تازہ ترین

Marquee xml rss feed

پی ٹی آئی کے رکن پنجاب اسمبلی مظہر عباس انتقال کر گئے مظرہ عباس راں کو گذشتہ روز صحت کی خرابی پر پنجاب اسمبلی سے اپستال منتقل کیا گیا تھا-حکومت پاکستان کا رواں برس حج پر 40 ہزار روپے سبسڈی دینے پر غور سبسڈی کی منظوری کے بعد فی کس حج اخراجات 4 لاکھ 20 ہزار روپے ہو جائیں گے-خاتون کو شادی کی تقریب میں اپنے کزن نذیر احمد کو کھانے کی پلیٹ دینا مہنگا پڑ گیا شکی شوہر نے بیوی پر کاروکاری کا الزام دیا، بھائیوں کے ساتھ مل کر خاتون کو قتل کرنے کی کوشش ... مزید-اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز کو بیرون ملک جانے کی اجازت مل گئی حمزہ شہباز نے نام بلیک لسٹ میں ڈالنے کا اقدام لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کیا تھا-امریکی گلوکار ایکون بھی پاکستان میں ڈیمز کی تعمیر کی حمایت میں سامنے آ گئے پاکستانی مہمند فنڈ میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں۔ ایکون نے اپنے ویڈیو پیغام میں دنیا بھر کے پاکستانیوں ... مزید-سندھ سے پیپلز پارٹی کا صفایا ہونے والا ہے ، فاطمہ بھٹو کو گورنر لگایا جائے گا پیپلزپارٹی سے متعلق سینئیر صحافی چوہدری غلام حسین نے بڑی خبر دے دی-وزیراعظم نے ندیم افضل چن کو اپنا ترجمان مقرر کرنے سے پہلے کیا ہدایت کی؟ وزیراعظم عمران خان نے مجھے ہدایت کی ہے کہ لہجے میں عاجزی و انکساری لاؤ متکبرانہ رویہ نہیں ہونا ... مزید-خان صاحب آپ سے ایک بات کرنی ہے میرا بچہ بیمار ہے لیکن اس کے لیے یہاں بیڈ موجود نہیں ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے بے نظیر بھٹو شہید اسپتال انتظامیہ کو فوراََ روتے ہوئے باپ ... مزید-سپریم کورٹ آف پاکستان نے اٹھارہویں ترمیم سے متعلق محفوظ شدہ فیصلہ سنا دیا سپریم کورٹ نے اٹھارہویں ترمیم سے متعلق سندھ حکومت کی درخواست مسترد کر دی-پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کے لیے خطرے کی گھنٹی بج گئی اتحادی اختر مینگل کا اپوزیشن کے اجلاس میں جا کر بیٹھنا موجودہ حکومت کے لیے سیاسی خطرہ ہے۔ عامر متین

GB News

قراقرم انٹرنیشنل یونیورسٹی:انجینئرنگ فیکلٹی کوعمارت پر دو ہفتوں کے اندر کام شروع کرانے کی مہلت

Share Button

اسلام آباد ( پ ر) ہائرایجوکیشن کمیشن نے قراقرم انٹرنیشنل یونیورسٹی کوانجینئرنگ فیکلٹی عمارت پر دو ہفتوں کے اندر کام شروع کرانے کی مہلت دی ہے۔ مقررہ مدت کے اندر کام شروع نہ ہونے کی صورت میں انجینئرنگ فیکلٹی کا منصوبہ ختم کردیا جائیگا۔ ہائرایجوکیشن کمیشن کے پلاننگ اینڈ ڈیولپمنٹ ڈویژن نے کے آئی یوانتظامیہ کو حتمی نوٹس جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ 80کروڑ روپے لاگت کا یہ منصوبہ منظورہوئے 3سال سے زائد عرصہ گذرچکا ہے اور تاحال یونیورسٹی مختص اراضی پر تنازعہ کے باعث کام شروع نہ کراسکی ہے ۔ اب مزید اس منصوبے کے اجراء میں توسیع ممکن نہیں۔ لہذا یونیورسٹی انتظامیہ فی الفور دو ہفتوں کے اندر اس منصوبے پر کام شروع کرائے ، بصورت دیگر منصوبے کے کیلئے مختص فنڈ واپس لئے جائیں گے۔ ہائرایجوکیشن کمیشن کی جانب سے واضح وارننگ ملنے کے بعد یونیورسٹی کے وائس چانسلر نے پلاننگ اینڈ ڈولمپنٹ کمیٹی کا اجلاس طلب کرلیا ہے اور قوی امکان ہے کہ یہ منصوبہ کسی دوسرے ضلع میں منتقل کیا جائے تاکہ گلگت بلتستان کروڑوں روپے لاگت کے اس عظیم تعلیمی منصوبے سے محروم نہ ہو۔ اس منصوبے کیلئے چھلمس داس میں مختص اراضی کا مسئلہ حل ہونے میں مسلسل تاخیر اس منصوبے کی ناکامی کا باعث بن گیا ہے۔ لہذا مزید چھلمس داس کے تنازعہ میں پڑنے کے بجائے اس منصوبے کو ضلع دیامر ، ضلع غذر یا ضلع سکرد و منتقل کیا جاسکتاہے۔ ان اضلاع کے عوام کی جانب سے اس منصوبے کیلئے بلا معاوضہ اراضی فراہم کرنے کی پہلے ہی پیشکش کرچکے ہیں۔ ہائرایجوکیشن کمیشن کی جانب سے حتمی وارننگ ملنے کے بعد وائس چانسلر نے بھی یہ منصوبہ کسی دوسرے اضلاع میں منتقل کرنے کا عندیہ دیاہے تاہم اس کی منتقلی کے حتمی فیصلے کیلئے پلاننگ اینڈ ڈولمپنٹ کمیٹی سے منظوری لی جائیگی۔ واضح رہے کہ 80کروڑ روپے کی لاگت سے انجینئرنگ فیکلٹی کی منظوری مارچ 2015میں ہوئی ہے۔ اس وقت سے تاحال چھلمس داس کے مقام پر KIUکے نام پر الاٹ شدہ 1692کنال اراضی پر یونیورسٹی کو قبضہ نہیں دیا جارہا۔ اس تنازعے کے حل کیلئے یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر عطاء اللہ شاہ نے ہر سطح پر کوششیں کی۔ مفاہمتی کمیٹیاں بنائی گئیں۔ عمائدین اور عوامی سطح پر خود ملاقاتیں کی۔ صوبائی حکومت کے علاوہ صدر پاکستان تک اس مسئلے کے حل کی اپیلیں کی گئیں۔ لیکن تاحال مسئلے کا حل نہ نکلنے کے باعث یہ منصوبہ کھٹائی میں پڑنے کے امکانات واضح ہوگئے ہیں۔ تاہم وائس چانسلر کی اب بھی کوشش ہے کہ اس منصوبے کو ختم ہونے سے گلگت کے بجائے کسی دوسرے اضلاع میں منتقل کیا جائے ، جہاں آسانی سے اراضی دستیاب ہو۔ اس کا فیصلہ بہت جلد ہوگا۔

Facebook Comments
Share Button