تازہ ترین

Marquee xml rss feed

گوادر میں پاکستان کا سب سے بڑا اور جدید ترین ائیرپورٹ تعمیر کرنے کی تیاریاں مکمل وزیراعظم عمران خان 29 مارچ کو ساحلی شہر میں منصوبے کا سنگ بنیاد رکھیں گے، منصوبہ سی پیک ... مزید-بلاول بھٹو 26مارچ کو کراچی سے ٹرین مارچ کا آغاز کریں گے، خورشید شاہ اٹھارہویں ترمیم کی حفاظت کے لیے قانون کےدائرے میں رہ کر جو بھی کر سکتے ہیں کریں گے، بلاول بھٹو زرداری-460ارب جرمانہ ملک ریاض نے نہیں، عوام نے ادا کرنا ہے، محمود صادق ملک ریاض کوعدالت سے ڈیل میں اب بھی 700 ارب منافع ہوگا، بحریہ ٹاؤن پر دباؤ بڑھنے سے کام ٹھپ ہوا تو لوگوں نے ... مزید-مفتی تقی عثمانی پر حملہ کرنیوالے ملزمان بہت جلد قانون کی گرفت میں ہوں گے،آئی جی سندھ-آئی ایس پی آر اور پاک فضائیہ کی جانب سے یومِ پاکستان 2019 کی مناسبت سے آفیشل نغمے جاری کردیے پاکستان زندہ آباد کے عنوان سے جاری کیے گئے نغمے میں وطن کے محفافظوں کو ... مزید-فیس بک کا بغیر اجازت نامناسب تصاویر اپ لوڈ یا شیئر کرنے والے صارفین کو بلاک کے نئے اقدامات کا اعلان کسی کی نامناسب تصاویر اس کی اجازت کے بغیر شیئر کرنا نقصان دہ ہے، ہم ... مزید-وزیراعلیٰ سندھ کا مفتی تقی عثمانی پر قاتلانہ حملے میں شہید اہلکار کے نابینا بچوں کے علاج کرانے اور مفت تعلیم کا اعلان-یوم پاکستان : گورنر اور وزیراعلیٰ سندھ نے مزار قائد پر حاضری دی،ملکی سلامتی کیلئے دعاکی-سعودی ولی عہد کی مہمان نواز کرنے والے ملازمین میں ایک کروڑ اعزازی تنخواہ دیئے جانے کا انکشاف-ملائیشیا پاکستان کی دفاعی صنعت سے بے حد متاثر، پاکستان کے اینٹی ٹینک میزائل خریدنے میں دلچسپی کا اظہار گزشتہ روز ملائیشیا کے وزیراعظم نے جے ایف 17 تھنڈر جنگی طیاروں کی ... مزید

GB News

آرڈرکسی بھی صورت منظور نہیں ،کشمیرطرز کاسیٹ اپ دے دیں،کیپٹن(ر)محمدشفیع

Share Button

گلگت(پ ر)گلگت بلتستان اسمبلی کے اپوزیشن لیڈرکیپٹن(ر)محمدشفیع خان نے کہا کہ آرڈرکسی بھی صورت ہمیں منظور نہیں ہے اگر حکومت پاکستان گلگت بلتستان کوصوبہ بنانے کی پوزیشن میں نہیں ہے تو گلگت بلتستان کی متنازعہ حیثیت کوواضح کرکے ہمیں کشمیرطرز کاسیٹ اپ دے دیںاورقومی وبین الاقوامین سطح پرہمیں کشمیرڈائیلاگ میں شامل کیاجائے آرڈرپرآرڈرہمیںکسی صورت قبول نہیں ہے ہمیں حقوق کے حوالے سے مزیدبے وقوف بنانے کی ضرورت نہیںہے ان خیالات کااظہارانہوں نے اپنے ایک اخباری بیان میںکیا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے آباواجدادنے گلگت بلتستان کواپنی مددآپ کے تحت آزادکراکراس لئے پاکستان کے ساتھ غیرمشروط الحاق نہیں کیاہے کہ ہمیں سترسالوں تک بنیادی حقوق سے محروم رکھاجائے۔ہم نے خودآزادی حاصل کرکے الحاق کیاتھا تو ہمیں آرڈروں کے ذریعے کس آئین وقانون کے تحت چلایاجارہا ہے۔گلگت بلتستان کے ہرشہری کاسترسالوں سے یہ مطالبہ رہا ہے کہ حکومت پاکستان ہماری آئینی حیثیت واضح کرے لیکن وفاق نے آج تک اس مطالبے کامثبت جواب نہیں دیا۔گلگت بلتستان کواسی طرح مزیدنظرانداز کیاگیا تویہاں کے عوام اس بات پرمجبور ہوں گے اورحکومت پاکستان سے سوال کریں گے کہ وہ اپنی آئینی حیثیت گلگت بلتستان میںواضح کرے۔کس آئین اورقانون کے تحت وفاق کے آئینی ادارے گلگت بلتستان میں واضح کرے۔کس آئین اورکس قانو ن کے تحت وفاق کے آئینی ادارے گلگت بلتستان میں کام کررہے ہیں بہتر ہے کہ ایسے حالات پیداہونے سے قبل وفاق پاکستان گلگت بلتستان کے عوام کوان کے جائزحقوق فراہم کرے۔انہوں نے واضح کہاکہ اب ہمیں حقوق کی جدوجہد سے روکانہیں جاسکتا ہے ابھی نوجوان نسل باشعورہوچکی ہے ہم ان کوکیاجواب دیں ۔انہوں نے کہا کہ مزید کوئی آرڈرنافذ کیاگیا تو اس کے خلاف سخت احتجاج کیاجائے اوراب عوام فیصلہ کریں گے کہ گلگت بلتستان کو کس طرح چلانا ہے۔

Facebook Comments
Share Button