تازہ ترین

Marquee xml rss feed

بچے کی ولادت دوہری خوشی لائے گی بچے کی ولادت پر ماں کے لیے 6 اور باپ کے لیے 3 ماہ کی چھٹیوں کا بل سینیٹ میں پیش کر دیا گیا-وزیر اعظم عمران خان 21 نومبر کو ملائشیا کے دورے پر روانہ ہوں گے وزیر اعظم ، ملائشین ہم منصب سے ملاقات کے علاوہ کاروبای شخصیات سے ملاقاتیں کریں گے-متعدد وزراء کی چھٹی ہونے والی ہے 100 روز مکمل ہونے پر 5,6 وفاقی وزراء اور متعدد صوبائی وزراء اپنی ناقص کارکردگی کے باعث اپنی وزارتوں سے ہاتھ دھو بیٹھیں گے-نوازشریف،مریم نوازاورکیپٹن(ر)صفدرکی رہائی کےخلاف نیب اپیل کامعاملہ سپریم کورٹ نے نیب اپیل پر لارجر بنچ تشکیل دینے کا حکم جاری کردیا-ڈیرہ اسماعیل خان میں جشن عید میلاد النبی ؐکی تیاریاںعروج پرپہنچ گئیں-آئی جی سندھ نے حیدرآباد میں واقع مارکیٹ میں نقب زنی کا نوٹس لے لیا-عمر سیف سے چیئرمین پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کا اضافی چار ج واپس لے لیا گیا-پنجاب کے 10ہزار فنکاروں کے لئے 4لاکھ روپے مالیت کے ہیلتھ کارڈ جاری کئے جائیں گے‘فیاض الحسن چوہان صوبے میں 200فنکاروں اور گلوکاروںمیں ان کی کارکردگی,اہلیت اور میرٹ کی ... مزید-پاکستان میں امیر اور غریب کے درمیان طبقاتی فرق اضافہ ہوگیا ہے ،ْ دن بدن فرق بڑھتا جارہاہے ،ْ ورلڈبینک-وزیراعظم جنوبی پنجاب صوبے سے متعلق جلد اہم اقدامات کا اعلان کرینگے جنوبی پنجاب صوبے کے قیام کیلئے وزیراعظم عمران خان اتحادی جماعتوں اور اپوزیشن ارکان پر مشتمل کمیٹی ... مزید

GB News

آرمی چیف نے 13دہشت گردوں کو سزائے موت دینے کی توثیق کر دی

Share Button

راولپنڈی (آئی این پی) چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے 13دہشت گردوں کو سزائے موت دینے کی توثیق کر دی،7دہشت گردوں کو عمرقید کی سزا سنائی گئی،دہشت گردپاک فوج اور قانون نافذ کرنے والے اداروں پر حملوں، تعلیمی اداروں کی تباہی اور معصوم لوگوں کے قتل میں ملوث تھے۔پیر کو پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ( آئی ایس پی آر)کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ میں کہا گیا کہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے 13دہشت گردوں کو سزائے موت کی توثیق کر دی ہے،دہشت گرد 202 افراد کے قتل میں ملوث تھے، انہوں نے 151 عام شہریوں اور اور آرمڈ فورسز سمیت قانون نافذ کرنے والے اداروں کے 51اہلکاروں کو قتل کیا جب کہ ان کے حملوں میں 249 سیکیورٹی اہلکار زخمی بھی ہوئے، دہشت گرد پاک فوج اور قانون نافذ کرنے والے اداروں پر حملوں، تعلیمی اداروں کی تباہی اور معصوم لوگوں کے قتل میں بھی ملوث تھے۔دہشت گردوں کے خلاف فوجی عدالتوں میں مقدمات چلائے گئے،دہشت گردوں کے قبضے سے دھماکہ خیز مواد بھی برآمد ہوا تھا۔دہشت گردوں نے جوڈیشل مجسٹریٹ اور ٹرائل کورٹ کے آگے اپنے جرائم کا اعتراف اورانہیں فوجی عدالتوں نے سزائیں سنائیں۔سزائے موت پانے والوں میں منیر رحمان ولد فضل رحمان، محمد بشیر ولد عبدالرشید، حافظ عبداللہ ولد محمد اقبال، بخت اللہ خان ولد اجمل خان، شاہ خان ولد عبدالبادشاہ ، محمد سہیل خان ولد رضا خان،داؤد شاہ ولد میاں گل زادہ ، محمد منیر ولد سید بادشاہ، حبیب اللہ ولد محمد امین، محمد آصف ولد عنایت الرحمان ،گل شاہ ولد غنچہ گل،جلال حسین ولد شیر افضل خان اور علی شیر ولد رحمدال خان شامل ہیں۔

Facebook Comments
Share Button