تازہ ترین

Marquee xml rss feed

اے پی سی میں پیپلز پارٹی کی حکومت کے خلاف سخت موقف اپنانے کی مخالفت پارلیمان کو کمزور کیا گیا تو ملک میں تیسری قوت آجائے گی، پاکستان پیپلز پارٹی کا موقف-گلگت بلتستان میں ٹوپی شانٹی ڈے روایتی جوش و خروش سے منایا گیا-تفصیلی خبر اپوزیشن کی کل جماعتی کانفرنس ناکام ہو گئی، اے پی سی اعلامیہ اپوزیشن کی نالائقی اور تحریری بدتمیزی کا منہ بولتا ثبوت ہے، اے پی سی اعلامیہ کھسیانی بلی کھمبا نوچے ... مزید-وزیرآبپاشی سندھ سید ناصر حسین شاہ کی ہدایت پر رینجرز کی مدد سے سندھ بھر میں آپریشن شروع-اپوزیشن کی کل جماعتی کانفرنس ناکام ہو گئی، اے پی سی اعلامیہ اپوزیشن کی نالائقی اور تحریری بدتمیزی کا منہ بولتا ثبوت ہے، اے پی سی اعلامیہ کھسیانی بلی کھمبا نوچے کے مترادف ... مزید-وزیراعظم کے مشیر برائے تجارت عبدالرزاق دائود سے تمباکو کمپنی فلپ مورس انٹرنیشنل کے ایم ڈی کی ملاقات-خصوصی افراد کو بااختیار بنانا ہماری اولین ترجیح ہے۔ سید قاسم نوید قمر-ابھی کئی اے پی سیز آئیں گی، پاکستان تحریکِ انصاف کے رہنما کا دعویٰ ایسی اے پی سیز آتی رہیں گی اور ایسے ہی ناکام ہوتی رہیں گی، فیصل واوڈا-وزیراعظم عمران خان کو ایوان نے پہلے الیکٹ اور پھر سلیکٹ کیا، فردوس عاشق اعوان سلیکٹ اور الیکٹ کے بعد ریجکٹ کی بھی بات ہونی چاہیے، مشیراطلاعات-اے پی سی کا پہلا شو ہی ناکام ہو گیا‘عوام کو اے پی سی سے زیادہ کرکٹ میچ سے دلچسپی رہی‘ اپوزیشن کا استعفوں و بائیکاٹ کا ایجنڈا ناکام ہو گا‘ اے پی سی جیسے ہتھکنڈے عمران ... مزید

GB News

پی آئی اے کرایوں میں کمی کے ساتھ ساتھ پروازیں بھی ریگولر کی جائیں، حاجی فدا محمد ناشاد ،حاجی اکبر تابان ،عمران ندیم

Share Button

سکردو ( محمد اسحاق جلال ) سپیکر قانون ساز اسمبلی حاجی فدا محمد ناشاد ، سینئر وزیر حاجی اکبر تابان ، رکن اسمبلی عمران ندیم نے پی آئی اے کے کرایوں میں غیر معمولی اضافے پر شدید احتجاج کرتے ہوئے انہیں فوری واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے اور کہاہے کہ پی آئی اے کے کرایوں میں غیر معمولی اضافے اور پروازوں کی بار بار منسوخی کی وجہ سے گلگت بلتستان کی سیاحت تباہ ہو رہی ہے کرایوں میں کمی کے ساتھ ساتھ پروازیں بھی ریگولر کی جائیں ضلعی انتظامیہ اور محکمہ سیاحت کے اشتراک سے سکردومیں منعقدہ ٹورزم کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سپیکر قانون ساز اسمبلی حاجی فدا ناشاد نے کہاہے کہ گلگت بلتستان کو اللہ تعالیٰ نے بے شمار نعمتوں سے نوازا ہے لیکن اللہ کے بندوں نے اس کی تعمیر وترقی پر کوئی توجہ نہیں دی اس علاقے کی سیاحت پر بہت پہلے توجہ دی جانی چاہئے تھی مگر جان بوجھ کر اس اہم شعبے کو نظر انداز کیا گیا دو سال پہلے سر فہ رنگاہ کولڈ ڈیزرٹ ریلی کا انعقاد کیا گیا جو یقینا سیاحت کے فروغ کیلئے سنگ میل ثابت ہوئی انہوں نے کہاکہ پی آئی اے کے کرایوں میں بے تحاشہ اضافہ کیا گیا ہے جس کی وجہ سے ملکی وغیر ملکی سیاحوں کو گلگت بلتستان آنے میں بے شمار مسائل در پیش ہیں میں نے پی آئی اے کے چیئر مین کو کرایوں میں اضافے کے فیصلے کو واپس لینے کیلئے مراسلہ لکھا تھا اور اس کی کاپی گورنر اور وزیر اعلیٰ کو بھی دی گئی تھی تاہم کرایے تاحال کم نہیں کئے گئے ہیں سکردو اور دیگر شہروں کے کرایوں میں موازنہ کیا جائے تو کرایے بہت زیادہ ہیں کرایوں میں اضافے کے ساتھ ساتھ پروازیں بھی بار بار بلا وجہ منسوخ کی جاتی ہیں پروازوں کی منسوخی اور کرایوں میں اضافہ سیاحت کی ترقی میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے انہوں نے کہاکہ گلگت بلتستان میں سیاحت کی ترقی کیلئے ضروری ہے کہ کر گل لداخ روڈ کو فوری طورپر کھولا جائے روڈ کے کھلنے سے نہ صرف سیاحت کو فروغ ملے گا بلکہ یہاں کی تجارت بھی مستحکم ہوگی اور لوگ معاشی طورپر خوش حال ہونگے ہم بڑے محب وطن لو گ ہیں اس کے باوجود کر گل لداخ روڈ نہ کھلنا بڑی زیادتی ہے انہوں نے کہاکہ سکردوروڈ پر 8کلومیٹر کے بڑے ٹنل سمیت 8ٹنلز بنانے کی یقین دہانی کرائی تھی اگر یہ ٹنلز بنائے جائیں تو 36کلومیٹر کی مسافت کم ہو گی مگر یہ افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ ٹنلز بننے کے کوئی آثار نظر نہیں آرہے ہیں بہت سارے سیاحت ٹنلز دیکھنے کیلئے آتے ہیں اگر سکردوروڈ پر ٹنلز نہ بنائے گئے تو یہ سیاح دوسرے علاقوں کا رخ کریں گے اس لئے ہم ٹورزم کانفرنس کی وساطت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ٹنلز کی تعمیر کا وعدہ پورا کیا جائے ٹنلز کی عدم تعمیر سے بلتستان کے عوام میں بڑی تشویش پیدا ہو گئی ہے ضروری ہے کہ ان کی تشویش دور کی جائے انہوں نے کہاکہ سکردوایئر پورٹ کو انٹر نیشنل ائیر پورٹ بنایا جائے سکردو ائیر پورٹ کا رن وے پاکستان کا سب سے بڑا رن وے ہے یہاں ہر قسم کا جہاز لینڈ کر سکتا ہے اس کے باوجود اس ائیر پورٹ پر توجہ نہ دینا نا انصافی ہے کراچی ، لاہور سے بھی سکردو کیلئے خصوصی پروازیں چلائی جائیںتاکہ سیاحت کو حقیقی معنوں میں فروغ دیا جاسکے سیاحت کی ترقی کیلئے ڈیڑھ ارب روپے کا بجٹ مختص کیا گیا ہے لیکن اس میں سے بلتستان کیلئے قلیل حصہ رکھا گیا ہے بلتستان کے بہت سارے مقامات ایسے ہیں جہاں رسائی بالکل ممکن نہیں ہے ایسے سیاحتی مقامات تک سیاحوں کی رسائی کو ممکن بنانے کیلئے حکومتی سطح پر کوششیں تیز ہونی چاہئیں اور مخفی سیاحتی مقامات کو قومی وبین الاقوامی سطح پر متعارف کرایا جانا چاہئے انہوں نے کہاکہ پولو یہاں کا قدیمی اور قومی کھیل ہے اس کے فروغ کیلئے بھی ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کرنا ہونگے دیوسائی میں پولو کا گراؤنڈ بنا کر شندور طرز کا پولو ٹورنامنٹ منعقد کیا جانا چاہئے انہوں نے کہاکہ شغر تھنگ تااستورروڈ اورآزاد کشمیر روڈ پر کام شروع ہونے کے آثار نظر نہیں آتے ہیں حالانکہ اس روڈ پر بہت پہلے کام شروع کیا جانا چاہئے تھا کیونکہ یہ سیاحتی ترقی کیلئے بہت اہمیت کی حامل شاہراہ ہے سینئر وزیر حاجی اکبر تابان نے کہاکہ پی آئی اے کے کرایوں میں سیاحت سیزن شروع ہوتے ہی ہوشربا اضافہ کیا جاتا ہے جو یہاں کی سیاحت کے خلاف بڑی سازش ہے ہم چاہتے ہیں کہ پی آئی اے کے کرایوں میں غیر معمولی اضافے کے فیصلے کو واپس کیا جائے اور سیاحت کی ترقی میں حائل رکاوٹیں دور کی جائیں یہاں سیاحت کے بڑے مواقع موجود ہیں ضرورت اس بات کی ہے کہ ہم سب ملکر اس علاقے کی سیاحت کے فروغ کیلئے کردارادا کریں رکن اسمبلی عمران ندیم نے کہاہے کہ گلگت بلتستان کی سیاحت کی ترقی کا دار ومدار پی آئی اے کی پروازوں پر ہے مگر پروازیں منسوخ ہونے کی وجہ سے سیاحت تباہ ہورہی ہے پی آئی اے کی پروازوں کو مستقل کرنے کے ساتھ ساتھ دوسری فضائی کمپنیوں کو بھی یہاں سروس چلانے کی اجازت دی جانی چاہئے تاکہ سیاحت کو فروغ دیا جاسکے ایک طرف ہم کہتے ہیں کہ بلتستان پر امن علاقہ ہے دوسری جانب یہاں آنے والے سیاحوں کو سکیورٹی نام پر چیک پوسٹو ں پر روکا جاتا ہے اور سیاحوں کے ساتھ سکیورٹی اہلکار رکھے جاتے ہیں جسکی وجہ سے سیاح خو فزہ ہو جاتے ہیں جو ٹورزم فورس تشکیل دی جائے گی وہ بالکل سادہ لباس میں ہونی چاہئے تاکہ سیاحوں کو کسی قسم کا خوف نہ ہوں انہوں نے کہاکہ گلگت بلتستان کو ہمیشہ نظر انداز کیا گیا سیاحت کی ترقی کیلئے کوئی منصوبہ بندی نہیں کی گئی سیاحت پر توجہ دی گئی تو بڑے فائدے ہونگے صرف ٹورزم کا کانفرنس منعقد کرنے یا ویزہ فری کرنے سے مسئلہ حل نہیں ہوگا ایشوز کو حل کرنے کیلئے جامع منصوبہ بنایا جانا چاہئے ۔

Facebook Comments
Share Button