تازہ ترین

Marquee xml rss feed

ڈاکٹر صدیقی امریکی ریاست ٹیکسس میں واقع کارزویل جیل میں قید ہیں جہاں بہترین سہولیات میسر ہیں کارزویل جیل میں صرف خواتین قیدی زیرحراست ہیں، ڈاکٹر صدیقی عموما شلوار شلوار ... مزید-آصف زرداری نے پارٹی کارکنوں کو انتخابات کی تیاری کی ہدایت کردی پیپلز پارٹی کے تمام اراکین اسمبلی کو اپنے حلقوں میں کھلی عوامی کچہریاں بھی لگانے کی ہدایت-سابق صدر آصف علی زرداری کا قریبی ساتھی اور بھٹو ہاؤس کا انچارج عدالت میں رو پڑا غریب آدمی ہوں، وکیل کرنے کے بھی پیسے نہیں ہیں، نہیں جانتا کہ اکاؤنٹ میں اتنے پیسے کہاں سے ... مزید-اسد عمر کی وفاقی کابینہ میں دوبارہ شمولیت کا امکان سابق وزیر خزانہ وزیراعظم سے مشاورت کیلئے اسلام آباد پہنچ گئے، وزارت قبول کرنے کیلئے دوست احباب سے مشورے جاری-اگر این ایف سی ایوارڈ کے ساتھ پی ایف سی ایوارڈ کو حتمی شکل نہ دی گئی تو لوگوں کو اٹھارویں ترمیم سمیت این ایف سی ایوارڈ کا کوئی فائدہ نہیں ہوگا، مصطفی کمال-ایف بی آر نے واپڈا ٹائون میں واقع ڈیپارٹمنٹل سٹور کے اکاونٹس منجمد کر دئیے-عمران خان اپنے تمام فیصلے خود کرتے ہیں جہاں ضرورت محسوس ہو تبدیلی کر دیتے ہیں‘ صمصام بخاری وزیر اعظم نے عثمان بزدار کو میرٹ پر پنجاب کا وزیر اعلی مقرر کیا ہے انہیں ہٹانے ... مزید-کابینہ اجلاس میں اشیائے ضروریہ کی قیمتوں پر کڑی نظر رکھنے کا فیصلہ کیا گیا،ڈاکٹر فر دوس عاشق عوان آئندہ بجٹ کو عوام دوست بنانے کیلئے اقدامات کررہے ہیں، اشیائے ضروریہ ... مزید-وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت اجلاس میں وفاقی کابینہ نے 22 نکاتی ایجنڈے کی منظوری دیدی وزیراعظم عمران خان نے کابینہ اراکین کو باور کرایا ہے کہ وہ عوامی خدمت کے اقدامات ... مزید-لاہور ، وزیراعظم عمران خان کی آٹھ رکنی اقتصادی مشاورتی کونسل کے رکن ڈاکٹر عابد قیوم سلہری کا لاہور پریس کلب کا دورہ

GB News

دیامر اور مہمند ڈیموں کی تعمیر کا آغاز 2019 میں کردیا جائے گا، چیئرمین واپڈا

Share Button

چیئرمین واپڈا لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ مزمل حسین نے کہا ہے کہ بھاشا اور مہمند ڈیموں کے لئے فنڈز کا کوئی مسئلہ نہیں، 2019 میں ان کی تعمیر کا آغاز کر دیا جائے گا، دنیا میں سب سے زیادہ پانی استعمال کرنے والی قوم ہیں، ایک ڈیبیٹ میں چیئرمین واپڈا لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ مزمل حسین نے کہا کہ موجودہ حالات میں درست سمت میں بڑھنے کی ضرورت ہے، ماضی میں حکومتوں نے پانی کی بجائے تھرمل پاور ہاسز والی مہنگی بجلی کو فوقیت دی جو غلط فیصلہ تھا، خمیازہ سب بھگت رہے ہیں اور سرکلر ڈیٹ ہی ختم نہیں ہو رہا۔ انہوں نے کہا 1951 میں پاکستان میں سالانہ فی شہری پانی کی دستیابی 5 ہزار کیوبک میٹر سے زائد تھی۔ عام طور پر اگر کسی ملک میں یہ 3 ہزار پر آ جائے تو وہ اس ملک کو پانی کا بحران تصور کیا جاتا ہے، اگر یہ 2 ہزار پر آ جائے تو ‘واٹر سٹریس’ میں آجاتا ہے اور اگر یہ خدا نخواستہ ایک ہزار سے نیچے آجائے تو وہ ملک پانی کی شدید قلت والے ممالک میں شامل ہوتا ہے۔لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ مزمل حسین نے کہا پاکستان میں اس وقت سالانہ فی شہری پانی کی دستیابی 948 کیوبک میٹر پر ہے، بھارت مسلسل سندھ طاس معاہدے کی خلاف ورزی کر رہا ہے، ایسے حالات میں ڈیمز فوری بنانیکی ضرورت ہے۔ انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ ہم نے اپنے ادارے مضبوط نہیں کیے، ہم 50 ملین ایکڑ فٹ سالانہ پانی زمین نے نکالتے ہیں اور اس کی وجہ سے مختلف نمکیات انتہائی تباہی مچاتی ہیں، صرف لاہور میں زمین پانی کی سطح جو ایک زمانے میں 50 فٹ پر تھی اب ایک ہزار فٹ تک پہنچ چکی ہے۔چیرمین واپڈا نے کہا کہ ہم دنیا میں سب سے زیادہ پانی استعمال کرنے والی قوم ہیں، واپڈا اور حکومت ہی نہیں بلکہ ہر شخص کو چاہیے کہ وہ اپنی ذمے داری کو سمجھے۔

Facebook Comments
Share Button