تازہ ترین

Marquee xml rss feed

نعیم الحق نے شہباز شریف کے پروڈکشن آرڈر ضبط کرنے کی دھمکی دے دی شہباز شریف اور اس کے چمچوں کی اتنی جرات کہ وہ قومی اسمبلی میں وزیر اعظم پر ذاتی حملے کریں۔کیا وہ جیل میں ... مزید-وزیراعظم کا سانحہ ساہیول پر وزراء متضاد بیانات پر سخت برہمی کا اظہار آئندہ بغیر تیاری میڈیا پر بیان بازی نہ کی جائے انسانی زندگیوں کا معاملہ ہے کسی قسم کی معافی کی گنجائش ... مزید-5 ارب روپے قرض حسنہ کیلئے مختص کرنا خوش آئند ہے، فنانس بل میں غریب آدمی کو صبر کا پیغام دیا گیا ہے امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق کی پارلیمنٹ ہائوس کے باہر میڈیا ... مزید-فنانس بل سے متوسط طبقہ کو ریلیف ملا ہے، عوام کا پیسہ عوام پر خرچ ہو گا، اپوزیشن کے پاس بات کرنے کو کچھ نہیں وفاقی وزیر آبی وسائل فیصل واوڈا کی پارلیمنٹ ہائوس کے باہر میڈیا ... مزید-صوبائی اسمبلی کے حلقہ پی ایس94 کے ضمنی الیکشن کے موقع پر سیکورٹی کو غیرمعمولی بنایا جائے، آئی جی سندھ-وزیر خزانہ اسد عمر کی طرف سے قومی اسمبلی میں پیش کردہ ضمنی مالیاتی (دوسری ترمیم) بل 2019 کا مکمل متن-جنوری کو ہونے والے ضمنی انتخابات کراچی کی سیاست میں نئی راہیں متعین کرے گا،مصطفی کمال پی ایس پی کسی فرد یا گروہ کا نام نہیں ہے بلکہ ایک تحریک کا نام ہے جو مظلوم و محکوموں ... مزید-ملک کا اقتصادی مستقبل کراچی کی معاشی ترقی میں مضمر ہے۔گورنر سندھ-سی پیک پاکستان اور چین کے مابین تعلقات کو مزید گہرا کرنے کے لئے مستحکم بنیاد، خطے کو منسلک کرنے میں اہم کردارادا کر رہا ہے، سی پیک تمام خطے میں امن و استحکام لانے میں ... مزید-احتساب عدالت اسلام آباد میں اسحاق ڈار کیخلاف آمدن سے زائد اثاثوں کے مقدمے میں دو مزید گواہوں کے بیانات ریکارڈ

GB News

لوٹی ہوئی دولت واپس لانا حکومت کی اولین ذمہ داری ہے،سراج الحق

Share Button

امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ حکومت کے پے در پے اقدامات سے عوام کی مشکلات میں اضافہ ہورہاہے ۔ نظر ثانی بجٹ میں نئے ٹیکس لگائے جارہے ہیں ۔ قابل ٹیکس آمدنی 12 لاکھ سے کم کر کے 8 لاکھ کر دی گئی ہے ۔ ریگولیٹری ڈیوٹی میں پانچ فیصد اضافہ کردیاگیاہے ۔ بجلی کی قیمتوں میں نیپرا نے 4 روپے یونٹ کی تجویز دی ہے اگر اسی رفتار میں قیمتوں میں اضافہ جاری رہا تو غریب تو غریب ، متوسط طبقے کی زندگی بھی اجیرن ہو جائے گی۔ لوٹی ہوئی دولت ملک میں واپس لانا موجودہ حکومت کی اولین ذمہ داری ہے۔ حکومت ٹیکس اکٹھا کرنے والی مشین نہ بنے،سابقہ حکومتیںعوام سے پیسہ اکٹھا کرکے اپنی شاہ خرچیوں پر خرچ کرتی رہی ہیں ، موجودہ حکومت بھی اسی ڈگر چلنے کی کوشش کررہی ہے ۔ وزیروں کی فوج ظفر موج سے ہی اندازہ ہورہا ہے کہ حکومت کی بجٹ پالیسی کہاں گئی، اب عوام تبدیلی چاہتے ہیں۔مدینہ کی اسلامی ریاست میں وقت کا حکمران اپنی رعایا کی ضروریات کا خود خیال رکھتا تھا۔ موجودہ نظام استحصال کا نظام تو ہوسکتا ہے، فلاحی نظام ہر گز نہیں ہے۔ایک ایسا پاکستان بنانے کی ضرورت ہے جس میں وسائل غریبوں سے لینے کی بجائے مالداروں سے لے کر غریبوں پر خرچ کئے جائیں۔غریب و نادار بچیوں کی اجتماعی شادیوں پر الخدمت فاؤنڈیشن کو مبارک باد دیتا ہوں،غریب والدین اپنی بچوں کی شادیاں نہ کرسکنے کی وجہ سے سخت پریشان ہیں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کو پشاور کے مقامی شادی ہال میں الخدمت فاؤنڈیشن ضلع پشاور کے زیر اہتمام پچاس جوڑوں کی اجتماعی شادی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

Facebook Comments
Share Button