تازہ ترین

Marquee xml rss feed

ڈاکٹر صدیقی امریکی ریاست ٹیکسس میں واقع کارزویل جیل میں قید ہیں جہاں بہترین سہولیات میسر ہیں کارزویل جیل میں صرف خواتین قیدی زیرحراست ہیں، ڈاکٹر صدیقی عموما شلوار شلوار ... مزید-آصف زرداری نے پارٹی کارکنوں کو انتخابات کی تیاری کی ہدایت کردی پیپلز پارٹی کے تمام اراکین اسمبلی کو اپنے حلقوں میں کھلی عوامی کچہریاں بھی لگانے کی ہدایت-سابق صدر آصف علی زرداری کا قریبی ساتھی اور بھٹو ہاؤس کا انچارج عدالت میں رو پڑا غریب آدمی ہوں، وکیل کرنے کے بھی پیسے نہیں ہیں، نہیں جانتا کہ اکاؤنٹ میں اتنے پیسے کہاں سے ... مزید-اسد عمر کی وفاقی کابینہ میں دوبارہ شمولیت کا امکان سابق وزیر خزانہ وزیراعظم سے مشاورت کیلئے اسلام آباد پہنچ گئے، وزارت قبول کرنے کیلئے دوست احباب سے مشورے جاری-اگر این ایف سی ایوارڈ کے ساتھ پی ایف سی ایوارڈ کو حتمی شکل نہ دی گئی تو لوگوں کو اٹھارویں ترمیم سمیت این ایف سی ایوارڈ کا کوئی فائدہ نہیں ہوگا، مصطفی کمال-ایف بی آر نے واپڈا ٹائون میں واقع ڈیپارٹمنٹل سٹور کے اکاونٹس منجمد کر دئیے-عمران خان اپنے تمام فیصلے خود کرتے ہیں جہاں ضرورت محسوس ہو تبدیلی کر دیتے ہیں‘ صمصام بخاری وزیر اعظم نے عثمان بزدار کو میرٹ پر پنجاب کا وزیر اعلی مقرر کیا ہے انہیں ہٹانے ... مزید-کابینہ اجلاس میں اشیائے ضروریہ کی قیمتوں پر کڑی نظر رکھنے کا فیصلہ کیا گیا،ڈاکٹر فر دوس عاشق عوان آئندہ بجٹ کو عوام دوست بنانے کیلئے اقدامات کررہے ہیں، اشیائے ضروریہ ... مزید-وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت اجلاس میں وفاقی کابینہ نے 22 نکاتی ایجنڈے کی منظوری دیدی وزیراعظم عمران خان نے کابینہ اراکین کو باور کرایا ہے کہ وہ عوامی خدمت کے اقدامات ... مزید-لاہور ، وزیراعظم عمران خان کی آٹھ رکنی اقتصادی مشاورتی کونسل کے رکن ڈاکٹر عابد قیوم سلہری کا لاہور پریس کلب کا دورہ

GB News

ڈیڑھ سال معیشت پر بھاری گزریں گے، حکومت

Share Button

وزیر مملکت ریونیو حماد اظہر نے خبردار کیا ہے کہ ملک میں اگلے ڈیڑھ سال معیشت پر مزید بھاری گزریں گے، وزیراعظم عمران خان، وزیر خزانہ اسد عمر اور میں اس مسئلے پر یکساں موقف رکھتے ہیں کیونکہ ماضی میں جس بری طرح سے معیشت کو نقصان پہنچایا گیا اسے ٹھیک کرنے کے لیے مزید وقت درکار ہے ، سیاسی مخالفین کہتے ہیں کہ ہم ماضی کی باتیں نہ کریں بلکہ مستقبل کی پالیسی کا تذکرہ کریں لیکن ماضی کی معاشی پالیسیوں کے اثرات سے متاثر ہو رہے ہیں تو مستقبل کے بارے میں کیا بات کریں، حمزہ شہباز اپنے کیس سے توجہ ہٹانے کیلئے غلط بیانی کررہے ہیں لیکن یہ طے شدہ ہے کہ کسی کو بھی این آر او نہیں ملے گا۔ جمعرات کویہاںاسلام آباد میں پریس کانفرنس کے دوران وزیرریونیو نے کہا کہ جو پالیسی ہم مرتب کررہے ہیں اس کا تعلق براہ راست خراب معاشی پالیسی کے اثرات کو درست کرنا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ کراچی کے ساحل سے 250 کلومیڑ دور ڈرلنگ جاری ہے اور اگر گیس کے ذخائر دریافت ہو گئے تو ماہرین کی رائے ہے کہ وہ معدنی ذخائر دنیا کی 10 بڑی معدنیات میں شامل ہوجائیں گے۔وزیر ریونیو نے کہا کہ فیصل واڈا نے معدنی ذخائر سے متعلق بیان میں صرف امید ظاہر کی تھی۔وزیر ریونیو حماد اظہر نے کہا کہ ریکارڈ کے لیے بتادوں کہ ہمیں روپے کی قدر میں کمی کیوں کرنی پڑی، جب ہمارے زرمبادلہ اگست میں اس قدر کم ہو گئے کہ ہم اپنے مختصرالمعیاد ادائیگی کرنے کے بھی قابل نہیں رہے اس لیے ایسی صورتحال میں روپے کی قدر کو مستحکم کرنے کے لیے مارکیٹ میں اربوں ڈالر ڈالنے کی سکت نہیں تھی۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ اب روپے کی قدر اصل قدر کے قریب ہے۔حماد اظہر نے واضح کیا کہ حمزہ شہباز اپنے کیس سے توجہ ہٹانے کیلئے غلط بیانی کررہے ہیں لیکن یہ طے شدہ ہے کہ کسی کو بھی این آر او نہیں ملے گا۔ منی لانڈرنگ کرنے والے کبھی ملک واپس نہیں آتے، مسلم لیگ (ن) نے معیشت کا بیڑہ غرق کر دیا ہے اور آج بڑے بڑے دعوے کرنے کیلئے میڈیا کے سامنے آ جاتے ہیں، عالمی رپورٹ نے بھی واضح کیا ہے کہ پاکستان کے موجودہ حالات گزشتہ (ن)لیگ حکومت کی دین ہیں، مزید ملکی خساروں سے بچنے کیلئے یہ آہستہ آغاز ضروری تھا۔ اس سال مہنگائی میں اضافہ ہوا، اسے ہم تسلیم کرتے ہیں، روپے کی قدر کم کرنے سے مہنگائی میں اضافہ ہوا، حمزہ صاحب (ن) لیگ کے دور میں دودھ شہد کی نہریں نہیں بہہ رہی تھیں،آپ کو پیپلز پارٹی سے اتنا خسارہ نہیں ملا تھا جتنا آپ نے ہمیں دیا، پھر ہماری مہنگائی کی شرح آپ کے دور سے کم ہے، ہم مزید اس میں کمی لائیں گے، حمزہ شہباز نے رورپے کی قیمت کم کرنے میں بھی غلط تناسب دیا، ہم نے روپیہ صرف 8.2فیصد ڈی فیلو کیا جبکہ مسلم لیگ نے 10.1فیصد کیا تھا۔اومنی گروپ، زرداری اور حمزہ شہباز کے کیس میں کوئی زیادہ فرق نہیں،ان کے درمیان چارٹر آف ڈیموکریسی نہیں، چارٹر آف کرپشن تھا، حمزہ شہباز جتنا مرضی مولانا فضل الرحمان اور زرداری سے بغل گیر ہو جائیں، این آر او نہیں ملے گا،قوم کے سامنے آپ کی حقیقی شکل آ گئی ہے، قوم کو غلط اعداد و شمار نہ دیں اپنے کیسوں کا مقابلہ کریں۔ہمیں اگلا ڈیڑھ سال مزید مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا،یہ سب گزشتہ حکومت کی دین ہیں، یہ سب مہنگائی سابقہ حکومت کی بگاڑ کی وجہ سے ہوئی۔ہم ایف بی آر میں اصلاحات لا رہے ہیں، اس کیلئے بعد میں قوم کو آگاہ کریں گے، معیشت کو آئی سی یو سے نکال لیا ہے، اب اس کا جنرل وارڈ میں ٹریٹمنٹ ہو رہا ہے،انڈسٹری کا 10سال تک گلا گھوٹا گیا، اس میں بہتری آہستہ آہستہ آئے گی،اس سال ترقی میں مزید اضافہ ہو گا، وزیر صحت نے کہا کہ دوائیوں کی قیمتوں میں اضافہ(ن) لیگ دور میں ہوا، ہم پورے پاکستان میں ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کرنے والوں کے خلاف کاروائی کررہے ہیں، صحت کارڈ کا وعدہ حکومت نے کیا ہے اور وفاقی حکومت یہ وعدہ پورا کریگی،ہم ساڑھے پانچ کروڑ لوگوں کو ہیلتھ انشورنس دینے جا رہے ہیں جسے ہم سات کروڑ تک بڑھائیں گے۔ صحافی نے عامر کیانی سے سوال کیا کہ وزیر اعظم نے کہا کہ بہتر گھنٹے میں ادویات کی قیمتیں کم کی جائیں میکانزم کیا ہوگاتواس دوران وزیر صحت نے جواب دیا کہ حکومت کے پاس اتھارٹی ہے ہم قیمتیں کم کریں گے، عامر کیانی نے کہاکہ ہم نہ صرف ادویات کو پرانی قیمتیں بحال کریں گے بلکہ اس بھی قیمتیں کم کریں گے۔

Facebook Comments
Share Button