تازہ ترین

Marquee xml rss feed

افغان حکومت کے اعتراضات اب مسترد، وزیراعظم نے افغان طالبان سے ملاقات کا عندیہ دے دیا ٹرمپ سے ملاقات کے بعد صورتحال واضح ہو چکی اس لیے اب افغان طالبان سے ملاقات ہوگی، افغانستان ... مزید-این اے 205 گھوٹکی ضمنی الیکشن، پیپلز پارٹی نے اپ سیٹ کرکے فتح حاصل کر لی حلقے کے تمام 290 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری غیر حتمی نتائج میں پی پی امیدوار سردار محمد بخش مہر نے ... مزید-موسم پھر سے بدلنے لگا، محکمہ موسمیات کی تازہ ترین پیشن گوئی لاہور سمیت ملک کے بیشتر علاقوں میں منگل کی شب سے مون سون بارشوں کا نیا سلسلہ شروع ہوگا جو اگلے کئی روز تک جاری ... مزید-ٹرمپ، عمران خان ملاقات میں تاریخ رقم کر دی گئی پاکستان امریکا تعلقات کے 72 برسوں کے دوران کبھی کس امریکی صدر نے پاکستانی وزیراعظم یا صدر کیساتھ اتنی طویل پریس کانفرنس ... مزید-سچ یہ ہے کہ امریکی صدر سے ملاقات سے قبل کچھ خدشات کا شکار تھا تاہم ڈونلڈ ٹرمپ کیساتھ گزشتہ روز ہوئی ملاقات خوشگوار تجربہ تھی، زندگی میں کبھی کسی نے اتنے مشورے نہیں دیے ... مزید-دورہ امریکہ: عمران خان کی شخصیت کا جادو سر چڑھ کر بولا: صمصام بخاری مسئلہ کشمیر پر شاندار موقف نے بھارت کو لا جواب کر دیا،عمران خان نے ثابت کیا وہ پاکستان کے حقیقی رہنما ... مزید-ایل ڈی اے میں اشد ضرورت کے مطابق انجینئرنگ اورٹیکنیکل سٹاف کی بھرتی کی منظوری شاہکام چوک پر فلائی اوور کی تعمیراورڈیفنس روڈ تا لیبر کالونی توسیعی منصوبہ جلد شروع کرنے ... مزید-پسماندہ علاقوں خصوصاً جنوبی پنجاب کیلئے فلاح عامہ کے منصوبوں کی خود نگرانی کررہا ہوں :عثما ن بزدار تحریک انصاف کی حکومت نے وسائل کا رخ پسماندہ علاقوں کو ترقی یافتہ بنانے ... مزید-وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کا تحریک پاکستان کے کارکن و سابق ہاکی او لمپین خواجہ اسلم کے انتقال پر اظہار تعزیت-وفاقی دارالحکومت میں آئوٹ آف سکولز چلڈرن مہم کے تین ماہ کے دوران 7ہزار بچوں کا سکولوں میں داخلہ کرایا گیا‘ شفقت محمود بچوں میں غذائیت کی کمی کو پوراکرنے کے لئے فوڈ ... مزید

GB News

اسد عمر مستعفی، خزانہ حفیظ شیخ،اطلاعاق فردوس عاشق کے پسرد

Share Button

وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے مستعفی ہونے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزیر اعظم نے مجھے وزارت توانائی کی پیشکش کی لیکن میں نے کابینہ کاحصہ رہنے سے معذرت کرلی۔ ملکی معیشت بہتری کی جانب گامزن ہے جبکہ آئندہ بجٹ آئی ایم ایف پروگرام کی عکاسی کرے گا۔ اگلے تین ماہ بہت مشکل ہونگے ، ہمیں معیشت ہی خراب ملی تھی، تحریک انصاف کو خیر باد نہیں کہہ رہا ، وزیر اعظم عمران خان کے وژن کو سپورٹ کرتا رہوں گا۔ جمعرات کے روز پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیرخزانہ اسد عمر نے کہا کہ وزیر اعظم کابینہ میں ردو بدل کرنا چاہتے ہیں اور مجھے وزارت توانائی کی پیشکش کی گئی لیکن میں نے معذرت کرلی ہے اورکابینہ کا مزید حصہ نہ رہنے کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نئے وزیر خزانہ کو بھی بہت مشکلات کا سامنا ہوگا ۔ اسد عمر نے کہا کہ وزیر اعظم کے بعد وزیر خزانہ مشکل ترین عہدہ ہے۔جب حکومت سنبھالی تو معیشت خطرناک حد پر تھی اس وقت بھی معیشت کے حالات اچھے نہیں ہیں لیکن بلاشبہ معیشت بہتری کی جانب گامزن ہے۔ انہوںنے کہا کہ آئی ایم ایف سے بہت بہتر شرائط پر معاہدہ ہوا ہے۔ آئندہ بجٹ کیلئے مشکل ترین فیصلے کرنا ہونگے۔ میں مشکل فیصلے کرنے سے کبھی نہیں گھبرایا، اگلے تین ماہ میں بھی دودھ اور شہد کی نہریں نہیں بہہ سکیں گی ۔ اسد عمر نے کہا کہ میں اپنے خلاف کسی سازش کے بارے میں نہیں جانتا ، نیاپاکستان ضرور بنے گا ۔ عمران خان عوام کی آخری امید ہیں ۔اسد عمر نے کہا کہ گر مشکل فیصلے نہیں کیے تو دوبارہ اسی کھائی میں گرنے کا خطرہ ہوگا، لوگ نئے وزیر خزانہ سے تین ماہ میں معجزوں اور دودھ شہد کی نہریں بہنے کی توقع نہ کریں۔ایک سوال کے جواب میں اسد عمر کاکہناتھاکہ وجہ بڑی سادہ ہے اور وہ یہ ہے کہ معیشت مشکل وقت سے گزررہی ہے ، اپوزیشن دبائو کا بہانہ بھی بنارہی ہے ،اب تازہ دم ٹیم اگرآکر کام کرے گی تو بہتری نظرآئے گی ، اگر نہ بھی آئے تو انہیں کچھ ٹائم تو دینا پڑے گا۔ ایک اور سوال کے جواب میں اسد عمر نے کہا کہ نئے وزیر خزانہ میں تین چار خصوصیات ہوں گی ، پہلی یہ کہ وزیراعظم یہ ذمہ داری سونپیں گے ، دوسرا نیک سیرت، تیسرا قابل اور چوتھا محنتی ہوگا۔ ان کامزید کہناتھاکہ معیشت کی بنیادی چیزیں جب تک ٹھیک نہیں کریں گے ، معیشت ٹھیک نہیں ہوگی، تین بنیادی نقصانات ہیں، چالیس سال سے وہی مسائل ہیں، جب تک انہیں ٹھیک نہیں کریں گے تو معیشت آگے نہیں چلے گی ۔ ایک اور سوال کے جواب میں اسد عمر نے کہا کہ میرے ساتھ وزارت سے متعلق پہلی مرتبہ گزشتہ رات کو بات ہوئی تھی ۔تحریک انصاف کے اندر ہی کسی سازش کے بارے میں سوال کا جواب دیتے ہوئے ان کاکہناتھاکہ ساز ش کا پتہ نہیں لیکن اپنے کپتان سے اجازت لے لی ہے ، اس کا ایمنسٹی سکیم سے کوئی تعلق نہیں ، کچھ ایسے کام کیے جن کے اچھے نتائج نکلے اور کچھ کے نہیں، وزیراعظم کا خیال ہے کہ تبدیلی سے بہتر نتائج نکل سکتے ہیں۔دریں اثناء عمران خان بہترین لیڈر ہیں اور لیڈر کو ہمیشہ مشکل فیصلے کرنے پڑتے ہیں ، ذاتی پسند نا پسند پر فیصلے نہیں ہوتے ،یہ آنے والا وقت بتائے گا کہ یہ فیصلہ درست ہے یا غلط ، آنے والے وزیرخزانہ کیلئے مشکل حالات ہیں یہ امید نہیں رکھنی چاہیے کہ وہ بجلی ، تیل ، گیس سستی کریں گے یا ڈالر130پر لے آئیں گے ،میں ابھی بھی پاکستان کیلئے کام کرنے کیلئے تیار ہوں ، وزارت جانے سے میں غصہ نہیں بلکہ پہلے سے زیادہ مطمئن ہوں۔مجھے لگتا ہے کہ شاید آئی ایم ایف کے پاس جانے میں تاخیر میرے استعفے کی وجہ بنی۔ اسد عمر نے کہا کہ جب عمران خان نے یہ بتایا کہ آپ وزیر خزانہ نہیں رہیں گے تو مجھے بالکل مایوسی نہیں ہوئی ۔ عمران خان سے ایک خاص رشتہ رہا ہے اور وہ آج بھی ہے ، وزارت چھوڑنے کی ابتدائی گفتگو وزیراعظم سے واٹس ایپ پر بات سے ہوئی ، کئی مرتبہ تحریک انصاف کا سیکرٹری جنرل بننے کی آفر ہوئی لیکن میں نے انکار کیا، میرے وزارت چھوڑنے سے معیشت بہتر ہوتی ہے یہ تو وقت بتائے گا۔وزیرخزانہ کے لحاظ سے ہم نے شہرت کی سیاست نہیں کی وہی فیصلے کئے جوعوام کے لئے بہتر تھے، ایمنسٹی سکیم ٹیکس دینے والوں کامورال ڈائون کرے گی۔وفاقی کابینہ میں بڑے پیمانے پر رد وبدل کردیا گیا ، وزیر صحت عامر کیانی کی چھٹی ہوگئی جبکہ اعظم سواتی دوبارہ کابینہ کا حصہ بن گئے ہیں، فواد چوہدری، غلام سرور خان، شہریار آفریدی کے قلمدان تبدیل کر دئیے گئے، حفیظ شیخ کو مشیر خزانہ، فردوس عاشق اعوان کومعاون خصوصی اطلاعات، ظفراللہ کو معاون خصوصی نیشنل ہیلتھ اور ندیم بابر کو معاون خصوصی پٹرولیم لگا دیا گیا۔ اعجاز شاہ وزیر داخلہ بن گئے۔ ترجمان وزیراعظم ہاؤس کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق وزیر خزانہ اسد عمر کے مستعفی ہونے کے بعد وفاقی کابینہ میں بڑے پیمانے پر رد و بدل کر دیا گیا ہے اور پانچ وزراء کے قلمدان تبدیل کردئیے گئے ہیں ۔حفیظ شیخ کو معاون خصوصی برائے خزانہ مقرر کر دیا گیا ہے اعجاز شاہ کو وفاقی وزیر داخلہ اور اعظم سواتی کو پارلیمانی امور کا قلمدان سونپا گیا ہے جبکہ چوہدری فواد حسین سے وزارت اطلاعات کا قلم دان واپس لے کر انہیں سائنس و ٹیکنالوجی ، وزیر پٹرولیم غلام سرور خان کا قلمدان تبدیل کر کے انہیں وفاقی وزیر برائے ہوا بازی مقرر کیا گیا ہے۔ جبکہ وفاقی وزیر صحت عامر محمود کیانی کو ان کے عہدے سے ہٹا دیا گیا ہے وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی کا قلمدان تبدیل کر کے انہیں وزیر مملکت برائے ریاستی و سرحدی امور (سیفران) فردوش عاشق اعوان کو معاون خصوصی برائے اطلاعات ندیم بابر کو معاون خصوصی برائے پٹرولیم ڈویژن، ظفراللہ مرزا کو معاون خصوصی برائے قومی صحت مقرر کر دیا گیا ہے محمد میاں سومرو سے ہوا بازی کا اضافی چارج واپس لے لیا گیا ہے اور وہ وفاقی وزیر نجکاری کے عہدے پر بد ستور کام کرتے رہیں گے۔کابینہ ڈویژن نے نوٹیفیکیشن بھی جاری کردیا ہے ۔

Facebook Comments
Share Button