تازہ ترین

Marquee xml rss feed

GB News

وفاق آئینی صوبہ کیلئے سنجیدگی دکھائے،اسلامی تحریک

Share Button

گلگت ( پ ر ) اسلامی تحریک پاکستان کے صوبائی جنرل سکریٹری شیخ مرزا علی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ قائد ملت جعفریہ و سربراہ اسلامی تحریک پاکستان علامہ ساجد نقوی نے گلگت بلتستان کو آئینی صوبہ بنانے کے جماعتی منشور کو آئینی حقوق کی ضمانت گردانتے ہوئے صوبائی عہدیداران کو ہدایت جاری کی ہے کہ ہمارا منشور استحکام پاکستان کی ضمانت کے ساتھ جی بی کو قومی دھارے میں لانے کا واحد راستہ ہے لہذا جماعت صوبائی سطح پر خطہ کی آئینی حیثیت کے تعین کی جدوجہد میں مثبت انداز میں تیزی لائے اور دوسری جماعتوں کے ساتھ مشترکہ انداز میں بنیادی حقوق کے حصول کیلئے اپنا کردار ادا کرے اور عوام تک اپنا پیغام پہنچائے کہ گلگت بلتستان کے آئینی حقوق کی ضمانت صرف آئینی اقدامات کے ذریعہ ہی ممکن ہے آئینی اقدامات سے ہٹ کر کسی بھی سطح کے اختیارات ، اصلاحات اور پیکیج گلگت بلتستان کی آئینی حیثیت کے تعین کیلئے ناکافی ہیں شیخ مرزا علی نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان عالمی تناظر میں نہایت اہمیت اختیار کر چکا ہے اس عالمی اہمیت کا تقاضا یہ ہے کہ آئین میں ترمیم کے ذریعہ خطہ کو قومی دھارے میں شامل کیا جائے قومی دھارے میں شامل کئے بغیر کسی بھی سطح کے اختیارات کا عندیہ دینے کوالحاق پاکستان کے اعلان سے ہم اہنگ قرار نہیں دیا جاسکتا ہے ہمیں امید تھی کہ بین الاقوامی بدلتے حالات اور گلگت بلتستان کی بڑھتی ہوئی اہمیت کے پیش نظر وفاقی سطح پر سنجیدہ اقدامات اٹھائے جائیںگے اور خطہ کو قومی دھارے میں شامل کرنے کی مضبوط بنیادوں پر منصوبہ بندی کی جائے گی مگر محسوس ایسا ہوتا ہے کہ 70سالہ محرومیوں کو خاطر میں لائے بغیر ناکافی اقدامات کی کوششیں کی جارہی ہیں جس کی کسی بھی سطح پر ستائش نہیں کی جاسکتی ہے اور ضرورت اس امر کی ہے کہ وفاق آئینی اقدامات کیلئے سنجیدگی دکھائے اور لازوال حب الوطنی کا مثبت جواب آئین میں ترمیم کرتے ہوئے آئینی صوبہ کے صورت میں دیا جائے اگر مکمل آئینی صوبہ کی منزل کے حصول کیلئے عبوری آئینی صوبہ ضروری قرار پاتا ہے تو بھی آئینی اقدامات کے تحت اسے قبول کیا جا سکتا ہے مگر آئینی اقدامات سے ہٹ کر کسی بھی نوعیت کے اختیارات کو ناکافی سمجھا جائے گا جس سے عوامی تشویش میں اضافہ ہو سکتا ہے ۔

Facebook Comments
Share Button