GB News

گورنر نے سپریم اپیلیٹ کورٹ سکردو رجسٹری آفس اوراسلام آباد رابطہ آفس کے قیام پرسوالات اٹھادیئے

Share Button

گلگت(نامہ نگار خصوصی)گورنر گلگت بلتستان نے سپریم اپیلیٹ کورٹ سکردو رجسٹری آفس اوراسلام آباد رابطہ آفس کے قیام پرسوالات اٹھادیئے ہیں گورنر سیکرٹریٹ کی جانب سے سیکرٹری قانون کو ایک خط لکھا گیا ہے جس میں کہاگیا ہے کہ گورننس آرڈر 2009کی شق 64(2)جبکہ آرڈر 2018کی شق 79(2)کے تحت سپریم اپیلیٹ کورٹ کے کسی بھی رجسٹری آفس کے قیام کیلئے گورنر کی منظوری ضروری ہے خط میں مزید کہاگیا ہے کہ گورنر یہ جاننا چاہتے ہیں کہ ان دونوں آفسز کے قیام کیلئے منظوری لی گئی تھی یا نہیں اگر منظوری لی گئی تھی تو اس کی ایک کاپی گورنر سیکرٹریٹ کو بھیجی جائے یہ خط یکم مارچ کو ارسال کیاگیا جس کے بعد ڈپٹی سیکرٹری قانون کی جانب سے رجسٹرار سپریم اپیلیٹ کورٹ کو ایک خط لکھاگیا جس میں گورنر سیکرٹریٹ کی ہدایت کے مطابق منظوری کی کاپی طلب کی گئی ہے محکمہ قانون کے ذرائع کے مطابق ابھی تک اس کا جواب نہیں آیا ہے ۔واضح رہے کہ اسلام آباد میں سپریم اپیلیٹ کورٹ کا رابطہ آفس سابق چیف جج نواز عباسی کے دور میں قائم کیا گیا تھا بعد میں سابق چیف جج رانا محمد شمیم نے اس دفتر کو اپنے گھرشفٹ کیا سابق قائم مقام چیف جج جاوید اقبال کے دورمیں جی بی ہائوس اسلام آباد میں اپیلیٹ کورٹ کا رابطہ آفس قائم کیاگیا جہاں پر 3ملازمین تعینات ہیں۔

Facebook Comments
Share Button