GB News

دھرنے میں کچھ سیاسی رہنمائوں کے کارکنوں نے جلائو گھیرائو کیا،شہریار خان

Share Button

سینیٹ میں وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار خان آفریدی نے انکشاف کرتے ہوئے کہا ہے کہ دھرنے کے دوران کچھ سیاسی رہنمائوں کے کارکنوں نے جلائو گھیرائو کیا ہے ، حکومت تحقیقات کرا رہی ہے ، ہم ان میں سے کسی کو معاف نہیں کریں گے،جو رٹ کو چیلنج کرے گا اور قانون کو توڑے گا نئے پاکستان میں ان کے خلاف مثالی اقدامات کئے جائیں گے ، چاہے وہ ان ایوانوں کا حصہ ہوں یا کابینہ کے ارکان ہوں ، قا نون توڑنے والوں پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہو گا ، پاکستانیوں پر گولی اور ڈنڈا چلانا یہ ماضی کا وطیرہ ہو گا اس حکومت کا وطیرہ نہیں ہے۔جمعرات کو سینیٹ میں اظہار خیال کرتے ہوئے وزیر داخلہ شہریار خان آفریدی نے کہا کہ تین دن میں ایک قطرہ خون کا نہیں گرا اور پرامن مذاکرات ہوئے جس پر انہوں نے معذرت بھی کی ، ہماری اپوزیشن سے میٹنگ ہوئی تو انہوں نے کہا کہ طاقت کا استعمال نہ ہو ، تمام سٹیک ہولڈرز ایک پیج پر تھے شہریار آفریدی نے کہا کہ پاکستانیوں پر گولی اور ڈنڈا چلانا یہ ماضی کا وطیرہ ہو گا اس حکومت کا وطیرہ نہیں ہے، ہم ان سے بات کریں گے ان کے خدشات کو دور کریں گے ، انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کے فیصلوں پر عملدر آمد کرانا ریاست کی ذمہ داری ہے ، کچھ سیاسی ورکرز جو ایوانوں میں تو یہ کہتے تھے طاقت کا استعمال نہ کریں ہم آپ کے ساتھ ہیں اور ان سے مفاہمت سے بات کریں ان کے ورکرز نکلے اور جلائو گھیرائو کیا ہے ہم ان میں سے کسی کو معاف نہیں کریں گے اور قانون میں ہاتھ لینے والوں کو مثال بنائیں گے ، ہم نے فوٹیج تحریک لبیک کو دکھائی تو انہوں نے ان سے لاتعلقی کا اظہار کیا، اس کے بعد اقدامات کئے گئے تمام فوٹیجز اور ڈیٹا لیا جا چکا ہے ، گرفتاریاں ہو رہی ہیں لیگل فریم ورک کے تحت ہم آگے جا رہے ہیں کل بھی ہماری تحریک لبیک کے ساتھ میٹنگ ہوئی ہے۔

Facebook Comments
Share Button