تازہ ترین

Marquee xml rss feed

GB News

نواز شریف اور زرداری قصہ پارینہ بن چکے، کوئی سیاسی حیثیت نہیں رہی، فواد چوہدری

Share Button

اسلام آباد(آئی این پی)وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف اور سابق صدر آصف زرداری قصہ پارینہ بن چکے ہیں اور دونوں کی کوئی سیاسی حیثیت نہیں رہی،15 مرغیاں چوری کرنے والا جیل میں ہے اور 300 ارب چوری کرنے والے باپ بیٹی کی ضمانت ہوگئی،1500سو ارب روپے چوری کرنے والا پی اے سی کا چئیرمین ہے، حکومت کے آنے کے فوری بعد نظام نہیں بدل جاتے اس کے لئے مسلسل محنت اور وقت چاہیے، تحریک انصاف نے حکومت بدلی اگلے مرحلے میں نظام بدلے گا، سندھ کا ترقیاتی بجٹ 2ہزار ارب روپے ہے جس میں700 ارب روپے جعلی اکانٹس اور اومنی گروپ کے اکانٹس میں چلا گیا جب کہ پنجاب میں 61 ہزار اساتذہ کی بھرتی اور صاف پانی کے لیے مختص پیسے اورنج لائن ٹرین میں پھونک دیے گئے، سابق حکمرانوں نے قومی خزانے کو لوٹا اور پھر عیاشیوں میں پیسے لٹا دیے جس طر ح ڈاکو ڈکیتی کر کے عیاشی کرتے ہیں۔جمعہ کو نیشنل پریس کلب اسلام آباد میںصحافی اور قلم کار عالیہ شاہ کی کتاب ‘عمران خان اور نیا پاکستان’ کی تقریب رونمائی سے خطاب کرے ہوئے وزیر اطلاعات ونشریات فواد چوہدری نے کہا کہ کتاب پڑھنے والے اور لکھنے والے آج کل کم لوگ رہ گئے ہیں۔ عالیہ شاہ کو مبارکباد پیش کرتے ہیں۔کتاب میں پاکستان کی تاریخ کا اہم سفر قلمبند کیا گیا ہے۔یہ تحریک غریبوں کی تھی جو ملک میں 22خاندانوں کی اجارہ داری ختم کرنے کئے لئے تھی۔جو کرپشن اور ناانصافی کے خلاف انقلاب بن کر ابھری۔تحریک انصاف کے دھرنے نے نئے پاکستان کی بنیاد رکھی اور اسٹیٹس کو توڑا۔آج 2000ارب حکومت صرف قرضوں پر سود کی مد میں ادا کررہی ہے جو گزشتہ دس سال میں لئے گئے۔قرضوںنے پاکستان کی معیشت اور ملک کی جڑیں ہلا دیں۔ اگر تحریک انصاف نہ ہوتی تو قوم پیپلزپارٹی اور (ن)لیگ میں ہی پھنسی رہتی، عمران خان کی وجہ سے نوازشریف اور آصف زرداری سیاست میں قصہ پارینہ بن چکے ہیں ان لوگوں کی سیاست میں اب کوئی اہمیت باقی نہیں رہی۔فواد چوہدری نے کہا کہ حکومت کی آمدنی5 ہزار 647 ارب روپے جس میں سے 2 ہزار ارب روپے قرضوں کے سود پر دے رہے جو گزشتہ 10 سال میں لیے گئے تھے،17 سو ارب روپے دفاع پر لگاتے ہیں جب کہ وفاقی حکومت منفی 632 روپے سے کام شروع کرتی ہے، ماضی کی حکومتوں نے ملکی اثاثوں کو گروی رکھوا کر قرض لیے ۔ سندھ کا ترقیاتی بجٹ 2ہزار ارب روپے ہے جس میں700 ارب روپے جعلی اکانٹس اور اومنی گروپ کے اکانٹس میں چلا گیا جب کہ پنجاب میں 61 ہزار اساتذہ کی بھرتی اور صاف پانی کے لیے مختص پیسے اورنج لائن ٹرین میں پھونک دیے گئے، سابق حکمرانوں نے قومی خزانے کو لوٹا اور پھر عیاشیوں میں پیسے لٹا دیے جس طر ح ڈاکو ڈکیتی کر کے عیاشی کرتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ فی الحال مڈل کلاس کو ریلیف دینے کے لئے حکومت کے پاس پیسے نہیں ہیں۔جب کہ غریبوں کو بچا لیا ہے۔وزیر اطلاعات نے کہا کہ15 مرغیاں چوری کرنیوالاجیل میں ہے اور 300ارب چوری کرنیوالیوالے باپ بیٹی کی ضمانت ہوگئی، مرغی چور کی ایک سال سے ضمانت نہیں ہوئی لیکن ملک لوٹنے والوں کو 4 ماہ میں ضمانت مل گئی، 15سو ارب روپے چوری کرنے والے پی اے سی میں ہے اور شہباز شریف کا پروٹوکول میں 6،6 گاڑیاں موجود ہیں۔وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ یہ نہ سمجھا جائے کہ عمران خان حکومت میں آگیا ہے تو نظام ٹھیک ہوگیا ہے، حکومت بدلنے سے نظام نہیں بدلتا بلکہ نظام بدلنے کے لیے مسلسل جدوجہد کرنی پڑتی ہے، پی ٹی آئی نے حکومت میں آکر نظام کی تبدیلی کے لیے پہلا مرحلہ مکمل کرلیا ہے اور اب دوسرے مرحلے میں نظام تبدیل ہوگا۔

Facebook Comments
Share Button