تازہ ترین

Marquee xml rss feed

آرمی چیف جنرل قمر باجوہ کی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے ملاقات دونوں رہنماوں کے درمیان ملاقات امریکی صدارتی محل وائٹ ہاوس میں ہوئی، پرجوش انداز میں ایک دوسرے ساے مصافحہ بھی ... مزید-وزیراعظم کی جانب سے امریکی صدر سے مسئلہ کشمیر پر بات چیت کے بعد کشمیر میں بھی عمران خان کے چرچے عمران خان پہلے لیڈر ہیں جنہوں نے نہتے کشمیریوں کے لیے آواز اٹھائی، علی گیلانی-وزیراعظم عمران خان نے امریکی صدر کو دورہ پاکستان کی باقاعدہ دعوت دے دی ڈونلڈ ٹرمپ نے بنا کسی اعتراض کے دورہ پاکستان کی دعوت فوری قبول کر لی، دورے سے متعلق معاملات بعد ... مزید-امریکہ صدر امریکہ سے زیادہ پاکستانی رپورٹرز کو پسند کرنے لگے میں یہاں کچھ پاکستانی رپورٹرز کی موجودگی چاہتا تھا مجھے وہ اپنے ملک کے رپورٹرز سے زیادہ پسند ہیں، امریکی ... مزید-افغانستان کے معاملے پر پاکستان کے پاس وہ پاور ہے جو دیگر ممالک کے پاس نہیں امریکا پاکستان کے ساتھ مل کر افغان جنگ سے باہر نکلنے کی راہ تلاش کر رہا ہے، پاکستان ماضی میں ... مزید-امریکی صدر نے وزیراعظم عمران خان کیلئے الیکشن مہم چلانے کی خواہش کا اظہار کردیا ہم دونوں اپنے ملکوں کی نئی قیادت کے طور پر ابھر کر سامنے آئے ہیں، عمران خان کے پاس وقت ہے ... مزید-بھارت نے امریکہ سے مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے ثالث بننے کی درخواست دینے کی تردید کر دی وزیراعظم نریندر مودی نے ڈونلڈ ٹرمپ سے مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے کبھی ثالث بننے کی درخواست ... مزید-امریکی صدر سے ملاقات کے بعد عافیہ صدیقی کی رہائی سے متعلق وزیراعظم کا بڑا اعلان امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی رہائی کے معاملے پر بھی بات ہوگی: عمران خان ... مزید-اے ایس ایف کی پیشہ وارانہ کارکردگی اور سرگرمیاں قابل تعریف ہیں وفاقی وزیر ہوا بازی غلام سرور خان کی نیو اسلام آباد انٹرنیشنل ایئرپورٹ کے دورہ کے موقع پر گفتگو-ہر گزرتے دن کے ساتھ وکلاء کی عزت کم ہو رہی ہے، وکلاء پیسہ کمانے کی طرف جانے کی بجائے لوگوں کی خدمت کریں پیسہ خود ان کے پیچھے آئے گا، اگرایک وکیل اور جج ایک دوسرے کو ماریں ... مزید

GB News

مسئلہ ٹیکس کا نہیں آئینی حقوق کا ہے

Share Button

قانون ساز اسمبلی کے سپیکر حاجی فدا محمد ناشاد نے کہاہے کہ آئینی صوبہ ملے گا تو یقینی طورپر گلگت بلتستان کے عوام پر ٹیکس بھی لگے گا اور ہمیں اپنا بجٹ خود تیار کرنا پڑے گا آئینی صوبے کادرجہ ملنے سے شناخت ضرور ملے گی مگر عوام پر بوجھ بھی پڑے گا اس لئے عوام کو سوچنا پڑے گا جب پچھلے دنوں آئینی صوبے کی بات چلی تو ایک طبقے نے کہاکہ آئینی صوبہ کی بنیاد پرٹیکس لگانے کی کوشش کی گئی تو سخت رد عمل آئے گا جب آئینی صوبے کے معاملے پر ہم ہی ایک پیچ پر نہیں ہوں گے توصوبے کا مسئلہ کیسے حل ہوگا ؟ وزیر اعلیٰ بھی چاہتے ہیں کہ عبوری آئینی صوبہ دیا جائے سرتاج عزیز کمیٹی کی سفارشات سے ہٹ کر کوئی چیز قبول نہیں عبوری آئینی صوبے کے قیام میں حکومت سنجیدہ ہے تو آئین میں ترمیم کیلئے اسمبلی میں بل لائے تو پتہ چل جائیگا کہ کون سی جماعت مخالفت کونسی حمایت کرتی ہے۔یہ حقیقت محتاج بیان نہیں ہے کہ مسئلہ ٹیکسوں کا نہیں آئینی حقوق کا ہے لوگ جانتے ہیں کہ انہیں ٹیکس دینا ہو گا کیونکہ پھر حکومت کو بھی اپنے معاملات کے لیے ٹیکس لگانا پڑیں گے ممکن ہے کہ سبسڈی کا بھی خاتمہ ہو جائے تاہم عوام برسوں سے اپنی شناخت چاہتے ہیں اور صورتحال کا مکمل ادراک رکھتے ہیں ۔ٹیکس نہ دینے کے ضمن میں جن طبقات کی ردعمل سامنے آیا ہے انہیں بھی ٹیکس دینا ہو گا۔اس لیے بات ٹیکسوں کی نہیں عوام یہ ٹیکس دیں گے وہ صرف اور صرف اپنے آئینی حقوق چاہتے ہیں۔یہ درست ہے کہ صوبے کیلئے تمام سٹیک ہولڈرز کو ایک پیج پر آنا پڑے گا ان کے باہمی اختلافات حقوق کی راہ میں مزاحم ہو سکتے ہیں اس لیے انہیں چاہیے کہ وہ اپنے اختلافات کو حقوق کی راہ میں آڑے نہ آنے دیں۔ہم پہلے ہی کہہ چکے ہیں صوبے کے حوالے سے اسمبلی میں بل لایا جائے تو سیاسی جماعتوں کی حمایت و مخالفت کے سلسلے میں دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے گا۔یہ بھی پتہ چل جائے گا کہ کونسی جماعت محض زبانی دعوے کرتی رہی ہے۔

Facebook Comments
Share Button