GB News

محکمہ تعلیم میں 37سو اساتذہ کی کمی،ڈیپوٹیشن پر پابندی کی سفارش

Share Button

محکمہ تعلیم میں اساتذہ کو ڈیپوٹیشن پر دوسرے محکموں میں جانے پر پابندی عائد کر نے کے لئے خط لکھ دیا گیا ہے ۔محکمہ تعلیم کے سیکشن آفیسر کی طرف سے سیکریٹری سروسز کو لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ محکمہ تعلیم میں اساتذہ کی شدیدکمی کی وجہ سے سنگین مسائل پیدا ہو رہے ہیں اس وقت محکمہ تعلیم میں 3700 اساتذہ کی کمی ہے۔ جو کہ ایک بہت بڑی تعدادہے ۔ بہت سارے اساتذہ کی ڈیپو ٹیشن پر دوسرے محکموں میں جانے کے خواہشمند ہیں حالانکہ بہت سارے اساتذہ پہلے سے ہی ڈیپوٹیشن پر مختلف اداروں میں جا چکے ہیں جس کی وجہ سے محکمہ تعلیم شدید متاثر ہے ۔ لہذا ڈیپوٹیشن کے تمام دروازوں کو مکمل طور پر بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ اس سلسلے میں چیف سیکریٹری گلگت بلتستان سے بھی تفصیلی بات چیت ہو ئی ہے اور محکمہ سروسز سے کہاگیا ہے کہ ایک تفصیلی ڈرافٹ تیارکیا جائے جس میں محکمہ تعلیم میں ڈیپوٹیشن پر مکمل پابندی عائد کر تے ہوئے ڈیپوٹیشن کے تمام در وازے بند کرتے ہوئے فوری طور پر اساتذہ اور کالجز فیکلٹی پر ڈیپوٹیشن پر پابندی کونافذ العمل قرار دیاجائے کیونکہ محکمہ تعلیم میں ڈیپو ٹیشن پر پابندی کا اطلاق نا گزیر ہو چکا ہے تاکہ اساتذہ کی کمی کا مسئلہ حل ہو نے کے ساتھ ساتھ بچوں کی تعلیم بھی متاثر نہ ہو سکے ۔ واضح رہے کہ محکمہ تعلیم میں سینکڑوں اساتذہ اورکالجز فیکلٹی سٹاف ڈیپوٹیشن پر مختلف محکموں اور دوسرے شہروں میں ملازمت کر رہے ہیں دوسری جانب گلگت بلتستان کے مختلف اضلاع میں سینکڑوں مردو خواتین اساتذہ نے اٹیچمنٹ ڈیوٹیوں پر گلگت تبادلہ کر وا دیا ہے اور گلگت کے مختلف سکولوں میں خالی ہونے والی سیٹوں پر اپنی ایڈ جسمنٹ کر والی ہے ۔ جس کی وجہ سے مختلف اضلاع میں نہ صرف اساتذہ کی کمی کے شدید مسائل ہیں بلکہ بچوں کی پڑھائی بھی بری طرح متاثر ہو رہی ہے ۔

Facebook Comments
Share Button