تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیر اعظم عمران خان کی روضہ رسول ﷺ پر حاضری، سعودی حکام کی جانب سے روضہ رسولﷺ کے دروازے خصوصی طور پر کھول دیئے گئے-آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی چین کے سنٹرل ملٹری کمیشن کے وائس چیئرمین جنرل یانگ یوشیا سے ملاقات کی، دہشتگردی کے خاتمے، ہتھیاروں و سازوسامان کی ٹیکنالوجی اور ٹریننگ ... مزید-ڈاکٹر بننے کا خواب دیکھنے والی خاتون نے ٹرک چلانا شروع کر دیا ناگرپارکر سے تعلق رکھنے والی خاتون مالی مشکلات کی وجہ سے ڈاکٹر نہیں بن سکی تھی-موسمیاتی تغیرات کے اس دور میں بجلی پیدا کرنے کیلئے ایٹمی توانائی کا استعمال امید افزاء آپشن ہے، ہم پاکستان میں نیوکلیئر ٹیکنالوجی کے پرامن استعمال کے فروغ کیلئے آئی ... مزید-سعودی عرب اور پاکستان کے درمیان دوستانہ اور تاریخی تعلقات قائم ہیں، وزیراعظم عمران خان کا دورہ انتہائی اہمیت کا حامل ہے،سعودی عرب اور پاکستان دنیا میں اسلام کی حقیقی ... مزید-کیا کل نواز شریف اور مریم نواز کی سزا معطل کی جا رہی ہے؟ نیب عدالت کو مطمئن نہیں کر پا رہی اس سے اندازہ ہو رہا ہے کہ معاملات کس طرف جا رہے ہیں،ملزمان کا پلڑہ بھاری نظر آ ... مزید-اسد عمر اور اسحاق ڈار میں کوئی فرق نہیں اسد عمر نے بھی اعدادو شمار کا ہیر پھیر کر کے اسحاق ڈار والے کام کیے-پی ٹی آئی نے جو منشور دیاتھا اور جو اعلانات کیے ، ان پر عملدرآمد حکومت کا امتحان ہے ‘سراج الحق عوام نے انہیں گیس ، بجلی اور پٹرول مہنگا کرنے کے لیے نہیں، سستا کرنے کے ... مزید-اہل بیت کی عظم قربانی درحقیقت پوری امت مسلمہ کے لئے درخشاں مثال ہے‘چوہدری محمد سرور اللہ کی رسی کو مضبوطی سے تھامے رکھنا اور فرقہ واریت کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنا وقت کی ... مزید-وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کا وزیراعلیٰ سیکریٹریٹ کے مختلف شعبوں کا معائنہ

GB News

تعمیرات عامہ کے چیف انجینئر بلتستان اور گلگت سمیت 11آفیسران کے تبادلوں کا نوٹیفکیشن دو روز بعد واپس

Share Button

گلگت (سٹاف رپورٹر) محکمہ تعمیرات عامہ کے چیف انجینئر بلتستان اور گلگت سمیت 11آفیسران کے تبادلوں کا نوٹیفکیشن دو روز بعد واپس لے لیاگیا،اس سے پہلے چیف انجینئربلتستان کو ایس ای بلتستان ریجن تعینات کرکے چیف انجینئر کا اضافی چارج دیاگیا تھا جبکہ چیف انجینئر گلگت ریجن رشید احمد کو ایس ای تعینات کرکے چیف انجینئر کا اضافی چارج دیاگیا تھا اسی طرح چیف انجینئر دیامر ریجن بشارت اللہ کو بھی ایس ای بنا کر اضافی چارج دیدیاگیا تھابدھ کے روز ایک اور نوٹیفکیشن کے ذریعے گزشتہ نوٹیفکیشن کو واپس لے لیاگیا،اور تعمیرات عامہ نے 11 آفیسروں کے تبادلوں و تعیناتیوں کے نو ٹفکیشن کو واپس لیتے ہوئے سابقہ اسٹیشنوں میں ہی ڈیوٹیاں سرانجام دینے کا نیا حکم نامہ جاری کر دیا ہے ۔ 13 آفیسروں کے تبادلوں و تعیناتیوں کا نیا نوٹفکیشن جاری کر دیا گیا تمام آفیسروں کو سابقہ عہدوں پر ہی ڈیوٹیاں سرانجام دینے کا حکم دیا گیا ہے جن میں گریڈ 19 کے انجینئر وزیر محمد تاجور خان ‘ انجینئر رشید احمد ‘ انجینئر بشارت اللہ اور گریڈ 18 کے انجینئر شیر شاہ شامل ہیں جبکہ گریڈ 17 کے آفیسروں میں انجینئر عبد الہادی ‘ انجینئر محمد عیسی ‘ انجینئر مظہر حسین ‘ انجینئر محمد یاور عباس ‘ انجینئر اشرف حسین ‘ انجینئر شاہد علی اور گریڈ 16 کے عبد الوحید شامل ہیں بدھ کے روز ہی جاری ہونے والے نوٹفکیشن میں آفیسروں کے تبادلوں و تعیناتیوں کے دو نئے ٹیفکیشن بھی جاری کئے گئے ہیں جن کے مطابق گریڈ 19 کے سپرنٹنڈنٹ انجینئر سکردو و شگرانجینئر عامر حسین کو ایس ای ورکس ہیڈ کوارٹر بلتستان و پراجیکٹ ڈائریکٹر چھومک پل ‘ ایس ای ورکس بلتستان انجینئر نذیر حسین کو ایس ای پی اینڈ ڈی ہیڈ کوارٹر گلگت ‘ ایس ای گلگت سرکل (او پی ایس )گریڈ 18 کے انجینئر جان نبی کو ایس ای دیامر استور سرکل (او پی ایس )’ انجینئر فرمان علی کو ایس ای دیامر استور سرکل سے ایس ای گلگت سرکل ‘ انجینئر دیدار شاہ کو ایس ای پی اینڈ ڈی گلگت سے ایس ای ہنزہ نگر ‘ غذر سرکل میں تبادلہ کر دیا گیا ہے جبکہ انجینئر سردار عالم کو ایس ای بی اینڈ ڈویژن استور سے نلتر ایکسپریس وے کا پراجیکٹ ڈائریکٹر تعینات کیا گیا ہے اور ایس ای ورکس گلگت ہیڈ کوارٹر کا اضافی چارج بھی دے دیا گیا ہے دوسری جانب گریڈ 17 کے آفیسروں میں ایگزیکٹو انجینئر بی اینڈ آر ڈویژن سکردو انجینئر تاج محمد کو ایگزیکٹو انجینئر ورکس ہیڈ کوارٹر گلگت ‘ ایس ڈی او بی اینڈ آر گلگت انجینئر عبد الوہاب کو ایس ایگزیکٹو انجینئر بی اینڈ آر ڈویژن دیامر ‘ ایگزیکٹو انجینئر بی اینڈ آر ڈویژن شگر انجینئر ارشاد حسین کو ایگزیکٹو انجینئر بی اینڈ آر ڈویژن نگر اورایگزیکٹو انجینئر بی اینڈ آر نگر انجینئر محمد اقبال کو شگر تبادلہ کر دیا گیا ہے ۔ گریڈ 16 ایس ڈی او داریل محمد ریاض کوبی اینڈ آر گلگت ‘ ایس ڈی او نگر محمد عطرت حسین کو ایس ڈی او ہنزہ اور ایس ڈی او تانگیر نسیم اللہ کو ایس ڈی او داریل تعینا ت کیا گیا ہے ۔حکومت کی جانب سے نوٹیفکیشن کے واپس پر شکوک و شبہات کا اظہار کیاجارہا ہے، درپردہ سیاسی دبائو قرار دیا جا رہا ہے۔

Facebook Comments
Share Button