تازہ ترین

Marquee xml rss feed

بھارتی ہیکرز کی جانب سے پاکستانی ٹی وی چینلز اور اخبارات کی ویب سائٹس پر سائبر حملہ چینل 24، دی نیشن، نئی بات، روزنامہ پاکستان سمیت دیگر متعدد ٹی وی چینلز اور اخبارات کی ... مزید-پلوامہ واقعہ کے بھارتی پراپیگنڈا،چین نے بھارت کی حیلہ سازیوں کا سخت جواب دے دیا بھارت پلوامہ واقعہ کا ذمہ دار پاکستان اور چین کو ٹھہرانے سے گریز کرے،چینی سرکاری میڈیا-جعلی اکاؤنٹس کیس کی سماعت ، آصف زرداری کا کل سپریم کورٹ میں پیش نہ ہونے کا فیصلہ وکلاء ٹیم پیش ہو گی-نیب کی اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کی سفارش-سعودی عرب پاکستان کی پچھلی قیادت سے مایوس تھا،شاہ محمود قریشی سعودی عرب کی 20 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری تاریخ کی سب سے بڑی سرمایہ کاری ہے ، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ ... مزید-پاکستان کا بھارت کے جارحانہ رویے کے خلاف اقوام متحدہ کو خط لکھنے کا فیصلہ میں اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل کو خط لکھ رہا ہوں۔انکا کہنا تھا کہ میں خط میں لکھوں گا کہ بھارت ... مزید-وزیراعظم نے ہنگامی طور پر قومی سلامتی کونسل کا اجلاس طلب کرلیا اجلاس میں کونسل کے رکن خزانہ، دفاع، خارجہ، وفاقی وزرا، وزیرمملکت داخلہ، حساس اداروں کےسربراہان اورسیکیورٹی ... مزید-میں وزیر اعظم ہوتا تو سعودی ولی عہد کو ایوان سے خطاب کا موقع دیتا،یوسف رضا گیلانی حکومت کو چاہیے تھا کہ وہ اپوزیشن کو بھی مدعو کرتی تاکہ ہم بھی انکو خوش آمدید کہتے،سابق ... مزید-انڈونیشیا 5 تا 7 اپریل تک کراچی میں ہونے والی 16ویں کراچی ایکسپو میں شرکت کرے گا، قونصل جنرل انڈونیشیا تاجر برادری کو مزید سہولتیں فراہم کرنا چاہتے ہیں دونوں اسلامی برادر ... مزید-طلبا تنظیموں پر پابندی نے کراچی کی قومی ’تہذیبی شناخت کو شدید نقصان پہنچایا‘حافظ نعیم الرحمن طلبہ کی صلاحیتوں کو نکھارنے والی سرگرمیوں کا انعقاد خوش آئند ہے ‘ ہمدرد ... مزید

GB News

دہشت گردوں کے خلاف ٹارگٹڈ آپریشن وقت کی اہم ضرورت ہے،کیپٹن (ر) محمد شفیع 

Share Button

گلگت ( ثاقب عمر سے )قائد حز`ب اختلاف کیپٹن (ر) محمد شفیع نے کہا ہے کہ مٹھی بھر دہشت گر دوں کو اگر وزیر اعلیٰ قابو نہیں کر سکتا ہے تو استعفیٰ دینے کی ضرورت ہے وزیر اعلیٰ چیف ایگزیکٹیو ہے اور اس کے پاس اختیارات ہیں اور جو دہشت گرد ہیں ان کا بھی وزیر اعلیٰ سمیت کابینہ کو بھی علم ہے پھر بھی ٹا رگٹڈ آپریشن میں تا خیری حر بے استعمال کر نا علاقے کے مفاد میں نہیں ہے اس سے قبل دیامر میں جو سکولو ں کے واقعات رونما ہو ئے اور مختلف سانحات ہو ئے اس پر ایکشن ہو تا تو آج اس قسم کے واقعات نہیں ہو تے ۔انہوں نے کے پی این سے گفتگو کر تے ہو ئے کہا کہ سابقہ سکولوں کو دہشت گردی کا نشانہ بنا نے والوںکو سر پر بھٹیا گیا اور وزاتیں حا صل کی گئی اور اس وقت کا روائی نہیں کی گئی جس کا خمیازہ آج سامنے آرہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مٹھی بھر دہشت گردوں کے ہاتھوں حکومت یر غمال ہے اور ابھی تک وزیر اعلیٰ نے ٹارگٹڈ آپریشن سے روکا ہوا ہے اور پولیس بھی اس وقت آپریشن کے لیئے تیار ہے ۔ ا نہوں نے کہا کہ شریف شہری ، علماء کرام اور جر گے کے افراد نے دہشت گردوں کے خلاف اپنا فیصلہ سنا دیا ہے اب دیامر کے عوام بھی اس قسم کے دہشت گردوں سے تنگ آئے ہیں اور ان دہشت گردوں کے خلاف ٹارگٹڈ آپریشن وقت کی اہم ضرورت ہے تا کہ پھر سے کو ئی سانحہ رو نما ء نہیں ہوسکے ۔انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کی ڈوریاں کہا ہے یہ کا بینہ سمیت وزیر اعلیٰ کو علم ہے ۔ اس سے قبل دہشت گردی کے جو واقعات ہو ئے ہیں ان کی ویڈیوز سوشل میڈیا میں وائرل ہو چکی ہیں پھر بھی حکومت خاموش ہے ۔انہوں نے کہا کہ اگر دیا مر بھا شہ ڈیم اور سی پیک کو کا میاب بنا نا ہے تو ان مٹھی بھر دہشت گردوں کے خلاف ایکشن لینا ہو گا ۔ انہوں نے کہا کہ دیامر جر گہ اور دیامر کے عوام نے دہشت گردوں کے خلاف آپریشن کا عندیہ دے دیا ہے تو پھر کس بات کا انتظار ہے اور مزید دیر ہو ئی تو حا لات مزید سنگین ہو نگے ۔انہوں نے کہا کہ کا بینہ اجلاس سے کچھ ہو نے والا نہیں ہے اس کے لیئے وزیر اعلیٰ خود با ختیار ہیں اگر وہ دہشت گردوں کے خلاف ایکشن لیں تو لے سکتے ہیں اس میں مشاورت کی ضرورت نہیں دیامر کے عوام سمیت پورے گلگت بلتستان کے عوام دہشت گردوں کے خلاف ہیں لیکن وزیر اعلیٰ کا بینہ کے اجلاس میں مشاورت کے لیئے عوام کے سامنے ڈھونگ رچانے سے بہتر ہے فوری طور پر ان دہشت گردوں کے خلاف کاروائی کی جا ئے او ر ان کا نام و نشان ختم کیا جا ئے ۔ انہون نے کہا کہ سوات اور وزیرستان میں ٹارگٹڈ آپریشن ہو سکتا ہے تو دیا مر میں کیو ں نہیں ہوسکتا ہے اور اس وقت پولیس بھی آپریشن کے لیئے تیار ہے لیکن وزیر اعلیٰ خود دیر کروا رہے ہیں جو کہ علاقے کے لیئے علاقے کی تعمیر ترقی کے لیئے مفید ثابت نہیں ہو گا ۔انہوں نے کہا کہ سانحہ کوہستان ، سانحہ لولوسر سانحہ چلاس سمیت چا ئینز کو اغوا کر نے والوں کے خلاف آپریشن ہو تا تو آج یہ نوبت نہیں آتی حکومت کو سب علم ہے کہ دہشت گردی کی نرسریاں کہا ںہیں اس لیئے حکومت نا اہلی برتننے کے بجا ئے فوری طور پر گلگت بلتستان کو محفوظ بنانے کے لیئے اقدام اٹھا ئے اور دہشت گردوں کے خلاف آپریشن شروع کرے ۔

Facebook Comments
Share Button