تازہ ترین

Marquee xml rss feed

اںڈے برآمد ہونے کے بعد سیکیورٹی اہلکار چوکنے ہوگئے رانا ثنا اللہ نے کہا ہے کہ سیکیورٹی اہلکارہر بار ان سے پوچھتے ہیں کہ ان کے پاس انڈے تو نہیں ہیں-گرفتار رکن کو پنجاب اسمبلی میں لانے کیلئے شہبازشریف نے رولز میں ترمیم نہیں کی تھی‘ چودھری پرویزالٰہی سب سے زیادہ فلاحی کام ہمارے دور میں ہوئے‘باباجی خالد محمود مکی ... مزید-یکم جنوری سے تمام کمرشل ڈرائیورز کی سکریننگ اور مرحلہ وار خصوصی تربیتی کورسز کرانے کا فیصلہ 6ماہ میں ہر ڈرائیور کو اس عمل سے گزارا جائے ،آگاہی مہم جاری رکھی جائے‘عبدالعلیم ... مزید-آئی ایم ایف کی شرائط کے انتظار سے پہلے ہی معیشت کی بہتری کیلئے ازخود اقدامات کئے ‘ اسد عمر اصلاحات کے معاملے پر آئی ایم ایف اور حکومت کے درمیان اختلافات ہیں ،اقدامات ... مزید-سعودی عرب سے امداد حاصل کرنے پر پاکستان کو شرمندگی نہیں ہونی چاہیئے ہمیں شرم کرنے کا کہنے کی بجائے مغربی ملکوں کے رہنماوں کو شرم آنی چاہیے جو جمہوریت اور آزادی کی بات ... مزید-لندن میں پاکستانی تاجر کا کروڑوں کا کاروبار جل کر راکھ نسل پرستوں نے پاکستانی تاجر کی کروڑوں روپے مالیت کی گاڑیاں جلا ڈالیں-احتساب عدالت نے شوکت عزیز کیخلاف دائر ریفرنس میں شریک ملزم عارف علاؤالدین کو عدم حاضری کی بناء پر اشتہاری قرار دیدیا-جنگی حکمت عملی میں ہمیں ہائبرڈوار فئیر اور سائبر وار فئیر کے خلاف چوکنا رہنا ہے ،ْ نیول چیف ایڈمرل ظفر محمود عباسی جیو اسٹریٹجک حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے ہمیں اپنے قومی ... مزید-ْ پروٹوکول میں جو بات بتائی گئی اس میں کوئی بھی چیز یہاں موجود نہیں ،ْ چیف جسٹس ثاقب نثار-امریکہ نے پاکستان کو باعث تشویش ممالک پر عائد معاشی پابندیوں سے استثنیٰ دے دیا گذشتہ روز امریکہ نے پاکستان کو مذہبی آزادی کی خلاف ورزی کرنے والے ممالک کی فہرست میں ... مزید

GB News

کہیں بھی حکومت نام کی چیز نظر نہیں آرہی،امجد حسین ایڈووکیٹ

Share Button

گلگت(ثاقب عمر سے)پاکستان پیپلز پارٹی گلگت بلتستان کے صدر امجد حسین ایڈووکیٹ نے حفیظ الرحمن سے سوال کرتے ہوئے کہا ہے کہ جن دہشت گردوں نے دیامر میں سکول جلائے وہ پہلے بھی سکولوں کی توڑ پھوڑ سمیت جلانے میں ملوث تھے ان افراد کوفورتھ شیڈول سے باہر کیوں رکھاگیا ہے آخر نیشنل ایکشن پلان کس کے خلا ف بنا ہے صرف اپنے مخالفین کے خلاف ایکشن پلان استعمال کیا جارہا ہے اور سیاسی انتقام کے طورپرفورتھ شیڈول استعما ل کیا جارہا ہے انہوںنے کے پی این سے خصوصی گفتگوکرتے ہوئے کہاکہ جب تک حفیظ الرحمن ریکوزیشن نہ کرے فوج اور ریاستی ادارے کارروائی نہیں کرسکتے ہیں اب تک حفیظ الرحمن خاموش اس لئے ہیں کہ اس کا ووٹ بنک خراب ہوتا ہے انہوںنے کہا کہ سکولوں کو جلانے سے بدامنی کا ماحول پیدا ہوا ہے اس کی ذمہ داری حفیظ الرحمن پر عائد ہوتی ہے اور کہیں بھی حکومت نام کی چیز نظر نہیں آرہی ہے ۔ انہوںنے کہا کہ جو لوگ پہلے سے مطلوب تھے ان لوگوں کو حفیظ الرحمن نے فورتھ شیڈول سے باہر رکھا اور اپنے مخالفین کے خلاف سیاسی انتقام لے کر سیاسی کارکنوں کو فورتھ شیڈول میں ڈالا اس سے یہ بات واضح ہوتی ہے کہ دہشت گردوںکو حکومت تحفظ دے رہی ہے ہمیں خدشہ ہے کہ حکومت کے اس رویے سے دیگر اضلاع میں بھی اس قسم کے واقعات رونما نہ ہوں کیونکہ اس سے قبل ضلع غذر میں سکولوں کو جلانے اور توڑنے کے واقعات سامنے آئے ہیں انہوںنے کہا کہ دیامر میں سکول جلانے سے 20دن قبل وزارت داخلہ نے بتایا بھی تھا کہ گلگت بلتستان میں دہشتگردی ہوسکتی ہے لیکن صوبائی حکومت نے ہاتھ پر ہاتھ رکھ کر کوئی بھی ایکشن نہیں لیاگیا جس کی وجہ سے آج سکولوں کے جلانے کا واقعہ رونما ہوا ۔انہوںنے کہا کہ حفیظ الرحمن کا سرینڈر کرنا اپنے ووٹ بنک کو بچانا ہے اورالٹا دہشت گردی کے واقعے کو ریاستی اداروں کے سر پر ڈال کر جان چھڑانے کی کوشش کی آئندہ کوئی اس قسم کا واقعہ ہوا تو حفیظ الرحمن ذمہ دار ہوگا۔

Facebook Comments
Share Button