تازہ ترین

Marquee xml rss feed

بحرین کے دورے کے دوران پاک بحریہ کے سربراہ ایڈمرل ظفر محمود عباسی نے بحرین ڈیفنس فورسز کے کمانڈران چیف سے ملاقات کی-ساہیوال کے پر درد واقعے نے ننھی زینب کے والد کو بھی غمزدہ کر دیا ننھی زینب کے والد امین انصاری مقتول خلیل کے یتیم بچوں کے ساتھ وقت گزارنے ان کے گھر پہنچ گئے-کنٹرول لائن کے ساتھ جندروٹ سیکٹر میں بھارتی فوج کی شہری آبادی پر بلااشتعال فائرنگ ، ایک خاتون سمیت تین شہری زخمی ہو گئے، آئی ایس پی آر-قومی اسمبلی کے اجلاس کا وقت تبدیل، (کل) صبح 11 بجے کی بجائے شام ساڑھے چار بجے ہوگا-اسلام آباد ، گاڑیوں کی آن لائن رجسٹریشن کا نظام متعارف کرا دیا گیا-ٹیکس فائلرز کیلئے بینکوں سے رقوم نکلوانے پر ود ہولڈنگ ٹیکس مکمل طور پر ختم، 1300 سی سی تک کی گاڑیاں نان فائلر بھی خرید سکے گا ، 1800 سی سی اور اس سے زائد کی گاڑیوں پر ٹیکس ... مزید-نعیم الحق نے شہباز شریف کے پروڈکشن آرڈر ضبط کرنے کی دھمکی دے دی شہباز شریف اور اس کے چمچوں کی اتنی جرات کہ وہ قومی اسمبلی میں وزیر اعظم پر ذاتی حملے کریں۔کیا وہ جیل میں ... مزید-وزیراعظم کا سانحہ ساہیول پر وزراء متضاد بیانات پر سخت برہمی کا اظہار آئندہ بغیر تیاری میڈیا پر بیان بازی نہ کی جائے انسانی زندگیوں کا معاملہ ہے کسی قسم کی معافی کی گنجائش ... مزید-وزیر خزانہ اسد عمر کی طرف سے قومی اسمبلی میں پیش کردہ ضمنی مالیاتی (دوسری ترمیم) بل 2019 کا مکمل متن-5 ارب روپے قرض حسنہ کیلئے مختص کرنا خوش آئند ہے، فنانس بل میں غریب آدمی کو صبر کا پیغام دیا گیا ہے امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق کی پارلیمنٹ ہائوس کے باہر میڈیا ... مزید

GB News

مودی کا دور حکومت، بھارت میں انتہا پسندی کا فروغ

Share Button

نریندر مودی کا دور انتہا پسندوں کا دور بن گیا۔ گائے ذبح کرنے کے معاملے پر کئی افراد کو مار دیا گیا جبکہ مسلمانوں کےنام سے منسوب شاہراہوں اور عمارتوں کے نام تبدیل کیے گئے۔ کئی نامور افراد کوانتہا پسند ہندؤوں کی جانب سے دھمکیاں بھی دی گئیں، ظالم فوج نے مقبوضہ کشمیر میں بھی ظلم و ستم کی انتہا کرتے ہوئے کئی افراد کو شہید کیا۔مودی سرکار کے اقتدار میں انتہا پسندی عروج پر پہنچ گئی۔ مئی 2014ء میں نریندر مودی کی حکومت بنتے ہی انتہا پسند تنظیم آر ایس ایس نے اقلیتوں کے خلاف محاذ سنبھال لیا۔ گائے ذبح کرنے کو مذہبی رنگ دے کر کئی مسلمانوں کو موت کے گھاٹ اتارا گیا۔انتہاپسند ہندوؤں نے کئی تاریخی شہروں، سڑکوں اور عمارتوں کے نام صرف مسلمانوں کے نام پر رکھے جانے کی وجہ سے تبدیل کروا دیے۔ آرایس ایس نے غریبوں کے راشن کارڈز پر ڈاکہ ڈالا۔ اس کے علاوہ شاہ رخ خان اور نصیرالدین شاہ سمیت کئی افراد کو دھمکیاں بھی دی گئیں۔سب سے بڑی جمہوریت کے دعویدارملک نے مقبوضہ جموں کشمیر میں بھی ظلم کی سیکڑوں داستانیں رقم کیں، 1989 سے لے کر اب تک ایک لاکھ سے زائد افراد کو شہید اور ہزاروں کو زخمی کیا گیا۔ آٹھ ہزار سے زائد افراد کو چھروں کا نشانہ بھی بنایا۔بھارتی فورسز کے ظلم وستم پر بی بی سی، واشنگٹن پوسٹ اور نیویارک ٹائمز جیسے کئی عالمی اخبارات کی شہہ سرخیاں بنے۔ قابض افواج کے تشدد اور بربریت کا اعتراف سابق بھارتی انٹیلیجنس چیف” اے ایس دلت نے بھی کیا۔ مگر ان سب کے باوجودآج بھی مقبوضہ وادی میں آگ اور خون کا کھیل جاری ہے۔

Facebook Comments
Share Button