تازہ ترین

Marquee xml rss feed

آرمی چیف جنرل قمر باجوہ کی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے ملاقات دونوں رہنماوں کے درمیان ملاقات امریکی صدارتی محل وائٹ ہاوس میں ہوئی، پرجوش انداز میں ایک دوسرے ساے مصافحہ بھی ... مزید-وزیراعظم کی جانب سے امریکی صدر سے مسئلہ کشمیر پر بات چیت کے بعد کشمیر میں بھی عمران خان کے چرچے عمران خان پہلے لیڈر ہیں جنہوں نے نہتے کشمیریوں کے لیے آواز اٹھائی، علی گیلانی-وزیراعظم عمران خان نے امریکی صدر کو دورہ پاکستان کی باقاعدہ دعوت دے دی ڈونلڈ ٹرمپ نے بنا کسی اعتراض کے دورہ پاکستان کی دعوت فوری قبول کر لی، دورے سے متعلق معاملات بعد ... مزید-امریکہ صدر امریکہ سے زیادہ پاکستانی رپورٹرز کو پسند کرنے لگے میں یہاں کچھ پاکستانی رپورٹرز کی موجودگی چاہتا تھا مجھے وہ اپنے ملک کے رپورٹرز سے زیادہ پسند ہیں، امریکی ... مزید-افغانستان کے معاملے پر پاکستان کے پاس وہ پاور ہے جو دیگر ممالک کے پاس نہیں امریکا پاکستان کے ساتھ مل کر افغان جنگ سے باہر نکلنے کی راہ تلاش کر رہا ہے، پاکستان ماضی میں ... مزید-امریکی صدر نے وزیراعظم عمران خان کیلئے الیکشن مہم چلانے کی خواہش کا اظہار کردیا ہم دونوں اپنے ملکوں کی نئی قیادت کے طور پر ابھر کر سامنے آئے ہیں، عمران خان کے پاس وقت ہے ... مزید-بھارت نے امریکہ سے مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے ثالث بننے کی درخواست دینے کی تردید کر دی وزیراعظم نریندر مودی نے ڈونلڈ ٹرمپ سے مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے کبھی ثالث بننے کی درخواست ... مزید-امریکی صدر سے ملاقات کے بعد عافیہ صدیقی کی رہائی سے متعلق وزیراعظم کا بڑا اعلان امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی رہائی کے معاملے پر بھی بات ہوگی: عمران خان ... مزید-اے ایس ایف کی پیشہ وارانہ کارکردگی اور سرگرمیاں قابل تعریف ہیں وفاقی وزیر ہوا بازی غلام سرور خان کی نیو اسلام آباد انٹرنیشنل ایئرپورٹ کے دورہ کے موقع پر گفتگو-ہر گزرتے دن کے ساتھ وکلاء کی عزت کم ہو رہی ہے، وکلاء پیسہ کمانے کی طرف جانے کی بجائے لوگوں کی خدمت کریں پیسہ خود ان کے پیچھے آئے گا، اگرایک وکیل اور جج ایک دوسرے کو ماریں ... مزید

GB News

اب بھارت کو پاکستانی فنکاروں پر لگی پابندی اٹھا لینی چاہیے، شفقت امانت علی

Share Button

معروف گلوکار شفقت امانت علی کا کہنا ہے کہ اب بھارت کو پاکستانی فنکاروں پر لگائی گئی پابندی اٹھا لینی چاہیے۔

بھارتی خبر رساں ایجنسی سے گفتگو کرتے ہوئے شفقت امانت علی کا کہنا تھا کہ ‘آرٹ اور انٹرٹینمنٹ انڈسٹری آسان اہداف ہیں، انہیں معلوم ہے کہ یہ لوگ لڑائی نہیں کریں گے تو بس ان پر پابندی لگا دی جاتی ہے، یہ بہت آسان ہے، لیکن دوسری جانب اگر دیکھا جائے تو بھارت اور پاکستان کے درمیان اچھے خاصے پیمانے پر تجارت ہورہی ہے۔’

شفقت امانت علی نے کہا، ‘اگر آپ اٹاری-واہگہ بارڈر پر جائیں تو آپ کو دونوں جانب سامان سے لدے ٹرک آتے جاتے دکھائی دیں گے، برآمدات اور درآمدات کا کاروبار پوری طرح سے جاری ہے۔ ‘

ان کا مزید کہنا تھا، ‘اگر ہم یہ تجارت روک دیں تو اس سے ایک ہلچل پیدا ہوجائے گی، لیکن انہیں معلوم ہے کہ اگر وہ فنکاروں یا آرٹ سے منسلک افراد پر پابندی عائد کردیں گے تو وہ لوگ بس میڈیا یا سوشل میڈیا کے پلیٹ فارمز کے ذریعے ہی اپنے خیالات کا اظہار کریں گے اور کچھ نہیں ہوگا۔’

شفقت امانت علی کا مزید کہنا تھا کہ ‘ہم مثبت طریقے سے بہت سارے کام کرسکتے ہیں، لیکن ہم وہ نہیں کر رہے۔’

جب اُن سے سوال کیا گیا کہ کیا وہ بھارت میں اپنی پرفارمنس کو مِس کرتے ہیں تو شفقت امانت علی نے جواب دیا، ‘ہاں، میں بالکل کرتا ہوں، ہمیں بھارت میں کام کرکے بہت سا پیار، عزت اور حوصلہ افزائی ملتی ہے، میں بھارت میں اپنی پرفارمنس کو بہت مِس کرتا ہوں اور یہی وقت ہے کہ انہیں پابندی کو اٹھا لینا چاہیے۔’

واضح رہے کہ 2016 میں ہونے والے اڑی حملے کے بعد انڈین موشن پکچرز پروڈکشن ایسوسی ایشن نے پاکستانی فنکاروں کے بھارت میں کام کرنے پر پابندی لگا دی تھی۔

Facebook Comments
Share Button