GB News

گلگت بلتستان میں بھی احتساب کرنیوالے اداروں نے کام شروع کردیا ،جاوید حسین

Share Button

گلگت(ثاقب عمر سے )پاکستان پیپلز پارٹی کے رکن اسمبلی گلگت بلتستان جاوید حسین نے کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ حفیظ الر حمن کو عدم اعتماد کے زریعے ہٹانے کی ضرورت پیش نہیں آئے گی کیونکہ اس وقت احتساب کر نے والے ادارے حفیظ الرحمن سمیت کچھ چیف انجیئرز اور کچھ سیکریٹرز کے کرپشن کے ثبوت اکھٹے کر رہے ہیں عنقریب ان کے غیر قانونی معاونین خصوصی اور سلکٹڈ افراد کے ہمراہ حفیظ الر حمن مناور جیل میں ہونگے ۔انہوںنے کے پی این سے گفتگو کرتے ہو ئے کہا کہ جس طرح وفاق میں احتساب کا عمل شروع ہوا ہے اسی طرح گلگت بلتستان میں بھی احتساب کرنے والے اداروں نے کام شروع کردیا ہے اور کرپشن کے ثبوت اکھٹے کئے ہیں اور یہ مکافات عمل ہے جس طرح حفیظ الر حمن نے عوام کو آئینی حقوق سے محروم رکھنے کے لئے سرتاج عزیز کمیٹی کی سفارشات پر عمل در آمد ہونے نہیں دیا آج وہی اس کے لئے وبال جان بن رہا ہے اور لوگوں کو آئینی حقوق سے محروم رکھنے اور کرپشن کرنے پہ اب ان کو جیل جانا پڑے گا ۔انہوںنے کہا کہ 19تاریخ کو نیشنل سیکیورٹی کونسل کا گلگت بلتستان کے حقوق کے حوالے سے اجلاس ہو رہا ہے جس کی صدارت وزیر اعظم عمران خان کر رہے ہیں اور ہمیں امید ہے کہ نیشنل سیکیورٹی کونسل میں جو ذمہ داران شرکت کرینگے وہ گلگت بلتستان میں جو آئینی حقوق کا بحران پیدا ہوا ہے اس کو حل کرینگے اور جن لوگوں نے گلگت بلتستان کے عوام میں محرومیاں پیدا کیئے ہیں ان کا محاسبہ کرینگے ۔انہوں نے کہا کہ نیشنل سیکورٹی کونسل سے بھی اگر گلگت بلتستان کے عوام مایوس ہو گئے تو ہم اسمبلی فلور میں وفاقی اداروں کی واپسی کے لئے قرار دادیں لائینگے اور ان قرار دادوں پر عمل در آمد کے لئے عوامی عدالت سے رجوع کرینگے ۔انہوں نے کہا کہ جن غیر قانونی معاونین خصوصی کو عوامی بجٹ کو لوٹنے کے لئے حفیظ الر حمن نے رکھا ہے ان کے کرپشن کے تحقیقات شروع کیا جا ئے اور جو لوگ سرکاری خزانے پہ غیر قانونی طریقے سے بوجھ بنے ہو ئے ہیں ان کو فارغ کیا جا ئے اور اس فنڈ کو عوامی فلاح و بہبود کے لئے خرچ کیا جا ئے ۔انہوں نے کہا کہ اب وزیر اعلیٰ نے ویسے بھی مناور جیل جانا ہے تو ہمیں عدم اعتماد لانے کی ضرورت نہیں ہے اور جس قسم کی کرپشن حفیظ الرحمن اینڈ کمپنی نے کیا ہے اسی کرپشن پہ انہوںنے جیل جانا ہے اور عوام کو ایک دھوکہ باز اور کرپٹ وزیر اعلیٰ اور کرپٹ آفیسران سمیت کرپٹ افراد سے نجات ملناہے ۔

Facebook Comments
Share Button