہ روز امریکہ نے پاکستان کو مذہبی آزادی کی خلاف ورزی کرنے والے ممالک کی فہرست میں ... مزید

GB News

دہشت گردوں کے خلاف ٹارگٹڈ آپریشن وقت کی اہم ضرورت ہے،کیپٹن (ر) محمد شفیع 

Share Button

گلگت ( ثاقب عمر سے )قائد حز`ب اختلاف کیپٹن (ر) محمد شفیع نے کہا ہے کہ مٹھی بھر دہشت گر دوں کو اگر وزیر اعلیٰ قابو نہیں کر سکتا ہے تو استعفیٰ دینے کی ضرورت ہے وزیر اعلیٰ چیف ایگزیکٹیو ہے اور اس کے پاس اختیارات ہیں اور جو دہشت گرد ہیں ان کا بھی وزیر اعلیٰ سمیت کابینہ کو بھی علم ہے پھر بھی ٹا رگٹڈ آپریشن میں تا خیری حر بے استعمال کر نا علاقے کے مفاد میں نہیں ہے اس سے قبل دیامر میں جو سکولو ں کے واقعات رونما ہو ئے اور مختلف سانحات ہو ئے اس پر ایکشن ہو تا تو آج اس قسم کے واقعات نہیں ہو تے ۔انہوں نے کے پی این سے گفتگو کر تے ہو ئے کہا کہ سابقہ سکولوں کو دہشت گردی کا نشانہ بنا نے والوںکو سر پر بھٹیا گیا اور وزاتیں حا صل کی گئی اور اس وقت کا روائی نہیں کی گئی جس کا خمیازہ آج سامنے آرہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مٹھی بھر دہشت گردوں کے ہاتھوں حکومت یر غمال ہے اور ابھی تک وزیر اعلیٰ نے ٹارگٹڈ آپریشن سے روکا ہوا ہے اور پولیس بھی اس وقت آپریشن کے لیئے تیار ہے ۔ ا نہوں نے کہا کہ شریف شہری ، علماء کرام اور جر گے کے افراد نے دہشت گردوں کے خلاف اپنا فیصلہ سنا دیا ہے اب دیامر کے عوام بھی اس قسم کے دہشت گردوں سے تنگ آئے ہیں اور ان دہشت گردوں کے خلاف ٹارگٹڈ آپریشن وقت کی اہم ضرورت ہے تا کہ پھر سے کو ئی سانحہ رو نما ء نہیں ہوسکے ۔انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کی ڈوریاں کہا ہے یہ کا بینہ سمیت وزیر اعلیٰ کو علم ہے ۔ اس سے قبل دہشت گردی کے جو واقعات ہو ئے ہیں ان کی ویڈیوز سوشل میڈیا میں وائرل ہو چکی ہیں پھر بھی حکومت خاموش ہے ۔انہوں نے کہا کہ اگر دیا مر بھا شہ ڈیم اور سی پیک کو کا میاب بنا نا ہے تو ان مٹھی بھر دہشت گردوں کے خلاف ایکشن لینا ہو گا ۔ انہوں نے کہا کہ دیامر جر گہ اور دیامر کے عوام نے دہشت گردوں کے خلاف آپریشن کا عندیہ دے دیا ہے تو پھر کس بات کا انتظار ہے اور مزید دیر ہو ئی تو حا لات مزید سنگین ہو نگے ۔انہوں نے کہا کہ کا بینہ اجلاس سے کچھ ہو نے والا نہیں ہے اس کے لیئے وزیر اعلیٰ خود با ختیار ہیں اگر وہ دہشت گردوں کے خلاف ایکشن لیں تو لے سکتے ہیں اس میں مشاورت کی ضرورت نہیں دیامر کے عوام سمیت پورے گلگت بلتستان کے عوام دہشت گردوں کے خلاف ہیں لیکن وزیر اعلیٰ کا بینہ کے اجلاس میں مشاورت کے لیئے عوام کے سامنے ڈھونگ رچانے سے بہتر ہے فوری طور پر ان دہشت گردوں کے خلاف کاروائی کی جا ئے او ر ان کا نام و نشان ختم کیا جا ئے ۔ انہون نے کہا کہ سوات اور وزیرستان میں ٹارگٹڈ آپریشن ہو سکتا ہے تو دیا مر میں کیو ں نہیں ہوسکتا ہے اور اس وقت پولیس بھی آپریشن کے لیئے تیار ہے لیکن وزیر اعلیٰ خود دیر کروا رہے ہیں جو کہ علاقے کے لیئے علاقے کی تعمیر ترقی کے لیئے مفید ثابت نہیں ہو گا ۔انہوں نے کہا کہ سانحہ کوہستان ، سانحہ لولوسر سانحہ چلاس سمیت چا ئینز کو اغوا کر نے والوں کے خلاف آپریشن ہو تا تو آج یہ نوبت نہیں آتی حکومت کو سب علم ہے کہ دہشت گردی کی نرسریاں کہا ںہیں اس لیئے حکومت نا اہلی برتننے کے بجا ئے فوری طور پر گلگت بلتستان کو محفوظ بنانے کے لیئے اقدام اٹھا ئے اور دہشت گردوں کے خلاف آپریشن شروع کرے ۔

Facebook Comments
Share Button