تازہ ترین

Marquee xml rss feed

گوادر میں پاکستان کا سب سے بڑا اور جدید ترین ائیرپورٹ تعمیر کرنے کی تیاریاں مکمل وزیراعظم عمران خان 29 مارچ کو ساحلی شہر میں منصوبے کا سنگ بنیاد رکھیں گے، منصوبہ سی پیک ... مزید-بلاول بھٹو 26مارچ کو کراچی سے ٹرین مارچ کا آغاز کریں گے، خورشید شاہ اٹھارہویں ترمیم کی حفاظت کے لیے قانون کےدائرے میں رہ کر جو بھی کر سکتے ہیں کریں گے، بلاول بھٹو زرداری-460ارب جرمانہ ملک ریاض نے نہیں، عوام نے ادا کرنا ہے، محمود صادق ملک ریاض کوعدالت سے ڈیل میں اب بھی 700 ارب منافع ہوگا، بحریہ ٹاؤن پر دباؤ بڑھنے سے کام ٹھپ ہوا تو لوگوں نے ... مزید-مفتی تقی عثمانی پر حملہ کرنیوالے ملزمان بہت جلد قانون کی گرفت میں ہوں گے،آئی جی سندھ-آئی ایس پی آر اور پاک فضائیہ کی جانب سے یومِ پاکستان 2019 کی مناسبت سے آفیشل نغمے جاری کردیے پاکستان زندہ آباد کے عنوان سے جاری کیے گئے نغمے میں وطن کے محفافظوں کو ... مزید-فیس بک کا بغیر اجازت نامناسب تصاویر اپ لوڈ یا شیئر کرنے والے صارفین کو بلاک کے نئے اقدامات کا اعلان کسی کی نامناسب تصاویر اس کی اجازت کے بغیر شیئر کرنا نقصان دہ ہے، ہم ... مزید-وزیراعلیٰ سندھ کا مفتی تقی عثمانی پر قاتلانہ حملے میں شہید اہلکار کے نابینا بچوں کے علاج کرانے اور مفت تعلیم کا اعلان-یوم پاکستان : گورنر اور وزیراعلیٰ سندھ نے مزار قائد پر حاضری دی،ملکی سلامتی کیلئے دعاکی-سعودی ولی عہد کی مہمان نواز کرنے والے ملازمین میں ایک کروڑ اعزازی تنخواہ دیئے جانے کا انکشاف-ملائیشیا پاکستان کی دفاعی صنعت سے بے حد متاثر، پاکستان کے اینٹی ٹینک میزائل خریدنے میں دلچسپی کا اظہار گزشتہ روز ملائیشیا کے وزیراعظم نے جے ایف 17 تھنڈر جنگی طیاروں کی ... مزید

GB News

بابری مسجد کیس، بھارتی سپریم کورٹ نے تین رکنی ثالثی کمیٹی قائم کردی

Share Button

بھارتی سپریم کورٹ نے بابری مسجد کی زمین کی ملکیت کے تناع پر 3 رکنی ثالثی کمیٹی تشکیل دے دی جو 8 ہفتوں کے اندر اپنا فیصلہ سنائے گی۔بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق بھارتی سپریم کورٹ نے تاریخی بابری مسجد کی زمین کی ملکیت پر 3 فریقین کے درمیان تنازع کو حل کرنے کے لیے جسٹس ایف ایم کلیف اللہ کی سربراہی میں 3 رکنی ثالثی کمیٹی تشکیل دے دی ہے، سری سری روی شنکر اور ایڈوکیٹ سری رام پنچو کمیٹی کے رکن ہوں گے۔سپریم کورٹ نے کمیٹی کو 8 ہفتوں کے اندر فیصلہ سنانے کا حکم دیا ہے، ان کیمرہ سماعت کا آغاز فیض آباد میں اسی ہفتے سے کیا جائے گا۔ نقص امن کو مدنظر رکھتے ہوئے سماعت کی کارروائی کو خفیہ رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جب کہ اس سے متعلق دیگر تفصیلات بھی عام نہیں کی جائیں گی۔بابری مسجد کی زمین کی ملکیت کے لیے 3 نمایاں فریقین میں سے ایک ہندو فریق نرموہی اکھاڑا نیعدالت کے فیصلے کی مخالفت کی جب کہ مسلم فریق سنی وقف بورڈ اور ہندو فریق رام للا نے عدالتی فیصلے کی تائید کی ہے۔ سپریم کورٹ نے بدھ کے روز فیصلہ محفوظ کیا تھا۔واضح رہے کہ الہ آباد کی ہائی کورٹ میں بابری مسجد کی 2.77 ایکڑ زمین کی ملکیت کے لیے سنی وقف بورڈ، نرموہی اکھاڑا اور رام للا نے 14 اپیلیں دائر کی تھیں جس میں بابری مسجد کی زمین کو فریقین میں 3 برابر حصوں میں تقسیم کرنے کا مطالبہ کیا گیا تھا۔

Facebook Comments
Share Button