تازہ ترین

Marquee xml rss feed

ڈاکٹر صدیقی امریکی ریاست ٹیکسس میں واقع کارزویل جیل میں قید ہیں جہاں بہترین سہولیات میسر ہیں کارزویل جیل میں صرف خواتین قیدی زیرحراست ہیں، ڈاکٹر صدیقی عموما شلوار شلوار ... مزید-آصف زرداری نے پارٹی کارکنوں کو انتخابات کی تیاری کی ہدایت کردی پیپلز پارٹی کے تمام اراکین اسمبلی کو اپنے حلقوں میں کھلی عوامی کچہریاں بھی لگانے کی ہدایت-سابق صدر آصف علی زرداری کا قریبی ساتھی اور بھٹو ہاؤس کا انچارج عدالت میں رو پڑا غریب آدمی ہوں، وکیل کرنے کے بھی پیسے نہیں ہیں، نہیں جانتا کہ اکاؤنٹ میں اتنے پیسے کہاں سے ... مزید-اسد عمر کی وفاقی کابینہ میں دوبارہ شمولیت کا امکان سابق وزیر خزانہ وزیراعظم سے مشاورت کیلئے اسلام آباد پہنچ گئے، وزارت قبول کرنے کیلئے دوست احباب سے مشورے جاری-اگر این ایف سی ایوارڈ کے ساتھ پی ایف سی ایوارڈ کو حتمی شکل نہ دی گئی تو لوگوں کو اٹھارویں ترمیم سمیت این ایف سی ایوارڈ کا کوئی فائدہ نہیں ہوگا، مصطفی کمال-ایف بی آر نے واپڈا ٹائون میں واقع ڈیپارٹمنٹل سٹور کے اکاونٹس منجمد کر دئیے-عمران خان اپنے تمام فیصلے خود کرتے ہیں جہاں ضرورت محسوس ہو تبدیلی کر دیتے ہیں‘ صمصام بخاری وزیر اعظم نے عثمان بزدار کو میرٹ پر پنجاب کا وزیر اعلی مقرر کیا ہے انہیں ہٹانے ... مزید-کابینہ اجلاس میں اشیائے ضروریہ کی قیمتوں پر کڑی نظر رکھنے کا فیصلہ کیا گیا،ڈاکٹر فر دوس عاشق عوان آئندہ بجٹ کو عوام دوست بنانے کیلئے اقدامات کررہے ہیں، اشیائے ضروریہ ... مزید-وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت اجلاس میں وفاقی کابینہ نے 22 نکاتی ایجنڈے کی منظوری دیدی وزیراعظم عمران خان نے کابینہ اراکین کو باور کرایا ہے کہ وہ عوامی خدمت کے اقدامات ... مزید-لاہور ، وزیراعظم عمران خان کی آٹھ رکنی اقتصادی مشاورتی کونسل کے رکن ڈاکٹر عابد قیوم سلہری کا لاہور پریس کلب کا دورہ

GB News

سپریم کورٹ کے فیصلے پر عملدرآمد نہ ہونے کے خلاف سپریم کورٹ کے باہر دھرنا دینگے، کیپٹن (ر) محمد شفیع /جاوید حسین

Share Button

اسلام آباد (جنرل رپورٹر) اپوزیشن لیڈر کیپٹن (ر) محمد شفیع اور رکن اسمبلی جاوید حسین نے کہا ہے کہ متحدہ اپوزیشن نے فیصلہ کیا ہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان کے فیصلے پر عملدرآمد نہ ہونے کے خلاف سپریم کورٹ کے باہر دھرنا دینگے، عدالت عظمیٰ کے ججز کو دکھائیں گے کہ 7 رکنی لارجر بنچ کے فیصلے پر تین ماہ گزرنے کے باوجود بھی عملدرآمد نہیں ہوا ہے، پاکستان کی سب سے بڑی عدالت کے فیصلے پر عمل نہ ہونا بہت بڑا سوالیہ نشان ہے، جب تک عدالتی فیصلے پر عملدرآمد نہیں ہوتا تب تکاحتجاج جاری رہے گا، اسلام آباد کے ساتھ گلگت بلتستان کے عوام کو بھی سڑکوں پر لائیں گے۔ کے پی این سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ سپریم کورٹ کے فیصلے پر عملدرآمد کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ وزیر امور کشمیر، وزیراعلیٰ جی بی اور گورنر راجہ جلال ہیں۔ ان تینوں نے آپس میں مک مکا کرلیا ہے۔ سپریم اپلیٹ کورٹ میں من پسند ججز کی تقرری، من پسند چیف الیکشن کمشنر اور چند دوسری اہم تقرریوں کیلئے تینوں شخصیات سپریم کورٹ کے فیصلے پر عمل کرنے نہیں دے رہیں۔ پرانی تاریخوں بیک ڈیٹ پر سمریاں اس کی واضح مثال ہیں۔ اس طرح کی جعل سازیاں توہین عدالت کے مترادف ہیں۔ ہم ان کے خلاف سپریم کورٹ میں توہین عدالت کی درخواست بھی دائر کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہم ثابت کرسکتے ہیں کہ سمریوں میں واضح جعل سازی کی گئی ہے۔ اس طرح جعل سازی سے گورنر اور وزیراعلیٰ صادق اور امین نہیں رہے، دونوں آئینی قانونی اور اخلاقی طور پر نااہل ہیں۔ انہوں نے کہاکہ دھرنے کے حوالے سے تمام اپوزیشن ممبران سے مشاورت کر رہے ہیں۔ یہاں راولپنڈی اسلام آباد میں موجود نوجوانوں کو بھی دعوت دیں گے۔ ایک سوال کے جواب میں دونوں ممبران کا کہنا تھا کہ مبصر والی نمائندگی کی ہمیں ضرورت ہی نہیں نہ ہم قبول کریں گے۔ عدالتی فیصلے کے مطابق صرف 2 ہی آپشن ہیں عبوری صوبہ یا متنازعہ حیثیت۔ ان دونوں کے علاوہ اب ہمیں زکوة اور خیرات کی کوئی ضرورت نہیں۔ پرانی تاریخوں پر سمریوں کے ذریعے اپیلٹ کورٹ میں ججز کی تقرری ہی کرنی ہے تو ہمیں ایسی کورٹ کی کوئی ضرورت نہیں۔ اپیلٹ کورٹ میں من پسند اور رشوت کی بنیاد پر ججز تقرر ہونے سے گلگت بلتستان میں انصاف کا قتل ہوا ہے۔ سپریم کورٹ کے فیصلے کے مطابق جوڈیشل کمیشن کے ذریعے ہی ججز کی تقرری ہونی چاہیے، نہ ہونے کی صورت میں اپیلٹ کورٹ ختم کرنے کی تحریک چلائیں گے۔ انہوں نے کہاکہ وزیراعلیٰ جعلی اعلانات کے ذریعے الیکشن پر اثرانداز ہونے کی کوشش کر رہے ہیں۔ اضلاع بنانے کا اختیار اسمبلی کے پاس نہیں تو وزیراعلیٰ کے پاس کہاں سے آیا۔ ایک سوال کے جواب میں ممبران کا کہنا تھا کہ ہنزہ کے رکن اسمبلی کو وزیراعلیٰ اور سابق چیف جج اپیلٹ کورٹ رانا شمیم نے سازش کرکے ہٹایا۔

Facebook Comments
Share Button